متحدہ عرب امارات میں شدید بارش؛ نظام زندگی مفلوج، عمان میں 18 افراد جاں بحق

Source: S.O. News Service | Published on 17th April 2024, 11:33 AM | خلیجی خبریں |

ابوظہبی17/اپریل (ایس او نیوز/ایجنسی) مشرق وسطیٰ کے مالیاتی مرکز دبئی میں منگل کو ہوئی شدید طوفانی بارشوں کے باعث نظام زندگی مفلوج ہو گیا۔

دبئی کے معروف انگریزی اخبار خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات میں پیر کے آخر سے منگل کی رات تک 75 سالوں میں سب سے زیادہ بارش ریکارڈ کی گئی۔

خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق گزشتہ روز فلیگ شپ شاپنگ سینٹرز دبئی مال اور مال آف ایمریٹس دونوں کو بارشوں کے باعث سیلاب کا سامنا کرنا پڑا اور دبئی کے ایک میٹرو اسٹیشن پر بھی پانی ٹخنوں تک جمع ہوگیا  متحدہ عرب امارات (یو اے ای) اور اس کے گردونواح میں منگل کو ایسی طوفانی بارش ہوئی کہ متحدہ عرب امارات کے کئی علاقے تالاب میں تبدیل ہوگئے۔ سیلاب کے باعث کئی شہر جام ہو گئے۔ وہیں، پڑوسی ملک عمان میں شدید بارشوں سے سیلاب کی صورتحال پیدا ہوگئی۔ جس کے باعث 18 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

منگل کو دبئی میں جب طوفانی بارشیں ہوئیں تو دن میں اندھیرا چھا گیا، جس کے بعد دبئی کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کو 25 منٹوں کے لیے بند کرنا پڑا۔

سوشیل میڈیا پر وائرل وڈیو میں دیکھا گیا کہ دنیا کے مصروف ترین ائیرپورٹوں میں شمار دبئی بین الاقوامی ایئر پورٹ دریا کا منظر پیش کررہا ہے۔ جس کی وجہ سے پچاس سے زائد پروازوں کو منسوخ کرنا پڑا۔ میٹرو اسٹیشن میں بھی پانی بھرنے کے مناظر وائرل وڈیو میں دیکھے گئے جس سے ٹرین کا نظام بھی درہم برہم ہو گیا۔ بعض ایسی وڈیوز بھی وائرل ہوئیں جس میں دیکھا گیا کہ شاپنگ مال کے اندر بھی چھتوں سے پانی گررہا ہے۔

شدید بارشوں کے باعث متحدہ عرب امارات کی کئی ریاستوں اور شہروں میں سڑکیں تالاب کا منظر پیش کرنے لگیں جبکہ رہائشی علاقوں میں سیلابی صورت حال پیدا ہو گئی اور بارش کا پانی گھروں، مالز، میٹرو اسٹیشن اور دیگر مقامات میں داخل ہو گیا۔ محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ بارش کا دوسرا اسپیل منگل کی دوپہر سے شروع ہوا تھا جس کا سلسلہ جمعرات تک رہے گا۔

 ’گلف نیوز‘ کے مطابق شدید بارشوں کے باعث دبئی کے مختلف علاقوں میں سیلابی صورتحال ہے جس کے باعث سڑکیں تالاب میں تبدیل ہو گئیں ہیں۔

یو اے ای حکام نے عوام کو گھروں میں رہنے کی تاکید کی ہے اور کہا ہے کہ وہ صرف انتہائی ضروری کام کی صورت میں ہی گھروں سے نکلیں۔ حکام نے عوام سے یہ بھی کہا ہے کہ وہ نشیبی علاقوں یا ان علاقوں سے دور رہیں جہاں زیادہ پانی جمع ہورہا ہو۔ حکام نے ان علاقوں کے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ اونچے مقام پر اپنی گاڑیاں اور موٹر سائیکل پارک کریں۔ حکومتی اعلان کے مطابق اسکولوں کو فوری طور پر آن لائن کر دیا گیا ہے جبکہ تمام سرکاری ملازمین کو آئندہ دو روز کے لیے گھر سے کام کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔

بارش کے باعث متعدد گاڑیاں پانی میں بہہ گئیں ہیں جبکہ شدید ژالہ باری سے کئی گاڑیوں کی ونڈ اسکرینز بھی ٹوٹ گئیں۔ علاوہ ازیں کچھ علاقوں میں بجلی کی بندش کی شکایتیں بھی سامنے آئیں۔

دبئی ایئرپورٹس کے ترجمان نے بتایا کہ شدید طوفان کی وجہ سے، آپریشنز کو سہ پہر 25 منٹ کے لیے عارضی طور پر معطل کر دیا گیا تھا لیکن اس کے بعد سے آپریشنز دوبارہ بحال کردیے گئے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ڈبلیو اے ایم کی رپورٹ کے مطابق فلائی دبئی نے منگل کو کہا کہ انہوں نے خراب موسم کی وجہ سے بدھ کی صبح تک دبئی سے روانہ ہونے والی اپنی تمام پروازیں عارضی طور پر معطل کر دی ہیں۔

فلائی دبئی کے ترجمان کے مطابق 16 اپریل کو دبئی سے روانگی کے لیے شیڈول فلائی دبئی کی تمام پروازوں کو 17 اپریل 10 بجے (دبئی کے مقامی وقت) تک فوری طور پر منسوخ کردیا گیاہے۔

یاد رہے کہ ایشین چیمپئنز لیگ فٹبال کا سیمی فائنل متحدہ عرب امارات کے العین اور سعودی ٹیم الہلال کے درمیان العین میں ہونے والا تھا جسے موسم کی خرابی کی وجہ سے 24 گھنٹوں کے لیے ملتوی کر دیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کے کچھ اندرونی علاقوں میں 24 گھنٹوں کے دوران 80 ملی میٹر (3.2 انچ) سے زیادہ بارش ریکارڈ کی گئی ہے، جو تقریباً 100 ملی میٹر کی سالانہ اوسط کے قریب ہے۔

ادھر سلطنت آف عمان میں شدید بارشوں کے نتیجے میں شمال اور مشرق میں کئی علاقوں میں سیلابی صورتحال کا سامنا ہے۔ موسمی صورتحال کے باعث پانچ صوبوں میں دفاتر میں کام معطل کر دیا گیا ہے، حکام نے لوگوں کو گھروں سے کام کرنے کی ہدای دی ہے۔ رپورٹوں کے مطابق مختلف حادثات میں 18 افراد ہلاک ہو گئے ہیں سیلابی ریلے میں گاڑیاں بہہ جانے سے زیادہ تر اموات ہوئیں ہیں، جن میں اسکول کے نو بچے بھی شامل ہیں۔ عمان میں بھی مزید بارشوں کا بھی امکان ظاہر کیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹوں کے مطابق بحرین میں بھی رات بھر گرج چمک کے ساتھ شدید بارش ہوئی ہے جس کی وجہ سے بحرین بھی سیلاب کی زد میں آگیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گلف سے مزید بھٹکلی اسٹوڈینٹس کی نمایاں نمبرات کے ساتھ کامیابی کی خبریں

گریڈ 12 امتحان میں دبئی سے محمد سیف سلمان دامودی، کویت سے حنین ہاشم معلم اور مسقط سے یوشع عُمران سقاف اور سجا تسنیم سہیل ائیکری کی امتیازی نمبرات کے ساتھ نمایاں کامیابی کی خبر شائع ہونے کے بعد اب ابوظبی سے اطلاع موصول ہوئی ہے کہ ابوظبی انڈین اسکول میں تعلیم حاصل کرتے ہوئے فاطمہ ...

بھٹکلی طالبہ کی کویت میں امتیازی کامیابی

بھٹکل مسلم ایسوسی ایشن کویت کے سابق صدر و سابق جنرل سکریٹری اور جماعت کے سرگرم رکن محمد ہاشم معلم کے دُختر حنین ہاشم معلم نے کارمل اسکول کویت سے تعلیم حاصل کرتے ہوئے سی بی ایس ای  XII  میں 92.80 فیصد مارکس کے ساتھ امتیازی کامیابی درج کی ہے۔ اس ہونہار طالبہ نے انفارمیٹکس پریکٹس کے ...

قطر میں مقیم بھٹکلی طالب علم کی ماس کمیونیکشن میں نمایاں کامیابی

قطر میں مقیم بھٹکل کارگیدے کے رہائشی مولانا فضیل احمد ارمار ندوی کے فرزند حافظ احمد عویمر ارمار نے قطر یونیورسٹی سے ماس کمیونیکیشن میں نمایاں کامیابی حاصل کی ہے جس کے نتیجے میں انہیں ایک پروقار تقریب میں امیر قطر شیخ تمیم بن احمد الثانی کے ہاتھوں ایک میمنٹو اور تہنیتی خط پیش ...

بھٹکل واطراف بھٹکل والوں کے لئے خوش خبری؛ دیرہ دبئی میں حیدرآباد ہاوس ریسٹورینٹ کا افتتاح

حیدرآبادی کھانے بالخصوص حیدرآبادی بریانی دنیا بھر میں مشہور ہے اور گلف سمیت دبئی میں لوگ اکثر حیدرآبادی کھانوں کا مزہ لینے حیدرآبادی ریسٹورینٹ کی تلاش میں رہتے ہیں،  لیکن اب دبئی میں رہائش پذیر بھٹکل اور اطراف بھٹکل والوں کے لئے خوش خبری یہ ہے کہ بھٹکل والوں کی ملکیت میں ...