بیت اللہ شریف میں دنیا کا سب سے بڑا کو ُلنگ سسٹم

Source: S.O. News Service | Published on 30th March 2021, 12:07 PM | خلیجی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ریاض، 30؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) مکہ مکرمہ میں مسجد حرام میں واقع دو کولنگ اسٹیشنوں کو دنیا میں سب سے بڑی کولنگ تنصیب کے طور پر درج کر لیا گیا ہے- ان میں پہلا ’اجیاد اسٹیشن‘ ہے- یہ 35300 ریفریجریشن ٹن پیدا کرتا ہے جس میں سے تقریباً 24500 ریفریجریشن ٹن استعمال ہو جاتے ہیں - دوسرا اسٹیشن نیا مرکزی اسٹیشن ہے- اس کی گنجائش 1.2 لاکھ ریفریجریشن ٹن ہے- یہ اس وقت حرم مکی کی تیسری سعودی توسیع اور نصف مسعیٰ کو ٹھنڈک فراہم کر رہا ہے- مستقبل میں یہ اسٹیشن مسجد حرام کے تمام جانبی راستوں اور ملحقہ مقامات کو ٹھنڈا رکھے گا-

مسجد حرام کے امور کی جنرل پریسیڈنسی نے مرکزی اسٹیشنوں کے علاوہ کولنگ کے فاضل اسٹیشن بھی فراہم کئے ہیں - ان کا مقصد یہ ہے کہ کسی بھی مرکزی اسٹیشن میں تعطل آنے کی صورت میں درجہ حرارت کو کنٹرول کیا جا سکے اور مسجد حرام کے اندر صاف ہوا کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکے-جنرل پریسیڈنسی کی جانب سے رواں سال رمضان کے سیزن کی تیاریاں بڑھا دی گئی ہیں - اس دوران مسجد حرام میں ایئرکنڈیشننگ سسٹم کی روٹین کی دیکھ بھال اور جانچ کا سلسلہ جاری ہے-

مسجد حرام میں آپریشن اینڈ مین ٹے ننس کی انتظامیہ کے معاون ڈائریکٹر جنرل انجینئر مطلق المقاطی کے مطابق ایئرکنڈیشننگ کے عمل کو فلٹر کی صفائی کے ذریعے جاری و ساری رکھا جاتا ہے- انہوں نے مزید بتایا کہ تعمیروں میں انجینئرنگ ڈیزائنوں کو تقریباً 344 یونٹوں کے ذریعے ٹھنڈا رکھا جاتا ہے-یہ یونٹیں مسجد حرام میں دو مقامات پر تقسیم کی گئی ہیں -

المقاطی کے مطابق ایئرکنڈیشننگ رْوموں میں فلٹر کی صفائی روزانہ کی بنیاد پر پورے سال ہوتی ہے اور ضرورت پڑنے پر اسے تبدیل کر دیا جاتا ہے - اس کی صفائی اور دیکھ بھال کا کام اعلیٰ اہلیت کے حامل انجینئرنگ اور ٹیکنیکل تربیت یافتہ اہل کار انجام دیتے ہیں -

ایک نظر اس پر بھی

رمضان کے دوران حرم میں نمازیوں کی گنجائش ایک لاکھ اور معتمرین کی 50 ہزار کرنے کا فیصلہ

حرمین شریفین کے انتظامی امور کے ذمہ دار ادارے 'حرمین پریذیڈینسی' کے ایک ذمہ دار ذریعے نے بتایا ہے کہ مملکت کی قیادت کی ہدایت پر ماہ صیام کے دوران مسجد حرام میں نمازیوں‌کی یومیہ تعداد ایک لاکھ اور معتمرین کی 50 ہزار تک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مینگلور کے قریب کڈبا میں دو نوجوان ندی میں ڈوب کر جاں بحق

مینگلور سے قریب  85 کلو میٹر دور کڈبا تعلقہ کے اِچیلم پانڈے کی ایک ندی میں غرق ہوکر دو نوجوان جاں بحق ہوگئے جن کی نعشیں ندی سے برآمد کرلی گئی ہیں۔ حادثہ پیر کی شام کو پیش آیا جب یہ دونوں ندی میں نہانے کےلئے اُترے تھے۔

مدھیہ پردیش میں کووڈ کا قہر، 30 اپریل تک کورونا کرفیو کا نفاذ

مدھیہ پردیش میں حکومت کی تمام کوششوں کے باوجود کورونا کا قہرجاری ہے۔ ریاست میں کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد جہاں اڑسٹھ ہزار کو تجاوز کر گئی ہیں وہیں پچھلے چوبیس گھنٹےمیں ریاست میں کورونا کے بارہ ہزار دو سو اڑتالیس نئے معاملے درج کئے گئے ہیں ۔