سعودی عرب کا یمن میں جاری جنگ کے خاتمے کے لیے نیا امن منصوبہ

Source: S.O. News Service | Published on 23rd March 2021, 1:08 PM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

یمن ، 23؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) سعودی عرب نے یمن میں جاری جنگ، بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ قانونی حکومت اور ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں کے درمیان بحران کے خاتمے کے لیے ایک نیا امن منصوبہ پیش کیا ہے۔ سعودی وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے سوموار کو دارالحکومت الریاض میں ایک نیوز کانفرنس میں اس امن تجویز کے خدوخال بیان کیے ہیں۔ اس کے تحت اقوام متحدہ کی نگرانی میں یمن بھر میں جنگ بندی پر عمل درآمد کیا جائے گا۔

انھوں نے بتایا کہ ’’اس امن اقدام کے تحت یمنی حکومت اور حوثیوں کے درمیان سیاسی مذاکرات بحال کیے جائیں گے۔ ہم اس امن منصوبہ پر عمل درآمد کے لیے عالمی برادری، اپنے شراکت داروں اور یمنی حکومت کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔ ہم حوثیوں کو مذاکرات کی میز پر لانے اور انھیں ہتھیار ڈالنے پرآمادہ کرنے کے لیے ہرممکن اقدام کریں گے، کیونکہ ہم اس بات میں یقین رکھتے ہیں کہ لڑائی کے خاتمے اور بحران کے سیاسی حل پر توجہ مرکوز کرنے ہی سے پیش رفت کی جاسکتی ہے۔‘‘

شہزادہ فیصل نے کہا کہ ’’اگر دونوں فریق اس ڈیل سے متفق ہوجاتے ہیں تو صنعاء کے ہوائی اڈے کو دوبارہ کھول دیا جائے گا اور الحدیدہ کی بندرگاہ کے ذریعے یمن میں ایندھن اور خوراک کو درآمد کیا جاسکے گا۔‘‘

یمن میں ایران کی مداخلت: وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ سعودی عرب یمن میں ایران کی مداخلت کو مسترد کرتا ہے اور اس کی جانب سے حوثیوں کو بیلسٹک میزائل برآمد کرنے کا مخالف ہے۔ انھوں نے حوثیوں پر زور دیا ہے کہ ’’وہ یمن میں جاری تنازع کے خاتمے کے لیے اس امن منصوبہ کو تسلیم کریں۔‘‘

انھوں نے کہا کہ ایران خطے میں ملیشیاؤں کو ہتھیار مہیّا کر رہا ہے اور متعدد ممالک میں عدم استحکام کا سبب بن رہا ہے۔ شہزادہ فیصل نے کہا کہ ’’جوں ہی حوثی اس امن منصوبہ سے متفق ہوجاتے ہیں تو یہ مؤثر ہوجائے گا۔‘‘

ان کا کہنا تھا کہ ’’اب یہ حوثیوں پر منحصر ہے، ہم آج ہی (ان کے پاس) جانے کو تیار ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ ہم فوری طور پر جنگ بندی کرسکتے ہیں۔ اب یہ حوثیوں کو فیصلہ کرنا ہے کہ انھوں نے اپنے مفادات کو اوّلیت دینا ہے یا وہ ایران کے مفادات کو ترجیح دیتے رہیں گے۔‘‘

ایران صنعاء پر قابض حوثی ملیشیا کی یمنی حکومت کے خلاف جنگ میں پشتیبانی کر رہا ہے اور وہ اس گروپ کو بحران کے آغاز کے بعد سے بیلسٹک میزائل، ڈرونز اور دوسرا فوجی سازوسامان مہیّا کر رہا ہے۔

شہزادہ فیصل نے سعودی عرب کے اس مؤقف کا اعادہ کیا ہے کہ وہ یمن کے عوام اور حکومت کی معاونت جاری رکھے گا۔ اس کے علاوہ حوثیوں کے حملوں سے اپنی سرحدوں، اپنے شہریوں اور اپنے ڈھانچے کے تحفظ کے لیے اقدامات جاری رکھے گا۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

رمضان کے دوران حرم میں نمازیوں کی گنجائش ایک لاکھ اور معتمرین کی 50 ہزار کرنے کا فیصلہ

حرمین شریفین کے انتظامی امور کے ذمہ دار ادارے 'حرمین پریذیڈینسی' کے ایک ذمہ دار ذریعے نے بتایا ہے کہ مملکت کی قیادت کی ہدایت پر ماہ صیام کے دوران مسجد حرام میں نمازیوں‌کی یومیہ تعداد ایک لاکھ اور معتمرین کی 50 ہزار تک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ہانک کانگ نےہندوستان،پاکستان اور فلپائن کی پروازوں پر لگائی دو ہفتوں کی پابندی

کورونا وبا کےپھیلاؤ کےپیش نظر ہانگ کانگ نے فیصلہ کیا ہےکہ وہ اگلےدوہفتوں کےلئےہندوستان، پاکستان اور فلپائن سےآنےوالی پروازوں پر پابندی لگارہا ہے۔ہانگ کانگ نےان تین ممالک سےآنےوالی تمام پرواز یں معطل کر دی ہیں۔ہانک کانگ کےذمہ داران اس کی وجہ کووڈ19 کے ایشیائی ممالک میں ...

ایران کے لیے جوہری ہتھیاروں کے حصول کی راہ ہموار کرنے والے معاہدے کے پابند نہیں: نیتن یاہو

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے بدھ کے روز کہا ہے کہ ایران کے جوہری ہتھیاروں کے حصول کی راہ ہموار کرنے والے معاہدے کی پابندی نہیں کریں‌ گے۔ اسرائیل کے پاس ایران کو جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کے تمام آپشن کھلے ہیں۔

فوربز میگزین: 2ہزار 755 ارب پتی 130 کھرب ڈالرز کے مالک

ایک ایسے وقت میں جب کہ عالمی وبا قرار دیے جانے والے کورونا وائرس کی وجہ سے پوری دنیا کی معیشت زوال پذیر ہے اور لوگوں کو جسم و جاں کا رشتہ برقرار رکھنا مشکل تر ہو گیا ہے تو دنیا کو یہ بتا کر فوربز میگزین نے ورطہ حیرت میں ڈال دیا ہے کہ بہت سے ارب پتی اسی عرصے کے دوران کھرب پتی ہو گئے ...