کل منگل کو کیا جائے گا کرناٹکا میں بس کرایوں کی شرح میں اضافے کا فیصلہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th October 2018, 11:34 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو۔8؍اکتوبر(ایس او  نیوز) مسلسل ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کے سبب کے ایس آر ٹی سی اور بی ایم ٹی سی کو نقصانات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، لہٰذا محکمۂ ٹرانسپورٹ بس کے کرایوں کی شرحوں میں اضافے سے متعلق کل منگل کو حتمی فیصلہ کرنے والا ہے۔ پچھلے کئی ماہ سے ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہوتاجارہاہے۔ اور محکمۂ ٹرانسپورٹ بھاری نقصان اٹھارہاہے۔ اس کے باوجود وزیراعلیٰ کمار سوامی نے ٹکٹ کی شرحوں میں اضافہ نہ کرنے کی ہدایت دی ہے۔

ان کی ہدایت کے پیش نظر محکمۂ ٹرانسپورٹ نے ٹکٹ کی شرحوں میں اضافہ نہیں کیا ہے، لیکن لگتا ہے کہ اب بھاری نقصان کے پیش نظر دوسرا کوئی راستہ نہیں رہ گیا ہے۔ اس تعلق سے سرکاری سطح پر کل اجلاس منعقد کیا گیا ہے،جس میں حتمی فیصلہ کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ کے رہائشی دفتر کرشنا میں کمار سوامی کی صدارت میں محکمۂ ٹرانسپورٹ کی ترقیاتی رپورٹ کا جائزہ لیا جائے گا۔ اجلاس میں وزیر ٹرانسپورٹ ڈی سی تمننا اور کے ایس آر ٹی سی کے سینئر افسر بھی شرکت کریں گے۔ پچھلے تین ماہ قبل ٹکٹ کی شرحوں میں 25 فیصد اضافہ کئے جانے کی تجویز محکمۂ ٹرانسپورٹ نے حکومت کو پیش کی تھی۔ لیکن حکومت نے اس کو منظور نہیں کیا۔ پچھلے ستمبر میں محکمۂ ٹرانسپورٹ نے ستمبر کے دوران ٹکٹ کی شرحوں میں 18 فیصد اضافے کا سرکیولر جاری کیا تھا،تاہم وزیراعلیٰ نے پٹرول اور ڈیزل پر سیس کم کرکے اضافے کو روک دیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے سینئر لیڈر آر اشوک نے سدارامیا اور کمار سوامی سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا

وکھے درخت کے پتوں کی مانند جھڑرہے کانگریس اراکین اسمبلی کی آنکھوں میں اندھیراچھا گیا ہے۔ انہیں آگے کوئی راستہ نظر نہیں آرہا ہے۔ ریاست کے عوام نے مخلوط حکومت کی چڈی پھاڑدی ہے۔ اس قسم کی طنزیہ باتیں بی جے پی کے سینئر قائدآر اشوک نے کہیں۔

کرناٹک پبلک اسکولوں میں سرکاری اسکولوں کو ضم نہیں کیا جائے گا

سرکاری اسکولوں کو ضم کئے بغیر ہی کرناٹک پبلک اسکول چلانے کی تجویز محکمہ تعلیمات کے زیر غور ہے ۔ سرکاری نظام کے تحت ایک ہی پلاٹ فارم پر پہلی سے بارھویں جماعت تک کی تعلیم کی سہولت فراہم کرنے کے مقصد سے کرناٹک پبلک اسکولوں کا انعقاد 2018-19 سے ہی شروع ہوگیا تھا ۔

کمارسوامی نے وزیراعلیٰ کا عہدہ دیش پانڈے کو سونپنے کی رکھی تھی شرط ، کانگریس لیڈران رہ گئے دنگ؛ کماراسوامی کی قیادت پر ہی ظاہر کیا گیا اعتماد

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کی رسواکن شکست کے بعد کل وزیراعلیٰ کمار سوامی کی قیادت میں طلب کی گئی غیر رسمی کابینہ میٹنگ کے دوران وزیراعلیٰ کمار سوامی کی طرف سے استعفے کی پیش کش کے متعلق چند نئے انکشافات سامنے آئے ہیں۔

اسمرتی ایرانی کے قریبی سابق پردھان کا گولی مار کر قتل ، علاقہ میں کشیدگی

اترپردیش کے امیٹھی میں ہفتہ دیر رات اسمرتی ایرانی کے قریبی سابق پردھان کا گولی مار کر قتل کردیا گیا ۔ اطلاعات کے مطابق جامو تھانہ حلقہ کے برولیا گاوں کے سابق پردھان سریندر سنگھ کو نامعلوم بدمعاشوں نے گولی مار کر موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ بدمعاشوں نے واقعہ کو اس وقت انجام دیا جب ...

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...