شہریت ترمیمی ایکٹ اور این آر سی کی مخالفت میں بھٹکل میں مزید مظاہروں کےآثار؛ کئی ٹورنامنٹ ملتوی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd January 2020, 1:36 AM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 2/جنوری (ایس او نیوز) ملک کا خوفناک قانون  شہریت ترمیمی ایکٹ (سی اے اے)  اور این آر سی کی مخالفت  میں جہاں ملک بھر میں احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں، وہیں بھٹکل  میں بھی آنے والے دنوں میں  مزید بڑے پیمانے پر مظاہرے اور احتجاجی ریلیاں نکالے جانے کے آثار نظر آرہے ہیں۔

مودی حکومت کے ذریعے نافذ کئے جانے والے  شہریت ترمیمی قانون  کی سخت مخالفت کرتے ہوئے بھٹکل میں ایک بڑا احتجاج  درج کیا جاچکا ہے، مزید  مظاہروں، قانونی بیداری جلسوں اور قانونی کاروائیوں کے لئے  مختلف میٹنگوں کا انعقاد بھی ہونے کی  اطلاعات مل رہی ہیں۔ ایسے میں بھٹکل میں منعقد  ہونے والے کئی بڑے ٹورنامنٹ منسوخ یا ملتوی کئے جانے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق آج 2/جنوری سے  آزاد یوتھ کلب کے زیراہتمام  تعلقہ لیول کا  عالیشان کرکٹ  ٹورنامنٹ منعقد ہونے والا تھا مگر  شہریت قانون کے خلاف ہونے والے احتجاج اور اس قانون کے خلاف پائے جانے والے غم و غصے کی لہر کو دیکھتے ہوئے شہر کے  ذمہ داران سے صلاح و مشوروں کے بعد اس ٹورنامنٹ کو اگلے اعلان تک ملتوی کردیا گیا ہے، آزاد یوتھ کلب کے  ایس ایم یحیٰ میموریل کرکٹ ٹورنامنٹ میں بھٹکل تعلقہ کی 28 سے زائد ٹیمیں حصہ لے رہی تھیں اور اس کے لئے تمام تیاریاں مکمل کی جاچکی تھیں مگر اب  ٹورنامنٹ کو ملتوی کئے جانے پر آرگنائزر کو لاکھوں روپیوں کا نقصان ہوا ہے۔

اُدھر دبئی میں ہر سال کھیلا جانے والا بھٹکل پریمئیر لیگ (بی پی ایل) کرکٹ ٹورنامنٹ پر بھی سیاہ بادل چھا گئے ہیں۔ خبر ملی ہے کہ بی پی ایل ٹورنامنٹ کے لئے بھی تمام تیاریاں مکمل کی جاچکی تھیں اور کھلاڑیوں کے یونیفارم سمیت عجمان میں کھیل کے میدان  کو کافی ماہ پہلے ہی بُک کیا جاچکا تھا، مگر ملک بھر میں ہورہے شہریت ترمیمی قانون کی مخالفت اور بھٹکل میں بھی  اس قانون کو لے کر سخت مظاہروں اور اسے واپس لئے جانے تک مسلسل جدوجہد  اوراحتجاج کے انعقاد کو دیکھتے ہوئے 10/جنوری سے شروع ہونے والے اس  ٹورنامنٹ کو منسوخ کیا گیا ہے۔

خبر ہے  کہ بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن  کی درخواست پر گزشتہ روز  ایک جاری کرکٹ سیریز بھی منسوخ کی جاچکی ہے۔

واضح رہے کہ بھٹکل میں ہر سال دس سے زائد کبڈی اور کرکٹ ٹورنامنٹ منعقد کئے جاتے ہیں، اس کے علاؤہ  والی بال، فٹ بال سمیت کئی دیگر ٹورنامنٹ بھی کھیلے جاتے ہیں،ان ٹورنامنٹوں میں تمام مذاہب کے کھلاڑی حصہ لیتے ہیں اور ان مقابلوں سے آپسی بھائی چارگی میں بھی اضافہ ہوتا ہے، ایک ٹورنامنٹ کے انعقاد پر لاکھوں روپیوں کی لاگت آتی ہے، مگر مودی حکومت کے ذریعے  پارلیمنٹ میں منظور کئے گئے قانون نے آرگنائزروں کو مجبور کردیا ہے کہ اس قانون کی مخالفت میں احتجاج درج کرتے ہوئے ایسے  تمام ٹورنامنٹس منسوخ کردئے جائیں۔

ایک طرف بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن  کی اپیل پر  بھٹکل میں ہونے والے کئی ایک ٹورنامنٹوں کو منسوخ یا ملتوی کیا گیا ہے وہیں  بھٹکل میں آنے والے دنوں میں  سی اے اے کی مخالفت میں  احتجاج اور مظاہروں میں شدت پیدا ہونے کے آثار نظر آرہے ہیں۔ خبریں مل رہی ہیں کہ بھٹکل سمیت ضلع بھر میں مختلف احتجاجی پروگرام ترتیب دئے جارہے ہیں اور خوفناک قانون سی اے اے کو رد کرنے کے لئے ہر ممکنہ طریقہ پر آواز بلند کرنا طئے کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل سے مزید تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ؛ آج موصول ہونے والی تمام رپورٹس بھی نیگیٹیو؛ کیا کسی کی رپورٹ پوزیٹیوآنے کا خدشہ ہے ؟

کورونا وائرس کو لے کر شہر سمیت پورے ملک میں لاک ڈاون جاری ہے اور ہر روز مشکوک لوگوں کے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کئے جارہے ہیں۔اب تک بھٹکل سے جن لوگوں کے تھوک کے نمونے  جانچ کے لئے روانہ کئے جارہے تھے،  راحت کی خبریں موصول ہورہی تھیں یہاں تک کہ مینگلور اور کاروار میں ...

بھٹکل میں کورونا وائرس کو لے کر کیاسوشیل میڈیا میں کسی طرح کی سازش رچی جارہی ہے ؟ مسلمانوں سے دور رہنے اورکسی بھی طرح کا لین دین نہ رکھنے کے مسیجس وائرل

ایسا لگتا ہے کہ کورونا وائرس کی وباء فسطائی اور فرقہ وارانہ ذہنیت والے غیر مسلموں کے لئے مسلمانوں کے خلاف اپنی بھڑاس نکالنے کا نیا ہتھیار بن گئی ہے۔ ایک طرف کورونا وائرس کے نام پر مسلمانوں سے دوری رکھنے کی تلقین کی جارہی ہے  اور مسلمانوں سے کسی بھی طرح کی خریداری کرنے کی ...

کورونا کے نام پر مسلمانوں پر حملہ؛ باگلکوٹ میں تین مسلم لوگوں کو ایک گاوں میں داخل ہونے سے روکنے کی واردات

باگلکوٹ کے مدھول پولیس اسٹیشن کے حدود میں آنے والے ایک گاؤں میں چند شرپسندوں نے مسلمانوں کو اپنے گاؤں میں داخل ہونے سے عملاً روکتے ہوئے ان پر حملہ کرنے کی واردات پیش آئی ہے  جس کی ویڈیو کلپ بھی سوشیل میڈیا پر  وائرل ہوگئی ہے۔

کورونا وائرس اپ ڈیٹ: اڈپی سے جانچ کے لئے بھیجے گئے 36 نمونے۔ جنوبی کینرا میں 21رپورٹ آئی نگیٹیو

کورونا وائرس وباء کے تعلق سے ضلع اڈپی کی جو تازہ صورتحال ہے اس کے مطابق 6اپریل کی شام تک یہاں سے جملہ 36مشتبہ افراد کے گلے سے لیے گئے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے شیموگہ لیباریٹری میں بھیج دئے گئے ہیں۔

بیندور: سڑک پر اچانک خنزیر آجانے سے ہوا حادثہ۔ اسکوٹر سوار ہلاک

ناوندا گنیش نگر کے قریب پیش آئے سڑک حادثے میں سنتوش پجاری نامی ایک شخص ہلاک ہوگیا ہے۔ موصولہ رپورٹ کے مطابق مہلوک سنتوش پجاری کویا نگر سے اریہولے کی طرف جارہا تھا۔ اس دوران اچانک سڑک پر خنزیر آگیا اور اس کی اسکوٹر خنزیر سے ٹکرا گئی۔

بھٹکل کے ’میکرس ہَب‘نے کی ہے طبی عملے کے لئے’فیس شیلڈ‘۔ نوجوانوں کی ہورہی ہے ستائش!

کورونا وائرس نے جہاں ایک طرف دنیا بھر میں اپنا قہر برپا کیا ہے، وہیں دوسری طرف ڈاکٹر، طبی عملہ اور سماجی رضاکا ر اپنی جان پر کھیلتے ہوئے اس وباء کو قابو میں کرنے کی مہم چلارہے ہیں۔ ایسے میں فیلڈ میں رہ کر کام کرنے والوں کا تحفظ بہت ہی اہم ہوجاتا ہے، جس کے لئے ضروری سازوسامان یا ...

ریت میں سر چھپانے سے خطرہ نہیں ٹل جاتا پردھان سیوک جی!۔۔۔۔۔ از:اعظم شہاب

بہت ممکن ہے کہ جب آپ تک یہ تحریر پہونچے توملک ’لائیٹ آف، کینڈل آن‘ کا ایونٹ مناچکا ہو۔ کرونا وائرس کے اس قہر زدہ ماحول میں یہ ضروری بھی تھا کہ اپنے اپنے گھروں میں مقید لوگوں کے لیے کچھ تفریح کا سامان کیا جائے سو ہمارے پردھان سیوک نے یہ موقع فراہم کر دیا۔

تبلیغی مرکز کو آخر نشانہ کیوں بنایا جا رہا ہے؟۔۔۔۔۔ روزنامہ سالار کا تجزیہ

حکومت اپنی ناکامی چھپانے کیلئے کس کس چیز کاسہارا لیتی ہے۔ اس کا ثبوت نظام الدین کا تبلیغی مرکز ہے۔ دودنوں میں جس طرح حکومت اور میڈیا نے جھوٹی اور من گھڑت خبریں پھیلائیں اس سے انداز ہ ہوتا ہے کہ اس مصیبت کی گھڑی میں بھی حکومت اور میڈیا کس قدرقعرمذلت میں ہے۔