بھٹکل میں سواریوں کی  من چاہی پارکنگ پرمحکمہ پولس نے لگایا روک؛ سواریوں کو کیا جائے گا لاک؛ قانون کی خلاف ورزی پر جرمانہ لازمی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 3rd September 2018, 9:59 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل:3/ستمبر(ایس اؤ نیوز) اترکنڑا ضلع میں بھٹکل جتنی تیز رفتاری کے ساتھ  ترقی کی طرف گامزن ہے اس کے ساتھ ساتھ کئی مسائل بھی جنم لے رہے ہیں، ان میں ایک طرف گنجان  ٹرافک  کا مسئلہ بڑھتا ہی جارہا ہے تو  دوسری طرف پارکنگ کی کہانی الگ ہے۔ اس دوران محکمہ پولس نے ٹرافک نظام میں بہتری لانے کے لئے  بیک وقت کئی محاذوں پر عملی اقدامات کرنے شروع کردئیے ہیں۔ اس سلسلےمیں خاص کر ضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جدھر چاہے ادھر پارکنگ کئے جانے پر سواریوں کو لاک کرکے جرمانہ عائد کیا جارہا ہے۔ پولس ذرائع نے بتایا کہ غلط پارکنگ کرنے پر  پہلی بار سواری کو لاک کرنے  پر سو روپیہ جرمانہ عائد کیا جائے گا، دوسری بار پکڑے جانے کی صورت میں تین سو روپیہ جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ بنگلور اور ممبئی جیسے بڑے بڑے شہروں میں غلط پارکنگ کرنے کی صورت میں ٹریفک پولس کی گاڑی فوری جائے وقوع پر پہنچ کر پارک کی ہوگئی سواریوں کو ہی اُٹھاکر لے جاتی ہے ۔ اسکوٹر یا  بائک ہوتو ان سواریوں کو  پولس کی گاڑی میں ٹھونس دیا جاتا ہے، جس سے ان سواریوں کو بھی   شدید نقصان پہنچنے کا خدشہ رہتا ہے، مگر بھٹکل میں بائک ہو یا کار، غلط پارکنگ کرنے کی صورت میں وہیں پر گاڑیوں کو لاک کردیا جاتا ہے۔ پورے ضلع شمالی کینرا میں  بھٹکل ایسا شہر ہے جہاں یہ  لاک سسٹم شروع  کیا گیا ہے۔

تعلقہ کے مین روڈ کے کناروں پر سواریوں کی پارکنگ کو لے کر 2015 میں اُس وقت کے ڈی وائی ایس پی ائیپا کی رہنمائی میں اصول وضوابط نافذ کئے  تھے، جس کے تحت ہفتہ کے تین دن روڈ کے ایک کنارے پارکنگ کرنی ہوتی ہے اور ہفتہ کے چار دن  روڈ کے دوسرے کنارے پارکنگ کرنا لازمی ہے۔ 

کیپٹن ائیپّا کے ٹرانسفر کے بعد  آج ضوابط جانے دیجئے اصول کی اطلاع دینے والے بورڈس کا رنگ بھی پھیکا ہوگیا۔جس  کے بعد  شہر کے مین روڈ پر من چاہی پارکنگ شروع ہوگئی ۔حالات اتنے سنگین ہوگئے کہ صبح اور شام کے اوقات میں مین روڈ، ماری کٹہ سے سواری لے کر گزرنا ہی محال ہوگیا۔ منڈلی ،الویکوڑی کی طرف جانے والی بسوں کے ڈرائیوروں کی پریشانی بیان کے باہر ہے۔

مگر اب بھٹکل ڈی وائی ایس پی ویلنٹائن ڈیسوزا نے حالات کودیکھتے ہوئے پورے محکمہ کے ساتھ میدان میں عملی اقدامات شروع کر دئیے ہیں۔ پہلے مرحلے میں شہر کے مین روڈ کے کناروں پر من چاہی پارک کی گئی سواریوں کو پولس لاک کرکے جرمانہ عائد کررہی ہے۔ پولس کے عملی اقدام کو دیکھتے ہوئے عوام بیدار ہوکر ضوابط کی پابندی کرنے لگے ہیں۔اسی طرح سواروں کےلئے ہیلمٹ لازمی قرار دینے کے بعد ہیلمٹ کی چیکنگ بھی شہر کے مختلف جگہوں پر کی جارہی ہے اور سختی کے ساتھ انہیں ہیلمٹ کی پابندی کرنےکا حکم دیتے ہوئے جرمانہ لگایا جارہاہے۔ اسی طرح  ون وے کے متعلق بھی کارروائی جاری ہے۔ ساحل آن لائن سے فون پر گفتگو کرتے ہوئے ڈی وائی ایس پی ویلنٹائن ڈیسوزا نے  بتایا کہ اس سلسلےمیں 4 ماہ پہلے ہی ہم نے مرچنٹ اسوسی ایشن کے عہدیداران کے ساتھ ایک نشست کا انعقاد کرتے ہوئے پارکنگ، ون وے وغیرہ کے متعلق گفتگو کی تھی اور وہاں کچھ فیصلے لئے گئے تھے جس کو اب نافذ کیاجارہاہے۔ 

ڈی وائی ایس پی نے بتایا کہ بھٹکل  نیشنل ہائی وے پر کم عمر لڑکے  بغیر لائسنس تیز رفتاری کے ساتھ بائک ڈرائیونگ کرنے کی شکایتیں ملی ہیں، اب آئندہ ہائی وے پر بھی چیکنگ تیز کی جائے گی اور اس دوران  کم عمر لڑکے ڈرائیونگ کرتے ہوئے پکڑے جاتے ہیں تو اُس  صورت میں اُن کے والدین کے خلاف معاملات درج کئے جائیں گے۔ انہوں نے والدین پر زور دیا کہ وہ بچوں کے ہاتھوں میں گاڑیاں نہ دیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندو لیڈر سورج نائک سونی نے اننت کمار ہیگڈے کو کہا،مودی حکومت کا داغدار وزیر؛ اُس کی مخالفت میں کام کرنے کے لئے نوجوانوں کی ٹیم تیار

ضلع شمالی کینرا میں ایک نوجوان ہندو لیڈر کے طور پر اپنی پہچان رکھنے والے کمٹہ کے سورج نائک سونی نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں چل رہی مرکزی حکومت میں اننت کمار ہیگڈے کی حیثیت ایک داغداروزیر کی ہے۔ اور ایسا لگتا ہے کہ انہیں ...

منگلورو میں تیز رفتار بس کی ٹکر سے ایک پولیس کانسٹیبل ہلاک

گورپور علاقے میں ایک تیز رفتار پرائیویٹ ایکسپریس بس کی ٹکر سے ایک پولیس کانسٹیبل ہلاک ہوگیا ہے جس کی شناخت دیوی نگر کے رہنے والے مہیش لمانی کے طور پر کی گئی ہے۔مہیش فی الحال شہر کے آئی جی دفتر میں فرائض انجام دے رہاتھا۔

گنگولی توحید انگلش میڈیم اسکول میں والدین و سرپرستوں کے ساتھ انتظامیہ کی نشست  کا انعقاد

اسکول کے تعلیمی اصول وضوابط، سالانہ امتحانات کی تیاری جیسے اہم تعلیمی سرگرمیوں سے والدین و سرپرستوں کو واقف کرانے کے لئے 16مارچ برو ز سنیچر  ٹھیک 30-10بجے اسکول کے وسیع ہال میں ایک اہم نشست کا انعقاد کیاگیا ۔

شمالی کینرا پارلیمانی سیٹ کو جے ڈی ایس کے حوالے کرنے پر کانگریسی لیڈران ناراض؛ کیا دیش پانڈے کا دائو اُلٹا پڑ گیا ؟

ایک طرف کانگریس اور جنتا دل ایس کی مخلوط حکومت نے ساجھے داری کے منصوبے پر عمل کرکے سیٹوں کے تقسیم کے فارمولے پر رضامند ہونے کا اعلان کیا ہے تو دوسری طرف کچھ اضلاع سے کانگریس پارٹی کے کارکنان اور مقامی لیڈران میں بے اطمینانی کی ہوا چل پڑی ہے۔ جس میں ضلع اڈپی کے علاوہ شمالی کینرا ...

پاکستان پر فضائی حملے سے بی جے پی کے لئے پارلیمانی الیکشن کا راستہ ہوگیا آسان !  

پاکستان کے بہت ہی اندرونی علاقے میں موجود دہشت گردی کے اڈے پر ہندوستانی فضائی حملے سے بی جے پی کو راحت کی سانس لینے کا موقع ملا ہے اور آئندہ پارلیمانی انتخابات جیتنے کی راہ آسان ہوگئی۔اور اب وہ سال2017میں یو پی کے اسمبلی انتخابات جیتنے کی طرز پر درپیش لوک سبھا انتخابات جیتنے کے ...

ہندوستان میں اردو زبان کی موجودہ صورتحال، عدم دلچسپی کے اسباب اوران کا حل ۔۔۔۔ آز: ڈاکٹر سید ابوذر کمال الدین

یہ آفتاب کی طرح روشن حقیقت ہے کہ اردو بھی ہندی، بنگلہ، تلگو، گجراتی، مراٹھی اور دیگر ہندوستانی زبانوں کی طرح آزاد ہندوستان کی قومی اور دستوری زبان ہے جو دستورِ ہند کی آٹھویں شیڈول میں موجود ہے۔ لہٰذا یہ کوئی نہیں کہہ سکتا کہ اردو ہندوستان کی زبان نہیں ہے۔ جو ایسا کہتا ہے اور ...

آننت کمار ہیگڈے۔ جو صرف ہندووادی ہونے کی اداکاری کرتا ہے ’کراولی منجاؤ‘کے چیف ایڈیٹر گنگا دھر ہیرے گُتّی کے قلم سے

اُترکنڑا کے رکن پارلیمان آننت کمار ہیگڈے جو عین انتخابات کے موقعوں پر متنازعہ بیانات دے کر اخبارات کی سُرخیاں بٹورتے ہوئے انتخابات جیتنے میں کامیاب ہوتا ہے، اُس کے تعلق سے کاروار سے شائع ہونے والے معروف کنڑا روزنامہ کراولی منجاو کے ایڈیٹر نے  اپنے اتوار کے ایڈیشن میں اپنے ...

کیا جے ڈی نائک کی جلد ہوگی کانگریس میں واپسی؟!۔دیشپانڈے کی طرف سے ہری جھنڈی۔ کانگریس کر رہی ہے انتخابی تیاری

ایسا لگتا ہے کہ حالیہ اسمبلی انتخابات سے چند مہینے پہلے کانگریس سے روٹھ کر بی جے پی کا دامن تھامنے اور بی جے پی کے امیدوار کے طور پر فہرست میں شامل ہونے والے سابق رکن اسمبلی جے ڈی نائک کی جلد ہی دوبارہ کانگریس میں واپسی تقریباً یقینی ہوگئی ہے۔ اہم ذرائع کے مطابق اس کے لئے ضلع ...

ضلع شمالی کینرا میں پیش آ سکتا ہے پینے کے پانی کابحران۔بھٹکل سمیت 11تعلقہ جات کے 423 دیہات نشانے پر

امسال گرمی کے موسم میں ضلع شمالی کینرا میں پینے کے پانی کا شدید بحران پیدا ہونے کے آثار نظر آر ہے ہیں۔ کیونکہ ضلع انتظامیہ نے 11تعلقہ جات میں 428دیہاتوں کی نشاندہی کرلی ہے، جہاں پر پینے کے پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔