پلوامہ حملے میں چالیس سے زائد جوانوں کو شہید کرنے والے جیش محمد کے چیف کو ہندوستان کی جیل سے کس نے آزاد کرایا تھا ؟ ہاویری میں راہول کا مودی سے سوال

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th March 2019, 3:23 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بھٹکل 9/مارچ (ایس او نیوز)  ریاست کرناٹک کے ہاویری میں کانگریس صدر راہول گاندھی نے بی جے پی سرکار پر راست حملہ کرتے ہوئے  مودی کو چور قرار دیا۔  انہوں نے وزیراعظم مودی کو  مخاطب کرتے ہوئے سوال کیا کہ حال ہی میں جموں و کشمیر کے پلوامہ میں جو دہشت گردانہ حملہ ہوا تھااور جس  میں ہمارے چالیس سے زائد سی آر پی ایف کے جوان شہید ہوئے تھے،  ان کو کس نے مارا تھا؟  راہول نے پھر پوچھا کہ  جیش محمد کے چیف کا نام کیا ہے ؟ کیا جیش محمد کے چیف مسعود اظہر کو ہندوستانی جیل سے  بذریعہ کندھار  آپ کی سرکار نے نہیں چھڑایا  تھا ؟  مودی جی مجھے سمجھائے کہ  مسعود اظہر کو  پاکستان کے حوالے کس نے کیا تھا ؟ آپ دیش کے عوام کو بتائیں  کہ مسعود اظہر کو کس نے پکڑا تھا اور اُس کو چھڑا کر لے جانے والے لوگ کون تھے ؟

ملک کے وزیراعظم نریندر مودی پر زبردست وار کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کہا کہ  ہم کانگریسی آپ کی طرح  دہشت گردی کے آگے جھکنے والے نہیں ہیں۔ہمارے جن جوانوں کو شہید کرایا گیا، اُن  دہشت گردوں کو آپ کی سرکار نے  کندھار ائرپورٹ لے جاکر چھوڑا تھا۔ 

راہول گاندھی نے  کہا کہ  گذشتہ لوک سبھا انتخابات کے موقع پر جب مودی خطاب کرنے آتے تھے تو  مودی صاحب جیسے ہی یہ کہتے تھے کہ  "اچھے دن۔۔۔۔" تو عوام جواب دیتی تھی کہ "۔۔۔ آنے والے ہیں"۔ مگر اب  پانچ سال کی سرکار چلانے کے بعد اگر کوئی عوام کے سامنے کہے کہ" چوکیدار....." تو سامنے سے جواب آتا ہے کہ " چور ہے "

راہول گاندھی نے مودی پر عوام کا پیسہ چرانے کا  الزام لگاتے ہوئے کہا  کہ مودی  عوام کی چوکیداری نہیں کررہے ہیں بلکہ  انل امبانی، ادانی،  میہول چوکسی، للت مودی جیسے پندرہ لوگوں کے چوکیدار بنے ہوئے  ہیں۔ راہول نے مودی کو للکارتے ہوئے کہا کہ  ا ٓپ دیش کو بتائیں کہ آپ نے رافیل ڈیل پر انل امبانی کو تیس ہزار کروڑ روپئے دیے یا نہیں دئے ؟ آپ نے 526 کروڑ کا  جہاز1600 کروڑ روپیوں میں  خریدا یا نہیں؟ آپ ائرفورس کے پائیلٹ کو بتائیں کہ آپ نے  ائرفورس کا پیسہ لے کر انل امبانی کو کیوں دیا ؟

راہول گاندھی نے مودی سے یہ بھی کہا کہ آپ ملک کے نوجوانوں کو سمجھائیں  کہ پانچ سال سے آپ  ایک کے بعد ایک  بھاشن دے رہے ہیں ،  لیکن ابھی تک نوجوانوں کو روزگار کیوں نہیں دے پائے۔ راہول گاندھی نے کہا کہ مودی جی نے چھوٹے دکانداروں کو ختم کردیا سال میں دو کرروڑ نوجوانوں کو روزگارہ دینے کا وعدہ کیا، لیکن  اب ملک کا حال یہ ہے کہ  اتنی زیادہ بے روزگاری بڑھ گئی کہ 45 سالوں کا ریکارڈ ٹو ٹ گیا، مودی کی حکومت میں بے روزگاری کی جو شرح بڑھی ہے، پہلے  ایسی بے روزگاری نہیں دیکھی گئی۔

راہول نے مودی کے  چین کے صدر کے ساتھ بات چیت کرنے کے دوران دوکھلام پر  چینی فوجیوں  کے ذریعے ہوئے حملہ پر بھی سوال اُٹھائے اور کہا کہ جب چینی فوج دوکلام پر قبضہ کررہی تھی، مودی جی چینی صدر کے ساتھ گجرات میں میٹنگ کررہے تھے۔ راہول نے کہا کہ  آج بھی دوکھلام پر چین نے قبضہ کررکھا ہے   اور مودی جی کچھ   نہیں کر پا رہے ہیں۔ 

راہول گاندھی نے کہا کہ ہماری سرکار نے جو وعدے کئے تھے، ہم نے پورے کئے، ہم نے اسمبلی انتخابات کے موقع پر وعدے کئے تھے کہ ہماری سرکار آتے ہی کسانوں کے قرضے معاف کریں گے، ہم نے  دو دنوں میں قرضہ معاف کردیا۔ 

راہول گاندھی نے اس بار لوک سبھا انتخابات میں کانگریس کو بھاری اکثریت سے جیت درج کرانے عوام سے اپیل کی اور کہا کہ مرکز میں اگر کانگریس سرکار آتی ہے تو ہر غریب شخص کو ہرماہ کم ازکم آمدنی  کا انتظام کرایا جائے گا۔ ہر غریب کے بینک کھاتے میں پیسے جمع کرائیں جائیں گے۔ راہول نے مزید کہا کہ اگر مودی انل امبانی، میہول چوکسی، للت مودی، ادانی ، وجئے مالیا جیسے لوگوں کو عوام کا ہزاروں کروڑ روپیہ  دے سکتے ہیں تو کانگریس سرکار غریب عوام کے کھاتے میں  ہرماہ کم ازکم آمدنی فراہم کرسکتی ہے۔

راہول گاندھی نے مزید کہا کہ نریندرمودی نے  عوام سے جھوٹے وعدے کئے اور عوام کو دھوکہ دیا۔ مگر کانگریس سرکار نے عوام سے جو بھی وعدئے کئے، ہمیشہ اُسے پورا کیا ہے۔ انہوں نے ہاویری سمیت ملک بھر کے عوام سے درخواست کی کہ اس بار  اُنہیں  مرکزمیں اقتدار کا موقع دے کر آزمائیں ۔

پروگرام میں کرناٹک کے سابق وزیراعلیٰ سدرامیا نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ مودی نے کہا تھا کہ اچھے دن آنے والے ہیں، لیکن جب عوام نے اُنہیں اقتدار سونپا تو ملک میں صرف امبانی ، ادانی اور ان جیسے چند سرمایہ کاروں کے ہی اچھے دن آئے۔ انہوں نے نعرہ دیا کہ  ملک سے کانگریس کو جیت دلاو اور مودی کو ہٹاو۔

ایک نظر اس پر بھی

شہر بھر میں پانی سپلائی کرنے پر مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین نے کی بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کی خوب پذیرائی؛ اللہ کی مخلوق کو فائدہ پہونچانے والے لوگ ہی اللہ کو سب سے زیادہ محبوب ترین؛ مقررین کا اظہار خیا

شدت کی گرمی  اور روزہ کی حالت میں بھی شہر کے مختلف علاقوں میں پانی سپلائی کرنے  پر بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کے ذمہ داروں  کی زبردست پذیرائی اور ستائش کرتے ہوئے  آج جمعرات شام کو یہاں  مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین کی طرف سے   خصوصی اجلاس کا انعقاد کیا گیا اور فیڈریشن کے صدر ...

کاروار: ایس ایس ایل سی میں ناکام ہونے والوں کے لئے 21 جون سے ہوگا سپلیمنٹری امتحان

ایس ایس ایل سی میں ناکام ہونے والے طلبا و طالبات کے لئے مورخہ 21 جون سے 28 جون کے لئے سپلیمنٹری امتحانات منعقد کئے گئے ہیں  اور   متعینہ مدت میں  امتحانی مراکز کے 200 میٹر تک کے  دائرہ میں  امتناعی احکامات دفعہ 144 جاری کئے گئے ہیں، اس بات کی اطلاع اُترکنڑا کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش ...

کرناٹک سی ایم کا دعویٰ: جے ڈی ایس ممبر اسمبلی کو بی جے پی لیڈر نے دس کروڑکی پیش کش کی

رناٹک میں حکومت گرانے کے لیے ’آپریشن لوٹس‘ کا ڈر مخلوط حکومت کو دوبارہ ستانے لگا ہے۔وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بی جے پی پر ان کی پارٹی کے ایک رکن اسمبلی کو رشوت دینے کی کوشش کا الزام لگایا۔

روشن بیگ کے خلاف کانگریس کی کارروائی، پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل

کرناٹک کے سابق ریاستی وزیر آرروشن بیگ کے خلاف کانگریس نے کارروائی کی ہے۔ انہیں پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل کردیا گیا ہے۔ روشن بیگ نے کانگریس کے ریاستی لیڈروں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے تھے۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی سے منظوری ملنے کے بعد کرناٹک پردیش کانگریس ...

رہائشی علاقوں میں کاروباری سرگرمیوں پر روک لگانے میں بلدیہ ناکام

بنگلور شہر کے رہائشی علاقوں میں رہائشی عمارتوں کے اندر سے کاروباری سرگرمیوں پر قدغن لگانے کے سلسلہ میں بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) کی مہم مکمل طور پر ناکام رہی ہے اور پچھلے دو سالوں کے عرصہ میں بلدیہ کی طرف سے صرف پانچ فیصدی ایسے اداروں کو بند کیا گیا ہے-

یوپی میں ریپ-قتل کے واقعات پر پرینکا گاندھی نے گھیرا، آخر یوگی حکومت خواتین کے تحفظ کی ذمہ داری لینا کب شروع کرے گی؟

اتر پردیش میں قتل اور عصمت دری کے مختلف واقعات کا حوالہ دیتے ہوئے کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا نے جمعرات کو الزام لگایا کہ ریاست میں معصوموں پر درندگی ہو رہی ہے