آسٹریلیا کے اسٹار گیندبازکین رچرڈسن پر ’کورونا وائرس‘ کا خطرہ، ٹیم سے باہر

Source: S.O. News Service | Published on 13th March 2020, 6:17 PM | اسپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

میلبورن،13؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس کا قہر پوری دنیا میں جاری ہے اور اب کرکٹ کھلاڑی بھی اس کی زد میں آنے لگے ہیں۔ اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ آسٹریلیائی تیز گیندباز کین رچرڈسن کو اس خطرناک وائرس نے اپنی زد میں لے لیا ہے۔ اس اندیشہ کے بعد رچرڈسن نیوزی لینڈ کے خلاف ہونے والے میچ سے باہر کر دیے گئے ہیں۔ قابل غور بات یہ ہے کہ رچرڈسن اس سال آئی پی ایل میں وراٹ کوہلی کی قیادت والی رائل چیلنجر بنگلور کی طرف سے کھیلنے والے تھے۔

میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق جنوبی افریقہ دورہ کے بعد سے ہی کین رچرڈسن کی طبیعت ناساز تھی اور ان کو گلے میں درد کی شکایت تھی۔ اس کے بعد انھیں نیوزی لینڈ کے خلاف تین میچوں کی یک روزہ سیریز کے پہلے میچ سے باہر کر دیا گیا۔ رچرڈسن کو فی الحال ٹیم کے باقی کھلاڑیوں سے علیحدہ رکھا گیا ہے۔ کرکٹ آسٹریلیا کا کہنا ہے کہ ہمارا میڈیکل اسٹاف ان کا علاج کر رہا ہے اور ضروری اقدامات کیے جا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ہالی ووڈ ایکٹر ٹام ہینکس اور ان کی بیوی ریٹا ولسن بھی آسٹریلیا میں کورونا وائرس کے ٹیسٹ میں پازیٹو پائے گئے تھے۔ اس کی جانکاری انھوں نے ٹوئٹر پر دی تھی۔ ٹام نے لکھا تھا ’’میں اور ریٹا آسٹریلیا میں ہیں۔ ہمیں تھوڑی تھکان محسوس ہوئی۔ تھوڑی سردی بھی لگی ساتھ ہی جسم میں درد بھی تھا۔ ریٹا کو ٹھنڈ بھی لگ گئی اور بخار بھی تھا۔ سب کچھ ٹھیک کرنے کے لیے ہم نے ٹیسٹ کرایا، جیسا کہ ابھی دنیا میں ہو رہا ہے۔ ہم نے کورونا وائرس کے لیے اپنا ٹیسٹ کرایا اور ہم اس میں پازیٹو پائے گئے۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

آئرلینڈ نے عالمی چیمپئن انگلینڈ کو سیریز کے تیسرے اور آخری یک روزہ میچ میں 7 وکٹوں سے شکست دی

  کپتان اینڈی بال برنی (113) اور افتتاحی بلے باز پال اسٹارلنگ (142) کی شاندار سنچریوں کی بدولت آئرلینڈ نے عالمی چیمپئن انگلینڈ کو سیریز کے تیسرے اور آخری یک روزہ میچ میں سات وکٹوں سے ہراکر زبردست کامیابی حاصل کی ہے۔

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...