نئی زندگی چاہتا ہے بھٹکل کا صدیوں پرانا 'جمبور مٹھ تالاب'

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 17th March 2024, 12:07 AM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 16/ مارچ (ایس او نیوز) بھٹکل کے اسار کیری، سونارکیری، بندر روڈ، ڈارنٹا سمیت کئی دیگر علاقوں کے لئے قدیم زمانے سے پینے اور استعمال کے لئے  صاف ستھرے پانی کا ایک اہم ذریعہ بنے  رہنے والے 'جمبور مٹھ تالاب' میں کچرے اور مٹی کے ڈھیر کی وجہ سے پانی کی مقدار بالکل کم ہوتی جا رہی ہے اور افسران کی بے توجہی کی وجہ سے پانی کا یہ تالاب ایک خواب بنتا جا رہا ہے ۔  

مقامی نوائطی زبان میں زمر مٹھّا کہلانے والے   اس علاقہ میں موجود  تالاب کے تعلق سے      بتایا جاتا ہے کہ  صدیوں پہلے جب بھٹکل میں جین حکمرانی کرتے تھے، اس وقت یہ تالاب تعمیر کیا گیا تھا  ۔ کوکتی علاقے کے تالاب کے بعد یہ سب سے بڑا تالاب تھا جہاں سال کے بارہ مہینے قدرتی طور پر پانی ذخیرہ رہتا تھا ۔ یہاں تک کہ شدت کی گرمی والے مئی کے مہینے میں بھی اس تالاب میں چھ تا سات فٹ گہرا  پانی موجود رہتا تھا ۔ جس سے آس پاس کے علاقے میں کھیتی باڑی بھی ہوتی تھی اور گھروں کے کنووں کے لئے بھی زیر زمین پانی کی جھریاں اسی تالاب سے نکلتی تھیں ۔ 

    ایک بڑے وسیع علاقے کے لئے صاف ستھرے پانی کی ضرورت پورا کرنے اور زیر زمین  کی  پانی سطح بڑھائے رکھنے کا یہ قدرتی ذریعہ تھا ،جس کی وجہ سے اطراف کے علاقوں میں کبھی پانی کی کمی محسوس نہیں ہوتی تھی ۔مگر    ادھر پچھلے کئی برسوں سے اس تالاب میں کوڑا کرکٹ، کچرا اور مٹی کا ڈھیر جمع ہوتا گیا اور پانی کی سطح کم سے کم تر ہوتی گئی ۔ شہر میں پانی کی کمی سال بہ سال بڑھنے لگی ۔ اس کمی کو دور کرنے کے لئے حکام اور افسران نے مصنوعی ذرائع کی طرف توجہ دی لیکن پانی کے اس قدرتی ذخیرے کا نظام ٹھیک کرنے، اس میں سے کوڑا کچرا نکال کر اس کی گہرائی بڑھانے اور اسے نئی زندگی دینے کی طرف کسی نے دھیان نہیں دیا ۔ 

    علاقے کے عوام کا کہنا ہے کہ اگر اس تالاب کی صفائی کی جائے  اور اس میں جمع شدہ کوڑا اور کچرا نکال  کر اس کی گہرائی بڑھانے کے علاوہ اس کے اطراف گھیرا بندی کی جائے تو ایک طرف اس تالاب میں نئی جان پڑے گی تو دوسری طرف ایک بڑے علاقے میں صاف ستھرے پانی کی قدرتی فراہمی بحال ہو جائے گی ۔ 

    لوگوں کا مطالبہ ہے کہ اس کام کی طرف بھٹکل ٹاون میونسپل کاونسل کو توجہ دینی چاہیے اور اس کے افسران و ذمہ داران کو اس مقام کا معائنہ کرکے اس تالاب کی بحالی کے لئے اقدام کرنا چاہیے ۔  اگر اس تالاب کی سابقہ حالت بحال کی جاتی ہے تو یہاں سے اطراف کے علاقے میں نلوں کے ذریعے پانی فراہم کرنے کا انتظام ممکن ہو سکتا ہے جس سے شہر کو پانی سپلائی کرنے والے کڈوین کٹا ڈیم کا بوجھ بھی کم ہو جائے گا ۔ 

Revival plea for Bhatkal's ancient 'Jamboor Mutt Pond': a call for action to restore a historic water source

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں پینے کے پانی کے لئے آئے ہوئے فنڈ کا کیسے ہورہا ہے استعمال ؟ تعمیر شدہ ٹینک میں کیوں نہیں چڑھ رہا ہے پانی ؟

گزشتہ ایک دہائی کے دوران مختلف سرکاری اسکیموں کے تحت کروڑوں روپیوں  کا فنڈ موصول ہونے کے باوجود بھٹکل تعلقہ میں پینے کے پانی قلت کی وجہ سے عوام سخت دشواریوں کا سامنا کر رہے ہیں ۔

بھٹکل کڈوین کٹہ ندی میں غرق ہوکر دو لوگوں کی موت؛ گذشتہ تیس دنوں میں پیش آئی غرق ہوکر ہلاک ہونے کی تیسری واردات

بھٹکل کڈوین کٹہ ندی میں غرق ہوکر  ایک خاتون اور ایک لڑکا ہلاک ہوگیا جن کی شناخت  پاروتی شنکر نائک (39) اورسورج پانڈو نائک (17)  کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ پاروتی نائک کا شوہر  شنکر نائک بھٹکل میونسپالٹی  کا ورکر  بتایا گیا ہے۔

بھٹکل؛ پڑوسی ریاست کیرالہ میں بھٹکلی اسٹوڈینٹس کی نمایاں کامیابی

پڑوسی ریاست کیرالہ کے کالی کٹ میں  بھٹکل کی ایک طالبہ  خدیجہ افزا ء بنت  محمد امجد جعفر نے گریڈ 12 کے شعبہ سائنس میں  98 فیصد کے ساتھ شاندار کامیابی درج کی ہے۔ اس طالبہ نے ہندی میں سو میں سو مارکس، میتھس سائنس میں 120 میں  120 ،  فزیکس میں 120 میں 119 اورانگلش میں سو میں 99 مارکس حاصل کئے ...

اترا کنڑ ا ڈپٹی کمشنر نے نیشنل ہائی وے کام کو بروقت مکمل کرنے کی دی ہدایت؛ صرف 7.8 کلومیٹر کام باقی ہونے کا ہائی وے حکام نے کیا دعویٰ

 ضلع  اُترکنڑا  کی ڈپٹی کمشنر  گنگوبائی مانکر نے جب  ضلع سے گذرنے والے نیشنل ہائی وے فورلائن کے توسیعی کام  کو  بروقت مکمل کرنے  ہائی وے افسران کو  ہدایت دی تو افسران نے دعویٰ کیا کہ  ہائی وے کا صرف 7.8  کلومیٹر  کام ہی باقی رہ گیا ہے۔

بھٹکل: انجمن نور اسکول میں 19 مئی کو شروع ہورہا ہے آدھار کارڈ کیمپ؛ بھٹکل کے عوام اُٹھا سکتے ہیں فائدہ

بھٹکل کے چھ اسپورٹس سینٹروں پر مشتمل نور حلقہ کی جانب سے  مورخہ 19 مئی کو نورمسجد کے قریب واقع نور انجمن اسکول میں آدھار کارڈ کا میگا کیمپ منعقد کیا گیا ہے جہاں پہنچ کر  بھٹکل کے عوام  نیا  آدھار کارڈ بھی بنواسکتے ہیں، پرانے کارڈ کو درست کرنا ہے تو کرکشن بھی کرواسکتے ہیں، نام ...

بھٹکل میں پینے کے پانی کے لئے آئے ہوئے فنڈ کا کیسے ہورہا ہے استعمال ؟ تعمیر شدہ ٹینک میں کیوں نہیں چڑھ رہا ہے پانی ؟

گزشتہ ایک دہائی کے دوران مختلف سرکاری اسکیموں کے تحت کروڑوں روپیوں  کا فنڈ موصول ہونے کے باوجود بھٹکل تعلقہ میں پینے کے پانی قلت کی وجہ سے عوام سخت دشواریوں کا سامنا کر رہے ہیں ۔

ارے میں تو پھنس گیا اڈانی امبانی کے چکر میں۔۔۔۔۔از: سہیل انجم

سیاست بھی کیا خوب چیز ہے۔ اگر مہربان ہو تو کامیابی کی دیوی چرنوں میں لوٹتی ہے۔ اگر ناراض ہو جائے تو اپنے دوست بھی پرائے ہو جاتے ہیں۔ سیاست کب کیا رخ اختیار کر لے کہا نہیں جا سکتا۔ جن ملکوں میں جمہوریت ہے یعنی انتخابات کے ذریعے حکومتیں بنتی اور بگڑتی ہیں وہاں کی سیاست تو اور بھی ...

پرجول ’جنسی اسکینڈل‘سے اُٹھتے سوال ...آز: سہیل انجم

اس وقت ملکی سیاست میں تہلکہ مچا ہوا ہے۔ جنتا دل (ایس) اور بی جے پی شدید تنقیدوں کی زد پر ہیں۔ اس کی وجہ ایک ایسا واقعہ ہے جسے دنیا کا سب سے بڑا جنسی اسکینڈل کہا جا رہا ہے۔ قارئین ذرا سوچئے  کہ اگر آپ کو یہ معلوم ہو کہ ایک شخص نے، جو کہ رکن پارلیمنٹ ہے جو ایک سابق وزیر اعظم کا پوتا ...

بھٹکل تنظیم کے جنرل سکریٹری کا قوم کے نام اہم پیغام؛ اگر اب بھی ہم نہ جاگے تو۔۔۔۔۔۔۔؟ (تحریر: عبدالرقیب ایم جے ندوی)

پورے ہندوستان میں اس وقت پارلیمانی الیکشن کا موسم ہے. ہمارا ملک اس وقت بڑے نازک دور سے گزر رہا ہے. ملک کے موجودہ تشویشناک حالات کی روشنی میں ووٹ ڈالنا یہ ہمارا دستوری حق ہی نہیں بلکہ قومی, ملی, دینی,مذہبی اور انسانی فریضہ بھی ہے۔ گزشتہ 10 سالوں سے مرکز میں فاشسٹ اور فسطائی طاقت ...

تعلیمی وڈیو بنانے والے معروف یوٹیوبر دُھرو راٹھی کون ہیں ؟ ہندوستان کو آمریت کی طر ف بڑھنے سے روکنے کے لئے کیا ہے اُن کا پلان ؟

تعلیمی وڈیوبنانے والے دُھرو راٹھی جو اِ س وقت سُرخیوں میں  ہیں، موجودہ مودی حکومت کو اقتدار سے بے دخل کرنے کے لئے  کھل کر منظر عام پر آگئے ہیں، راٹھی اپنی یو ٹیوب وڈیو کے ذریعے عوام کو سمجھانے کی کوشش کررہے ہیں کہ موجودہ حکومت ان کے مفاد میں  نہیں ہے، عوام کو چاہئے کہ  اپنے ...

بھٹکل: بچے اورنوجوان دور درازاور غیر آباد علاقوں میں تیراکی کے لئے جانے پر مجبور کیوں ہیں ؟ مسجدوں کے ساتھ ہی کیوں نہ بنائے جائیں تالاب ؟

سیر و سیاحت سے دل صحت مند رہتا ہے اور تفریح انسان کی جسمانی اور ذہنی صحت کو بہتر بناتا ہے۔اسلام  سستی اور کاہلی کو پسند نہیں کرتا اسی طرح صحت مند زندگی گزارنے کے لیے غذائیت سے بھرپور خوراک کے ساتھ جسمانی سرگرمیوں کا ہونا بھی ضروری ہے۔ جسمانی سرگرمیوں میں جہاں مختلف قسم کی ورزش ...