جنوری سے سعودی میں شروع ہونے والے واٹ پر جانکاری دینے بھٹکل مسلم کمیونٹی کی جانب سے جدہ میں خوبصورت ورک شاپ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 29th December 2017, 9:11 PM | خلیجی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

جدہ 29/ڈسمبر (ایس او نیوز)   28 ڈسمبر بروز جمعرات شب 10 بجے بھٹکل کمیونٹی جدہ کی جانب سے ممبران کو واٹ  یعنی Value Added Tax کی آگاہی کے لئے  کیریر گائدنس کا ایک   پروگرام منعقد کیا گیا جس میں اس بات کی اطلاع دی گئی کہ.واٹ سعودی عربیہ میں جنوری 2018  سے شروع ہو رہا ہے . اور الحمدللہ جدہ میں کثیر تعداد میں تاجیر حضرات موجود ہیں ان کی ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے اور وقت سے پہلے واٹ کے بارے میں  معلومات فراہم کرنے کے لئےجد ہ جماعت نے  یہ قدم اٹھایا. اور ممبران نے اس کو سراہا.

پروگرام کا اغاز مولوی اسامہ ابن فضل الرحمن منیری کی تلاوت کلام پاک سے  ہوا. مہمانوں کا استقبال و پروگرام کے غرض و غائیت  پر  صدر جماعت جناب محمد یسین عسکری  نے روشنی ڈالی. اس جلسہ میں  بھٹکل سےتشریف فرما  مہمان بھٹکل جماعت المسلمین کے جنرل سکریٹری مولانا طلحہ رکن الدین صاحب  اور نائب صدر دوم جناب ایس جے ہاشم صاحب موجود تھے. مہمانو ں کا تعارف جلسے کی نظامت کر رہے جنرل سکریٹری جناب حبیب اللہ محتشم نے کیا.  مولانا نے اپنے وقفہ میں ممبران کے سامنے جماعت المسلمین کا تعارف پیش کیا اور اپنے جدہ دورہ کا مقصد بھی بیان کیا. مولانا نے جدہ جماعت کی خدمات اور تعاون کو سراہتے ہوئے جدہ جماعت کی تاریخ پر بنے  جریدہ کے بارے میں کہا کہ یہ گراں قدر جریدہ آنے  والی نسلوں کے لئے بے حد کارآمد و مددگار ثابت ہوگا۔

 بعد ازاں جدہ جماعت کے سرپرست جناب زاہد رکن الدین جو سنئیر چارٹرڈ اکائونٹنٹ ہیں ، نے  نہایت ہی تفصیل کے ساتھ سعودی قانونی نقطہ نظر سے ویاٹ قانون کے بارے میں اہم  معلومات فراہم کی اور ممبران کے سوالات کا بھی تسلی بخش  جواب دیا. جس سے ممبران کو کافی معلومات حاصل ہوئی اور واٹ کے تعلق سے اُن کے اندر پائے جانے والے خدشات دور ہوئے۔

جناب زاہد صاحب کی جانب سے پیش کئے گئے بہترین پرزینٹیشن  کو دیکھتے ہوئے اُن خدمت میں  کیر یر گائڈنس کمیٹی کی جانب سے ایک اعزازی میمینٹو صدر جماعت جناب محمد یسین عسکری کے ہاتھوں پیش کیا گیا. پروگرام کے آخر میں جدہ جماعت کے سابق جنرل سکریٹری جناب عبیداللہ عسکری نے ممبران کا اور پروگرام کے منتظمین سمیت  منکی جماعت اور مرڈیشور جماعت کے ممبران کا اور بھٹکل سے تشریف فرما مہمان مولانا طلحہ رکن الدین اور ایس جے ہاشم  کا تہہ دل سے  شکریہ ادا کیا ۔

مولانا عبدالمطلب ڈی ایف کی دعائیہ کلمات کے ساتھ پروگرام اختتام پذیر ہوا۔

ایک نظر اس پر بھی

مسجد الحرام میں غیر ملکی شخص کی خودکشی

سعودی عرب کے شہر مکہ میں اسلام کے مقدس ترین مقام مسجد الحرام میں ایک شخص نے خود کشی کر لی ہے۔سعودی عرب کی سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے مکہ پولیس کے ترجمان کے حوالے سے بتایا ہے کہ غیر ملکی شہری نے جمعہ کی رات نو بج کر 20 منٹ پر مسجد الحرام کی چھت سے نیچے طواف کرنے کی جگہ پر ...

مسجد نبوی میں سکیورٹی اہلکاروں کی خدمات پر ایک نظر

مسجد نبوی میں آنے والے زائرین کی نظروں میں سعودی سکیورٹی اہل کار نمایاں ترین حیثیت کے حامل نظر آتے ہیں۔ یہ اہل کار مسجد کے تمام حصوں اور راستوں میں خدمات انجام دیتے ہوئے عبادت کے لئے پْرسکون ماحول یقینی بنانے میں مصروف عمل ہوتے ہیں۔

مکہ المکرمہ :ماہ رمضان کے آخری عشرہ میں سکیورٹی انتظامات 70؍لاکھ فرزندان توحید نے عمرہ اداکیا

سعودی حکومت نے رمضان المبارک کے تیسرے عشرہ کے آغاز پر مکہ المکرمہ کے داخلی اور خارجی راستوں پر سخت حفاظتی اقدامات کیے ہیں، مسجد الحرام اور اطراف کے علاقوں میں فضائی سکیورٹی اور نگرانی بڑھا دی گئی ہے۔

جموں  کشمیر میں محبوبہ سرکار گرنے کے بعد   ڈی جی پی نے  کہا، آتنگ کے خلاف اب تیز ہونگے آپریشن؛ گورنر رول میں کام کرنا ہوگا آسان

جموں کشمیر میں محبوبہ سرکار گرنے کے بعد بدھ کو گورنر این بوہرانے ریاست کی کمان سنبھال لی ہے کشمیر میں اس کے ساتھ ہی  انتظامی  ہلچل تیز  ہوگئی ہے ۔

اُڈپی میں بائک کو ٹکر دے کر فرار ہونے والے ٹمپو ڈرائیور پرچار سال بعد عدالت نے عائد کیا 2500 روپیہ جرمانہ

اُڈپی چیفسیویل جج اینڈ چیف میجسٹریٹ  فرسٹ کلاس عدالت نے  ایک ٹمپو ڈرائیور پر بائک کو  ٹکر دے کر فرار ہونے کے جرم میں 2500 روپیہ جرمانہ عائد کیا ہے اور رقم نہ بھرنے کی صورت میں اُسے چھ ماہ کی جیل کی سزا سنائی ہے۔

پی یو سی سالِ دوم سائنس طلباء کے لیے مفت کوچنگ

ڈسٹرکٹ کوآرڈینیٹر اے سی سی پی ایل آرگنائزیشن بیدر کے پریس نوٹ کے بموجب بیدر ضلع کے مسلم طلباء جو پی یو سی سالِ دوم سائنس طلباء کو جولائی 2018ء تا جنوری2019تک اے سی سی پی ایل کی جانب سے مفت کوچنگ دی جائے گی۔

جاپان میں.1 6 شدت کا زلزلہ، تین افراد ہلاک

اوساکا اور اس کے گرد و نواح کا شمار جاپان کے اہم ترین صنعتی مراکز میں ہوتا ہے اور زلزلے کے بعد علاقے میں واقع بیشتر کارخانوں میں کام بند کردیا گیا ہے۔جاپان کے دوسرے بڑے شہر اوساکا میں آنے والے 6.1شدت کے زلزلے سے اب تک تین افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔