بھٹکل کی معروف شخصیت اور خلیفہ جماعت کے صدر میراں صدیق انتقال کرگئے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th May 2021, 7:07 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 14/مئی (ایس او نیوز) بھٹکل کی معروف شخصیت اور مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے صدر جناب محمد  میراں صدیق (المعروف ھندا میراں بھاو) جمعرات شب قریب گیارہ بجے مینگلور اسپتال میں انتقال کرگئے۔ انا للہ و انا الیہ راجعون

75 سالہ میراں صاحب کو جب سانس لینے میں تکلیف محسوس ہوئی تو انہیں  یکم مئی کو مینگلور اسپتال لےجایا گیا تھا،  13 مئی  جمعرات کی شب یعنی عید الفطر کی شب قریب گیارہ بجےوہ اپنے خالق حقیقی  کی آواز پر لبیک کہہ گئے۔ آپ کے پسماندگان میں اہلیہ چھ فرزند اور دو دختر ہیں۔ 

فجر کی اذان کے  وقت میت مینگلور سے بھٹکل ان کی رہائش گاہ بندر روڈ سکینڈ کراس پہنچی اور جمعہ صبح نو بجے خلیفہ جامع مسجد میں  نمازہ جنازہ کی ادائیگی کے بعد پرانے قبرستان میں تدفین عمل میں آئی۔

بھٹکل کے عظیم سپوت اور مخلص قائد اسماعیل حسن صدیق ( آئی ایچ صدیق) کے نواسے اور قوم کے ایک اور مخلص خادم اور اپنے وقت کے معروف تاجر ابوالحسن وڑاپا کے فرزند محمد میراں صدیق مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل، قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل، قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامی مسلمین بھٹکل سمیت جامعہ اسلامیہ  بھٹکل کے بھی طویل عرصہ تک رکن انتظامیہ تھے۔ مرحوم تنظیم  کامپلیکس کمیٹی کے بھی ممبر تھے اور بقول تنظیم صدر جناب ایس ایم پرویز، نوائط کالونی میں اس وقت تنظیم کا جو کامپلیکس تعمیر ہورہا ہے، اس کےلئے سرمایہ جمع کرنے میں بھی مرحوم کا  اہم رول  ہے۔ مرحوم میراں صاحب  تنظیم کے ساتھ ساتھ دیگر قومی اداروں کےلئے بھی سرمائے کے ذریعہ تقویت اور استحکام پہنچانے میں بھی پیش پیش  رہتے تھے اسی طرح تنظیم کے  وفد کو جہاں بھی جانا ہوتا تو  وہ اکثر وفد میں شریک ہوتے تھے اور اپنی بات مضبوطی کے ساتھ رکھتے تھے،  مرحوم کا تنظیم کے ساتھ ایسا مضبوط تعلق تھا کہ تقریبا ہرروز وہ تنظیم دفتر پہنچ کر خبرگیری کیا کرتے تھے ۔ 

آپ کی ابتدائی تعلیم بھٹکل کے قدیم نظام کے مطابق  گھریلو مکاتب میں ہوئی  پھر کلکتہ میں آپ نے میٹرک پاس کیا، یہیں پر آپ کے والد کی کپڑوں کی موڈرن اسٹور کافی معروف اور مشہور تھی، آج بھی یہ کاروبار کلکتہ میں جاری ہے جہاں مرحوم میراں صاحب کے فرزندان  اسے اچھے طریقے سے سنبھال رہے ہیں۔

ذرائع کی مانیں تو  ۱۹۶۸ء میں  مرحوم میراں صاحب  متحدہ عرب امارات کے شہر  ابوظبی منتقل ہوئے تھے۔ ۱۹۷۴ ء میں مرحوم بہاء الدین باشا قمری کی شراکت میں دبئی  میں  کپڑوں کا ہول سیل کاروبار شروع کیا۔ یہ کاروباری شراکت تقریبا ۲۵ سال تک رہی۔ اس دوران آپ نے دبئی میں  جماعت کی تاسیس میں حصہ لیا، اور قوم کے اداروں کی ترقی فلاح وبہبود کے لئے اپنا وقت اور صلاحتیں نچھاور کیں۔ اس زمانے میں الراس میں نوائط کالونی کے نام سے مشہور الراس بلڈنگ میں آپ کی رہائش گاہ ، سماجی سرگرمیوں کا ایک مرکز بن گئی، جہاں پر وطن سے آنے والے  قوم کی خدمت کرنے والے معززین شہر کی مہمان نوازی ایک طویل عرصے تک کی گئی۔ اس میں آپ کے پارٹنر باشا قمری کی بھی رفاقت رہی، اسی کمرے میں کے یم ٹریڈنگ جیسی مشہور تجارتی کمپنیوں کے مالکان بھی اپنی تجارتی زندگی کے آغاز میں آکر ٹہرتے تھے۔ مرحوم میراں صاحب یہاں کی بھٹکل جماعت کے آغاز سے رکن رہے، ۱۹۸۰ء میں جب جماعت کی نشاۃ  ثانیہ ہوئی تو مرحوم نے اس میں بھر پور حصہ لیا۔ جماعت کا دستور،تین رابطہ ڈائرکٹریاں، بچت اسکیم ، مرکزی اداروں کے خیر سگالی وفود، بین الجماعتی کانفرنس، بھٹکل مسلم خلیج کونسل کا قیام، رابطہ آفس کا قیام، سالانہ عید ملن ،پرسنلیٹی ایوارڈ، سیف بچت اسکیم، تعلیمی سیمینار، اسکالر شپ اسکیم وغیرہ بہت سارے پروجکٹ اسی زمانے کی یاد گار ہیں۔ ان سب سرگرمیوں میں وہ شانہ بہ شانہ ساتھ تھے۔ قریب 1992 میں  گلف سے واپس بھٹکل لوٹنے کے بعد مرحوم  میراں  صاحب آخری آدمی تھے، جو آخری وقت تک  رابطہ آفس سے مربوط رہے اور  مقامی طور پر اس کی ترقی کے لئے سرگرداں رہتے ہوئے اپنی مستقل حاضری درج کرائی۔ بتایا گیا ہے کہ مرحوم جب دبئی میں تھے  تو اُس وقت ایک  طرف دبئی جماعت اور گلف کونسل میں متحرک  تھے تو دوسری طرف  اکثر و بیشتر  وہ بھٹکل بھی آجایا کرتے تھے اور بھٹکل کے اداروں کی  ترقی کےلئے مسلسل  کوشاں رہتے تھے۔

انجمن کے صدر جناب مزمل قاضیا نے بتایا کہ  میراں صاحب ایک ایسے مخلص انسان تھے کہ آخری وقت میں بھی انجمن، تنظیم اور جامعہ وغیرہ کی وصولی کےلئے  پیش پیش  تھے مرحوم قومی  اداروں کے ساتھ اس خلوصیت کے ساتھ اور خاموشی کے ساتھ کام کرتے تھے کہ   ایسے خدمت گذار انسان آج کے دور میں  ملنا مشکل ہے۔ان کو  کسی بھی ادارہ کے لئے رات بارہ بجے بھی بلائیں گے تو ہمیشہ حاضر رہتے تھے۔ مرحوم 45 سال سے بھی زائد عرصہ سے  انجمن کے رکن انتظامیہ میں شامل تھے جبکہ 1991 سے وہ انجمن کے سرپرست تھے۔

جناب میراں صاحب کے انتقال پر  بھٹکل کےاکثر اداروں کے ذمہ داران نے  اسے قوم کا عظیم خسارہ قرار دیا ہے اور ان کے حق میں مغفرت کی دعا ئیں کی ہیں ، اللہ رب العزت ان کی خدمات کو قبول فرمائے ، جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے اور تمام پسماندگان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔ اٰمین

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل جالی میں انڈر گراونڈ ڈرینیج کا مسئلہ؛ ممکنہ کنووں کو خراب کرنے والے چمبرس کی درستگی کے بعد ہی کام کو بڑھایا جائے گا آگے؛ ایک ہفتہ کے اندر سڑکوں کی مرمت کی یقین دھانی

بھٹکل کے جالی پٹن پنچایت حدود میں  تعمیر کئے جارہے  انڈر گراونڈ ڈرینیج (یو جی  ڈی)  کا مسئلہ بارش کے بعد مزید پیچیدہ ہونے کے بعد  گذشتہ روز  جالی پنچایت آفس میں  واٹر بورڈ انجینر سمیت  بھٹکل انڈر گراونڈ ڈرینیج کے کام کرنے والے کنٹریکٹر کے  ساتھ میٹنگ کا انعقاد کیا گیا تھا جس ...

کورونا کی تیسری لہر کو لے کر ریاستی ماہرین کمیٹی نے ریاستی حکومت کو سونپی سفارشی رپورٹ : وائرس شدت اختیار کرنےپر 3لاکھ بچے متاثر ہونے کا خدشہ

اگلے 6سے 8ہفتوں میں ملک میں کورونا کی تیسری لہر شروع ہونےکے متعلق ماہرین نےمتنبہ کیا تو ریاستی  حکومت نے ڈاکٹر دیوی شٹی کی قیادت میں کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ بتائیں کہ  تیسری لہر کو روکنے کے لئے کیا کیا اقدامات کریں۔ ڈاکٹر دیوی شٹی کی قیادت والی ماہرین کی کمیٹی نے ...

منگلورو : کلاک ٹاور کے پاس پولیس کی اچانک چیکنگ ۔ غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گاڑیاں دوڑانے والوں کے خلاف کی گئی کارروائی

دو دن پہلے شہر میں لاک ڈاون کے اوقات میں کمی کرنے کے بعد سڑکوں پر موٹر گاڑیوں کا ہجوم لگ گیا تھا۔ اس پر قابو پانے کے لئے پولیس کے افسران نے کلاک ٹاور کے پاس اچانک چیکنگ شروع کردی اور غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گاڑیاں دوڑانے والوں کے خلاف معاملات درج کرلیے۔

اترکنڑا میں 77373افراد کو کووڈکا دوسرا ٹیکہ دیا جاچکا ہے: صحت عامہ کی رپورٹ

اترکنڑا میں ابھی تک 77173لوگوں کو کووڈکا ٹیکہ لگایاجاچکاہے۔ منگل کی شام 7بجے تک ملی رپورٹ کے مطابق 1590ڈوز باقی ہیں۔ جس میں کووی شیلڈ 740اورکو ویکسن 850ڈوز ٹیکوں کا ذخیرہ موجود ہے۔ اس بات جانکاری  ڈسٹرکٹ  آر سی ایچ افسر ڈاکٹر رمیش راؤ نے دی۔

جناب ایس ایم سید محی الدین مارکیٹ صاحب مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے نئے صدر منتخب

مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل  کے نائب صدرجناب ایس ایم سید محی الدین مارکیٹ صاحب اب مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے  صدر منتخب ہوئے ہیں۔ پیر کو جماعت کے دفتر میں منعقدہ انتظامیہ میٹنگ میں  انہیں اس عہدہ کےلئے بالاتفاق رائے منتخب کیا گیا۔ یاد رہے کہ خلیفہ جماعت ...

کاروار میں کووڈ ٹیکہ مہم کا افتتاحی پروگرام : ہر ایک ٹیکہ لگوائیں اور اپنی جان کی حفاظت کریں : روپالی نائک

کورونا پر قابو پانے کے لئے حکومتیں کام کررہی ہیں، ملک بھر میں 21جون سے شروع ہوئے مفت کووڈ ٹیکہ مہم میں ہرایک ٹیکہ لگاتے ہوئے اپنی جان کی حفاظت کا سامان کرنے کی رکن اسمبلی روپالی نائک نے عوام سے اپیل کی۔

بھٹکل میں پیر سے سڑک پر اتریں 18سرکاری بسیں :دیہی علاقوں میں بسوں کی آمدورفت فی الحال نہیں

کورونا لاک ڈاؤن میں ڈھیل دئیے جانے کے بعد آخر کار بھٹکل بس اسٹانڈ سے سرکاری بسیں باہر نکلیں ۔بھٹکل سے کاروار، کمٹہ ، سرسی کےلئے بسیں شروع کی گئی ہیں۔  چونکہ پڑوس اضلاع اُڈپی ، دکشن کنڑا، دھارواڑ وغیرہ میں کورونا کی ہراسانی جاری رہنے سے بین الاضلاع بسوں کی شروعات نہیں ہوئی ہے۔

بھٹکل میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری؛ چھ مکانوں کو نقصان؛ بعض راستوں کی حالت بد سے بدترہونے پر عوام سخت پریشان

بھٹکل سمیت ساحلی علاقوں اور ملناڈ وغیرہ  میں گذشتہ ایک ہفتہ سے  موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے، بھٹکل میں ویسے تو  تھوڑے تھوڑے وقفے کے بعد  زوردار بارش ہورہی ہے تو وہیں  ملناڈ اور پڑوسی   علاقوں میں زبردست بارش ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں جس کے نتیجے میں ہوناور  کے ...

کیا اکتوبر تک کورونا کی مزید ایک لہر ملک کو دہلائے گی ؟ کیا کہتے ہیں ماہرین

کورونا وائرس کی دوسری لہر نے جس طرح سے ملک میں تباہی مچائی ہے ، اس کے بعد مسلسل تیسری لہر کو لے کر اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ سرکار کے چیف سائنٹفک ایڈوائزر واضح طور پر کہہ چکے ہیں کہ تیسری لہر ضرور آئے گی ، لیکن اس بات پر ابھی ریسرچ جاری ہے کہ تیسری لہر کتنی خطرناک ہوگی ۔ اب نیوز ...

آصف، دیوانگنا، نتاشا ضمانت معاملہ: دہلی پولیس کی اپیل پر سپریم کورٹ میں سماعت، تینوں سماجی کارکنان کو نوٹس جاری

 شمال مشرقی دہلی فسادات کے تین ملزمان آصف اقبال تنہا، دیوانگنا کالیتا اور نتاشا نارووال کی ضمانت پر رہائی کے خلاف آج دہلی پولیس کی عرضی پر سپریم کورت میں سماعت ہوئی۔ سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف پولیس کی اپیل پر رہا ہونے والے تینوں کارکنان کو نوٹس جاری کئے ہیں۔

عوام اپنا پیٹ کاٹ رہی ہے اور مودی حکومت عوام کی جیب: پرینکا گاندھی

ہندوستان کی عوام پر مہنگائی کی مار جاری ہے۔ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے مہنگائی کو لے کر مودی حکومت کو ایک بار پھر تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ عوام اپنا پیٹ کاٹ رہی ہے اور مودی حکومت عوام کی جیب کاٹ رہی ہے۔