بھٹکل کے تاریخی ’کوکتی تالاب‘کو نیا روپ دینے کا کام ہوگیا شروع

Source: S.O. News Service | Published on 11th June 2020, 1:33 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل،11؍جون (ایس او نیوز) بھٹکل کا مشہور اور تاریخی’کوکتی تالاب‘ جو ایک زمانے سے مٹی اور کیچڑ جمع ہونے کی وجہ سے پوری طرح مٹنے کے قریب آگیا تھا اب اس کو صاف کرکے نیا روپ دینے کا کام شروع کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ بھٹکل میں انتہائی شدید گرمی کے موسم میں بھی یہ تالاب ہمیشہ ٹھنڈے پانی سے بھرا رہتا تھا۔ مگر پچھلے کچھ دہائیوں سے اس میں مٹی زیادہ اور پانی کم ہوگیا تھا جس سے اطراف کے کنوؤں میں پانی کی سطح بھی کم ہوتی چلی گئی تھی۔سوسگڈی سروے نمبر 386میں 9ایکڑ 6گُنٹے کے علاقے میں پھیلا ہوایہ تالاب 2کلو میٹر  تک کے احاطے میں کاشتکاری اور پینے کے پانی کا اہم ذریعہ ہے۔ اس میں جمنے والے کیچڑ اور مٹی کی وجہ سے اب صرف برسات کے موسم میں ہی یہ تالاب پانی سے بھرا ہو ا نظر آتا ہے۔سال 2019کے دوران گرمی کے موسم میں یہاں سب سے کم پانی کی سطح دیکھنے کو ملی تھی۔

  کوکتی تالاب کی صفائی اور گہرائی بڑھانے کے لئے ریاستی حکومت کی جانب سے 25لاکھ روپے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔ اس منصوبے پر عمل پیرائی کے لئے ایم ایل اے سنیل نائک نے فنڈ جاری کروایا ہے۔ تالاب سے کیچڑ اور مٹی نکالنے کے علاوہ اس کے اطراف میں پچینگ کا کام بھی کیا جائے گا۔ امید کی جارہی ہے کہ تالاب کی صفائی کے بعد آس پاس کے گھروں کے کنوؤں میں پانی کی سطح بڑھ جائے گی اور زرعی مقاصد کے لئے بھی وافر مقدار میں پانی دستیاب ہوگا۔

 ایم ایل اے سنیل نائک نے بتایا کہ اس تالاب کو مزید بہتر بنانے، اس کے اطراف باڑھ لگانے اور لوگوں کے بیٹھنے کے لئے نشستیں وغیرہ لگاکر اس کو ایک خوبصورت روپ دینے کا سپنا ڈاکٹر چترنجن نے دیکھا تھا۔ اس منصوبے پر ایک کروڑ روپے تک خرچ آنے والاہے۔ میں اس اس سپنے کو پورا کرنے کے لئے ریاستی حکومت کے پاس تجویز پیش کروں گا۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا کا خوف؛ ہارٹ کے مریض کو دیکھنے سے پرائیویٹ اسپتال سمیت مرڈیشور سرکاری ڈاکٹر کا بھی انکار؛ دو تین گھنٹوں کی دوڑ دھوپ کے بعد مریض نے توڑا دم

لیڈران، ذمہ داران یہاں تک کہ ڈاکٹرس پوری شدت کے ساتھ یہ کہتے ہیں کہ  کورونا سے کسی کو ڈرنے یا خوف کھانے کی ضرورت نہیں ہے،  مگر دیکھا جائے تو عوام سے زیادہ    ڈاکٹرس ہی  کورونا سے خوف کھاتے ہیں بعض ڈاکٹرس کورونا سے اتنا زیادہ خوف کھاتے ہیں کہ وہ ہر مریض کو  کورونا کا ہی مریض ...

مینگلور کے سابق ایم ایل سی ایوان ڈیسوزا کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آتے ہی رکن اسمبلی یو ٹی قادر نے کیا ہوم کورنٹائن کا اعلان

سابق ایم ایل سی ایوان ڈیسوزا کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آنے کی اطلاع کے اگلے ہی روز رکن اسمبلی یوٹی قادر نے اتوار کو  اعلان کیا کہ وہ خود سے ہی ہوم کورنٹائن ہوگئے ہیں کیونکہ وہ ایوان ڈیسوزا کے ابتدائی رابطے میں تھے۔

منگلورو:کووِڈ سے فوت ہونے والوں کی آخری رسومات ان کے گھر والے ادا کرسکیں گے۔جنوبی کینرا اور اڈپی ضلع انتظامیہ کی مشروط اجازت

منگلورو کے اسسٹنٹ کمشنر مدن موہن کے بیان کے مطابق اب کووِڈ کی وجہ سے فوت ہونے والوں کی آخری رسومات اگر ان کے گھر والے اداکرنا چاہیں تو مشروط طور پر وہ یہ کام کرسکیں گے۔

دبئی :یو اے ای میں مقیم ہندوستانیوں کا پاسپورٹ 2دن میں رینول ہوجائے گا۔ قونصل جنرل کی یقین دہانی

متحدہ عرب امارات  کے لئے ہندوستانی قونصل جنرل امن پوری نے یو اے ای میں مقیم ہندوستانیوں کو یقین دہانی کرائی  ہے کہ درخواست ملنے کے 2دنوں کے اندر ان کا پاسپورٹ رینیوکردیا جائے گا۔

”دہلی کا فساد بدلے کی کارروائی تھی۔ پولیس نے ہمیں کھلی چھوٹ دے رکھی تھی“۔فسادات میں شامل ایک ہندوتوا وادی نوجوان کے تاثرات

دہلی فسادات کے بعد پولیس کی طرف سے ایک طرف صرف مسلمانوں کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ سی اے اے مخالف احتجاج میں شامل مسلم نوجوانوں اور مسلم قیادت کے اہم ستونوں پر قانون کا شکنجہ کسا جارہا ہے، جس پر خود عدالت کی جانب سے منفی تبصرہ بھی سامنے آ چکا ہے۔

کیا ’نئی قومی تعلیمی پالیسی‘ ہندوستان میں تبدیلی لا سکے گی؟ .........آز: محمد علم اللہ

ایک ایسے وقت میں جب کہ پورا ہندوستان ایک خطرناک وبائی مرض سے جوجھ رہا ہے، کئی ریاستوں میں سیلاب کی وجہ سے زندگی اجیرن بنی ہوئی ہے، مرکزی کابینہ نے آنا فانامیں نئی تعلیمی پالیسی کو منظوری دے دی۔جب کہ سول سوسائٹی اور اہل علم نے پہلے ہی اس پر سوالیہ نشان کھڑے کئے تھے اوراسے ایک ...

ملک پر موت اور بھکمری کا سایہ، حکومت لاپرواہ۔۔۔۔ از: ظفر آغا

جناب آپ امیتابھ بچن کے حالات سے بخوبی واقف ہیں۔ حضرت نے تالی بجائی، تھالی ڈھنڈھنائی، نریندر مودی کے کہنے پر دیا جلایا، سارے خاندان کے ساتھ بالکنی میں کھڑے ہو کر 'گو کورونا، گو کورونا' کے نعرے لگائے، اور ہوا کیا! حضرت مع اہل و عیال کورونا کا شکار ہو کر اسپتال پہنچ گئے۔

بھٹکل نیشنل ہائی وے کنارے پر مچھلی اور ترکاری کا لگ رہا ہے بازار۔ د ن بھر سنڈے مارکیٹ کا منظر

جب سے بھٹکل میں کورونا وباء کی وجہ سے لاک ڈاؤن کا سلسلہ شروع ہواتھا، تب سے ہفتہ واری سنڈے مارکیٹ اور مچھلی مارکیٹ بالکل بند ہے۔ لیکن ترکاری، فروٹ اور مچھلی کے کاروباریوں نے نیشنل ہائی وے، مین روڈ اور گلی محلوں کی صورت میں اس کا دوسرا نعم البدل تلاش کرلیا ہے۔

بابری مسجد کے "بے گناہ" مجرم ............ تحریر: معصوم مرادآبادی

بابری مسجد کا انہدام صدی کا سب سے گھناؤناجرم تھا۔ 6 دسمبر1992کو ایودھیا میں اس پانچ سو سالہ قدیم تاریخی عبادت گاہ کو زمیں بوس کرنے والے سنگھ پریوار کے مجرم خودکو سزا سے بچانے کے لئے اب تک قانون اور عدلیہ کے ساتھ آنکھ مچولی کھیلتے رہے ہیں۔ایک طرف تو وہ اس بات پر فخر کا اظہار کرتے ...