مہاراشٹرا کیرالہ اور کرناٹکامیں برسات کا قہر۔ عام زندگی ہوئی بری طرح متاثر۔ اب تک مہلوکین کی تعداد ہوگئی 86

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th August 2019, 12:08 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی 10/اگست(ایس او نیوز) مہاراشٹرا، کرناٹکا اور کیرالہ میں پچھلے کچھ دنوں سے جاری موسلادھار بارش اور اس کی وجہ سے پیدا ہونے والی سیلابی کیفیت نے بڑا قہر ڈھایا ہے۔ ہرجگہ عام زندگی بری طرح متاثر ہونے کی اطلاعات مل رہی ہیں۔سرکاری اعداد وشمار کے مطابق مختلف مقامات پربارش کی وجہ سے ہوئی  ہلاکتوں کی تعداد 86ہوگئی ہے۔

  کیرالہ میں موسم کے تباہ کن رخ کو دیکھتے ہوئے گزشتہ سال اگست میں آئے بھیانک سیلاب کی یادیں تازہ ہوگئی ہیں۔یہاں جمعہ کے تک مختلف علاقوں میں 20افراد ہلاک ہوئے ہیں۔مرنے والوں کی تعداد میں مزید اضافے کا امکان جتایا جارہا ہے۔وائناڈ اور ملپورم کے علاقے میں زمین کھسکنے کے واقعات پیش آئے ہیں اور اس کے ملبے میں 40افراد پھنس جانے کا شبہ ہے۔ریکسیو ٹیم کے عملے نے وائناڈ میں ملبے سے اب تک10لاشیں برآمد کی ہیں۔مزید 30سے زائد افراد لاپتہ بتائے جارہے ہیں۔کیرالہ کے وزیر اعلیٰ پینرائی وجیان کا کہنا ہے کہ کتنے لوگ واقعتا ابھی ملبے کے اندر دبے ہوئے ہیں یہ بتانا مشکل ہے۔اس لئے ہلاکتوں کے تعلق سے حقیقی اعداد وشمار ابھی بتانا ممکن نہیں ہے۔

 کوچی ایئر پورٹ بند:    بارش کا پانی جمع ہوجانے کی وجہ سے کیرالہ کے کوچی ایئر پورٹ کو اتوار تک کے لئے بند کردیا گیا ہے۔جبکہ ایرناکولم، ایڈوکّی، پالکّاڈ، ملپورم، کولیکوڈ، وائناڈ اور کنور ضلع میں ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا ہے۔ نیشنل ڈیساسٹر منیجمنٹ شعبے کی 13ٹیمیں بچاؤ اور راحت کاری میں لگادی گئی ہیں۔فوج سے متعلق 180 افسران کو ریلیف میں تعاون کرنے کے لئے طلب کیاگیا ہے۔ 64ہزار متاثرین کو محفوظ مقامات پر راحت کیمپوں میں منتقل کیا گیا ہے۔محکمہ موسمیات کے مطابق کیرالہ کے مختلف علاقوں میں 20تا 40سینٹی میٹر برسات ہوئی ہے۔

  کرناٹکا میں ہلاکتیں:کرناٹکا میں جمعہ کے دن بھاری برسات کی وجہ سے مختلف مقامات سے 10افراد ہلاک ہونے کی خبر آئی ہے۔اس طرح اب تک ریاست میں بارش کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد22ہوگئی ہے۔ویراج پیٹ میں زمین کھسکنے وجہ سے جہاں 7جانیں تلف ہوئی ہیں وہیں پر مزید 8افراد لاپتہ بتائے جارہے ہیں۔جنوبی کینرا سمیت کرناٹکا کے 6اضلاع میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے جہاں پر آئندہ 48گھنٹوں تک تیز اور موسلادھار بارش کی پیشین گوئی محکمہ موسمیات کی طرف سے جاری کی گئی ہے۔

ساحلی کرناٹکا میں پھر سے جاری ہوا ریڈالرٹ: منگلورو اور اطراف میں کل رات سے انتہائی تیز بارش کا سلسلہ پھر سے شروع ہوا ہے۔ پورے ساحلی کرناٹکا میں محکمہ موسمیات نے ریڈ الرٹ جاری کردیا ہے۔ جنوبی کینرا میں نیتراوتی اور کمارادھارا ندیوں میں زبردست طغیانی آگئی ہے اور وہ خطرے کے نشان کو پار کرگئی ہیں۔اپن انگڈی اور بنٹوال میں ندیوں کے کنارے آباد بہت سارے گھروں میں پانی گھس گیا ہے، اور تقریباً پورے علاقے سیلابی پانی میں ڈوب گئے ہیں۔ جمعہ کی شب میں آدھی رات کو صورتحال مزید خراب ہونے کے امکانات کی وجہ سے اپن انگڈی کار اسٹریٹ کے لوگوں کو نشیبی علاقے سے نکال کر بلندی کی طرف منقتل کیا گیا ہے۔یہ لوگ ضلع انتظامیہ کی جانب سے قائم کیے گئے راحت کیمپس یا اپنے رشتے داروں کے گھروں میں پناہ لینے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

 بنٹوال اور اطراف کے علاقوں میں سڑکوں اور عمارتوں کے علاوہ منگلورو میں بھی کچھ مقامات پانی میں ڈوب جانے کی خبریں مل رہی ہیں۔محکمہ موسمیات کا خیال ہے کہ جنوبی کینرا میں 150سے260ملی میٹر تک بارش ہونے والی ہے۔چارمڈی گھاٹ کو سواریوں کے لئے بالکل بند کردیا گیا ہے جبکہ شیرڈی گھاٹ اور سمپاجے گھاٹ کو جزوی طور پر ٹریفک کے لئے کھلا رکھا گیا ہے۔

سرکاری افسران کی چھٹیاں منسوخ:معتبر ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق جنوبی کینرا کے ڈپٹی کمشنر سسی کانت سینتھل نے عوام کو محتاط اور چوکس رہنے کی ہدایت جاری کرنے کے ساتھ ہی سنیچر اور اتوار کے علاوہ پیر کے دن بقر عید کے لئے افسران کو10 اگست سے 12اگست تک ملنے والی چھٹیاں منسوخ کردی ہیں اور قدرتی آفت سے نمٹنے کے لئے انہیں اپنے اپنے دفاتر میں حاضر رہنے کی ہدایت دی ہے۔   اپنے تمام افسران کی چھٹیوں کو منسوخ کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔    

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

ریاستی حکومت نے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے حوالے کیا

ریاست کی سابقہ کانگریس جے ڈی ایس حکومت کے دور میں کی گئی مبینہ ٹیلی فون ٹیپنگ کی سی بی آئی جانچ کے ا حکامات صادر کرنے کے دودن بعد ہی آج ریاستی حکومت نے کروڑوں روپیوں کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

بنگلورو: نشے میں دھت شخص نے فٹ پاتھ پر 7 لوگوں کو کچل دیا

شراب کے نشے میں دھت ایک شخص نے بہت تیز رفتار کار فٹ پاتھ پر چڑھا دی اور فٹ پاتھ پر چل رہے 7 افراد اس کار کی زد میں آ گئے۔ زخمیوں کو فوراً اسپتال پہنچایا گیا اور خبر لکھے جانے تک ان لوگوں کی حلات نازک بنی ہوئی ہے۔ یہ واقعہ بینگلورو کے ایچ ایس آر لے آؤٹ علاقے کا ہے۔

ریزرویشن سے متعلق آر ایس ایس اور بی جے پی کے ارادے ٹھیک نہیں: تیجسوی یادو

  بہار اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تیجسوی پرساد یادو نے ریزرویشن کے معاملے پر راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ ( آر ایس ایس ) کے چیف موہن بھاگوت کے حالیہ بیان پر پلٹ وار کرتے ہوئے کہا کہ ریزرویشن کو لے کر آر ایس ایس اور بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کے ارادے ٹھیک نہیں ہیں۔