شاہ سلمان نے شہید سوڈانی فوجی کی والد کے حج کی خواہش پوری کردی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th September 2017, 11:06 AM | عالمی خبریں | خلیجی خبریں |

جدہ،6؍ستمبر(ایس او نیوز ؍آئی این ایس انڈیا)سوڈان سے تعلق رکھنے والے ایک فوجی نے گذشتہ برس عرب اتحادی فوج کے تحت یمن میں آئینی حکومت کی بحالی کی لڑائی میں حصہ لیا مگر وہ اس میں جام شہادت نوش کرگئے۔ سوڈانی سارجنٹ النورین فضل اللہ نے اپنے والد سے وعدہ کیا تھا کہ وہ انہیں حج کرائے گا۔ والد کو حج کرانے کا وعدہ کرنے کے چند ہی ماہ بعد نورین یمن میں جنگ میں شہید ہوگئے مگر ان کے والد کے حج کی خواہش خادم الحرمین الشریفین نے پوری کردی۔

نورین فضل اللہ شہید کے والد 72 سالہ فضل اللہ عمر نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بیٹے کی یمن میں شہادت کے تین ماہ بعد ایک خرطون میں جبل اولیا قصبے کے ایک عہدیدار نے مجھے خصوصی حج اسکیم کے تحت حج کے سفر کی خوش خبری سنائی۔ عہدیدار نے بتایا کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے سوڈانی فوج کے یمن میں شہید اور زخمی ہونے والے اہلکاروں کے والدین کو حج کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس میں آپ کا نام بھی شامل ہے۔

فضل اللہ عمر کا کہنا ہے کہ شاہ سلمان نے میرے بیٹے اور میری دونوں کی خواہش پوری کی ہے۔ میں حرمین شریفین کی زیارت کا متمنی تھا اور بیٹے نے بھی مجھے حج کرانے کا وعدہ کیا تھا۔بیٹے کی شہادت پر اپنے رد عمل کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں فضل اللہ عمر نے کہا کہ میں نے بیٹے کے مارے جانے کی خبر کو خوشی سے قبول کیا۔ میں اس کی شہادت پر راضی ہوں۔ اس کی شہادت نے مجھے حج کا موقع دیا۔ میں دیار مقدس میں اس کے لیے رحمت، مغفرت اور تمام مسلمانوں کی مغفرت کی دعائیں کرتا رہا۔ یہ بیٹے کی شہادت ہی کا نتیجہ ہے۔

انہوں نے حج اسکیم کے تحت فریضہ حج کی ادائی کا موقع دینے پر شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا۔خیال رہے کہ امسال سوڈان کے شہداء اور زخمیوں کے 250اقارب کا خادم الحرمین الشریفین حج اسکیم کے تحت حج کرایا گیا۔ اسی طرح خصوصی حج اسکیم کے تحت مصر اور فلسطینی شہداء کے اقارب کو بھی حج کرایا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

ایجنسیوں سے بہتر رپورٹیں تو میڈیا سے مل جائیں گی: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے فیض آباد دھرنے سے متعلق خفیہ اداروں کی رپورٹوں پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے نئی رپورٹیں جمع کرانے کی ہدایت کی ہے۔عدالتِ عظمیٰ کے جج قاضی فائز عیسٰی نے ریمارکس دیے ہیں کہ جب ریاست ختم ہو جائے گی تو قتل سڑکوں پر ہوں گے۔

نائیجیریا میں نمازیوں پر حملہ انتہائی قابلِ مذمت: ترجمان

امریکی محکمہ خارجہ نے منگل کو نائجیریا میں ریاستِ ادماوا میں موبی کے مقام پر ہونے والے دہشت گرد حملے کی مذمت کی ہے۔ترجمان ہیدر نوئرٹ نے کہا ہے کہ ’’اِس جانی نقصان پر ہم نائجیریا کے عوام اور متاثرہ خاندانوں سے دلی تعزیت کا اظہار کرتے ہیں‘‘۔

بنگلہ دیش میں جماعتِ اسلامی کے 6 رہنمائوں کو سزائے موت

 بنگلہ دیش میں ایک عدالت نے بدھ کو جماعتِ اسلامی کے 6 ارکان کو 1971 کی پاکستان کے خلاف جنگِ آزادی کے دوران جنگی جرائم کے مبینہ الزامات پر موت کی سزا سنادی۔ان افراد کو انٹرنیشنل کرائم ٹریبونل کے ایک تین رکنی پینل نے سزاسنائی ۔

شارجہ میں ابناء علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی خوبصورت تقریب؛ یونیورسٹی میں میڈیکل تعلیم صرف 60 ہزار میں ممکن!

علی گڈھ مسلم یونیورسٹی جسے بابائے قوم مرحوم سر سید احمد خان نے دو سو سال قبل قائم کیا تھا آج تناور درخت کی شکل میں ملک میں تعلیم کی روشنی عام کررہا ہے۔اس یونیورسٹی میں میڈیکل کے طلبا کے لئے پانچ سال کی تعلیمی فیس صرف 60,000 روپئے ہے، حالانکہ دوسری یونیورسیٹیوں میں میڈیکل کے طلبا ...

متحدہ عرب امارات میں حفظ قرآن جرم، حکومت کی منظوری کے بغیر کوئی شخص قرآن حفظ نہیں کرسکتا، مساجد میں مذہبی تعلیم اور اجتماع پر بھی پابندی

مشرقی وسطیٰ کے مختلف ممالک میں داخل اندازی اور عرب کی اسلامی تنظیموں کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد متحدہ عرب امارات قانون کے ایسے مسودہ پر کام کررہا ہے جس کی رو سے حکومت کی منظوری کے بغیر قرآن شریف کا حفظ بھی غیرقانونی ہوگا۔