کے ایل راہل کا تاریخی کارنامہ، لگاتار 3 آئی پی ایل سیزن میں بنائے 500 سے زائد رن

Source: S.O. News Service | Published on 19th October 2020, 10:14 PM | اسپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

دبئی،19؍اکتوبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) کنگز الیون پنجاب کے کپتان لوکیش راہل پہلے ایسے ہندوستانی کھلاڑی بن گئے ہیں جنہوں نے مسلسل تین آئی پی ایل میں 500 سے زیادہ رنز بنانے کا انوکھا کارنامہ انجام دیا ہے۔ راہل نے اتوار کے روز ممبئی انڈینز کے خلاف اپنی 77 رنز کی اننگز کے ساتھ یہ کارنامہ انجام دیا۔ اس سے قبل راہل نے 2018 کے سیزن میں 14 میچوں میں 54.91 کی اوسط سے 659 رنز بنائے تھے۔ علاوہ ازیں انہوں نے 2019 کے سیزن میں 14 میچوں میں 53.90 کی اوسط سے 593 رنز بنائے تھے۔ راہل نے 2020 سیزن کے نو میچوں میں 75.00 کی اوسط سے 525 رنز بنائے ہیں۔ وہ پہلے ہندوستانی کھلاڑی ہیں جس نے لگاتار تین آئی پی ایل میں 500 سے زیادہ رنز بنائے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ کرکٹ لیجنڈ سچن تندولکر، موجودہ ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی اور سریش رینا نے لگاتار دو سیزن میں 500 سے زیادہ رنز بنائے تھے۔ وراٹ اور رینا نے آئی پی ایل کے تین سیزن میں 500 سے زیادہ رنز بنائے ہیں اور اس معاملے میں راہل اب ان کی برابری پر پہنچ گئے ہیں۔ لیکن راہل واحد ہندوستانی بلے باز ہیں جنہوں نے لگاتار تین سیزن میں 500 سے زیادہ رنز بنائے ہیں۔

راہل نے رواں سیزن میں پانچ نصف سنچری اسکور کی ہیں اور وہ آئی پی ایل میں 2500 رنز بھی مکمل کر چکے ہیں۔ وہ یہ کارنامہ انجام دینے والے 23 ویں کھلاڑی اور 17 ویں ہندوستانی کھلاڑی بن گئے۔ آسٹریلیا کے ڈیوڈ وارنر کے پاس آئی پی ایل کی تاریخ کے چار سیزن میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ ہے، جبکہ ڈیوڈ وارنر اور کرس گیل غیر ملکی کھلاڑی ہیں جنہوں نے لگاتار تین سیزن میں 500 سے زیادہ رنز بنائے ہیں۔

وارنر نے 2016 میں 848 رنز، 2019 میں 692 رنز، 2017 میں 641 رنز اور 2015 میں 562 رنز بنائے تھے۔ گیل نے 2013 میں 708 رنز، 2012 میں 733 رنز اور 2011 میں 608 رنز بنائے تھے۔ وارنر اور گیل دو غیر ملکی کھلاڑی ہیں جنہوں نے لگاتار تین سیزن میں 500 یا اس سے زیادہ رنز بنائے ہیں۔

سچن نے 2010 کے سیزن میں 15 میچوں میں 618 اور 2011 کے سیزن میں 16 میچوں میں 553 رنز بنائے تھے۔ سن 2016 میں وراٹ نے 16 میچوں میں 973 رنز بنائے تھے جو ایک آئی پی ایل میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ ہے۔ انہوں نے 2015 میں 16 میچوں میں 505 رنز بنائے تھے۔ وراٹ نے 2013 کے سیزن میں 16 میچوں میں 634 رنز بنائے تھے۔ رینا نے 2013 کے سیزن میں 18 میچوں میں 548 رنز ، 2014 کے سیزن میں 16 میچوں میں 523 رنز اور 2010 کے سیزن میں 16 میچوں میں 520 رنز بنائے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

تمل ناڈو نے تیسری بار سیدمشتاق علی ٹرافی کا خطاب جیتا

دھماکہ خیز بلے باز شاہ رخ خان کی 15 گیندوں پر 33 رن کی زبردست اننگ کی بدولت تمل ناڈو نے یہاں پیر کو دہلی کے ارون جیٹلی اسٹیڈیم میں فائنل مقابلے میں کرناٹک کو چار وکٹ سے شکست دے کر تیسری بار سید مشتاق علی ٹرافی کاخطاب جیت لیا۔

ہندوستان کا کلین سویپ، نیوزی لینڈ کو 3-0 سے دی شکست

کپتان روہت شرما (56) کی شاندار نصف سنچری ، لیفٹ آرم اسپنر اکشر پٹیل (9 رن پر 3 وکٹ ) اور آل راؤنڈر ہرشل پٹیل (18 اور 26 رن پر دو وکٹ) کی بدولت ہندوستان نے نیوزی لینڈ کو تیسرے اور آخری ٹی ٹوئنٹی میں اتوار کو 73 رن سے ہراکر تین میچوں کی سیریز میں 3-0 سے کلین سویپ کر لیا۔

بزدل مودی حکومت کسی کے ساتھ انصاف نہیں کر سکتی: راہل گاندھی

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے ایوان بالا راجیہ سبھا کے 12 ارکان کی معطلی کے خلاف جمعرات کو پارلیمنٹ کے کیمپس میں مسلسل تیسرے دن بھی دھرنا دیا اور کہا کہ مودی حکومت بزدل ہے۔ اس لیے وہ کسی کے ساتھ انصاف نہیں کر سکتی۔

گجرات کے ساحل پر تیز ہوا اور طوفانی لہریں، کشتیاں الٹ گئیں، 10 افراد لاپتہ

  گجرات کے سمندری ساحلی علاقہ کے ضلع گر سومناتھ کے نوا بندر کے قریب خراب موسم کے درمیان اچانک تیز ہوا اور طوفانی لہروں کی وجہ سے سمندر میں ایک درجن سے زیادہ کشتیاں الٹ گئیں، جن میں سوار 10 سے زیادہ افراد کے ڈوبنے کا اندیشہ ہے۔

بھیما-کوریگاؤں معاملہ: سماجی کارکن سدھا بھاردواج کو بامبے ہائی کورٹ نے دی ضمانت

بامبے ہائی کورٹ نے بدھ کے روز وکیل اور سماجی کارکن سدھا بھاردواج کو بڑی راحت دی۔ عدالت نے 2018 بھیما-کوریگاؤں اور ایلگر پریشد نسلی تشدد معاملے میں ملزم سدھا بھاردواج کو ضمانت دے دی ہے۔ عدالت نے ہدایت دی ہے کہ بھاردواج کو ضمانت کی شرطوں کو آخری شکل دینے کے لیے آئندہ بدھ کو ...

کورونا بحران: ایک سال کے اندر 11716 کاروباریوں کی خودکشی

  مرکزی حکومت نے منگل کے روز پارلیمنٹ میں اطلاع دی کہ 2020 میں 11716 کاروباریوں نے خودکشی کر لی۔ یہ تعداد 2019 کے مقابلہ 29 فیصد زیادہ ہے۔ ’آج تک‘ کی رپورٹ کے مطابق اس بات کے مکمل ثبوت ہیں کہ 2020 یعنی کورونا بحران کے دوران کاروباریوں نے شعبہ زراعت سے وابستہ لوگوں سے زیادہ معاشی تناؤ ...