کاروار: کیاضلع کانگریس میں کرسیوں سے چپکے ہوئے عہدیداروں کا دربارختم ہوگا؟

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 30th July 2018, 1:52 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار30؍جولائی (ایس او نیوز)ریاستی سطح پر کانگریس کے نئے صدر کے انتخاب کے ساتھ ہی ضلعی سطح پر بھی اس کی تنظیم نو کا سلسلہ چل پڑنے والا ہے ۔جس کی وجہ سے برسہا برس سے بلاک کانگریس اور دیگر عہدوں پر چپکے ہوئے عہدیداروں کو کرسیاں خالی کرنی پڑ سکتی ہیں۔

حقیقت یہ ہے کہ ضلعی سطح پر کانگریس پارٹی میں بلاک کانگریس کے عہدے پر 10سے13سال تک قبضہ جماکر بیٹھے ہوئے لوگ موجود ہیں۔ کچھ لوگ ان کرسیوں سے جیسے چپک کر رہ گئے ہیں۔اس سے پہلے جب بھی عہدیدار بدلنے کا موقع آتا ہے تو کسی نہ کسی وجہ سے تبدیلی ٹل جاتی تھی  اور وہی عہدیدار اپنے منصب پر برقرار رہتے آ رہے تھے۔اب ریاستی صدر کے بطور ڈاکٹر پرمیشورکی میعاد ختم ہوکر جب دنیش گنڈو راؤ نے یہ عہدہ سنبھالا ہے تو پھر ضلعی سطح پر بلاک کانگریس کے عہدیداروں میں تبدیلی ہونا یقینی نظر آتا ہے۔کیونکہ آئندہ چند مہینوں بعد پارلیمانی الیکشن کا سامنا کرنا ہے ۔ ایسے میں کانگریس پارٹی کو ٹھہرے ہوئے پانی کے تالاب کے بجائے موجیں مارتے ہوئے سمندر میں بدلنا ہوگا۔ اسی وجہ سے ہر سطح پر پارٹی کو متحرک اور فعال بنانے کی ضرورت محسوس کرتے ہوئے کے پی سی سی صدر نے تمام بلاک کانگریس صدور کو تبدیل کرکے ان کی جگہ پر نئے لیڈروں کو متعین کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔بتایاجاتا ہے کہ ملکی سطح پر راہل گاندھی نے کانگریس صدر کا عہدہ سنبھالنے کے بعد پارٹی میں تنظیمی طورپرنوجوانوں کو آگے لانے کاجو طریقہ اپنایا ہے ، وہی انداز ریاست میں ضلعی سطح پر بھی اپنایا جائے گا۔

لیکن اصل مسئلہ یہ ہے کہ پارٹی کے اندر باہمی اتفاق رائے سے یہ عہدے پُر نہیں کیے جاتے ہیں ، بلکہ علاقے کے بڑے سیاسی لیڈران کے قریبی لوگوں کے اثر ورسوخ کی بنیاد پر ان کے پسندیدہ فرد کوبلاک کانگریس صدر کے بطور نامزد کیا جاتا ہے۔ اگر ضلع شمالی کینرا کی بات کریں تو یہاں پر دو بڑے سیاسی لیڈروں کا اثر و رسوخ پارٹی کارکنان کو دو گروہوں میں بانٹے ہوئے ہے۔ ایک مارگریٹ آلوا کے زیر اثر گروہ ہے تو دوسرا گروہ آر وی دیشپانڈے سے قریبی تعلقات رکھنے والوں کا ہے۔ اب بلاک کانگریس کے عہدوں کو پُر کرتے وقت بھی یہی اثر و رسوخ اپنا رنگ دکھانے والا ہے۔مگر سمجھاجارہا ہے کہ دنیش گنڈو راؤ کے نئے منصوبے پر عمل در آمد کی وجہ سے برسہابرس سے بلاک کانگریس صدر کی کرسی پر چپکے ہوئے افراد کو اپنی جگہ خالی کرنی پڑے گی۔اور نئے چہروں سے کانگریس پارٹی میں نئی جان ڈالنے کی کوشش کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

مرڈیشور پالی ٹکنک طلبا کی طرف سے بم ناکارہ مشین کی نمائش

کورگ ضلع کے پونمپیٹ کے کورگ انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی میں منعقدہ سال 2019کے پراجکٹ ایگزیبشن  مقابلے میں مرڈیشور آر این ایس پالی ٹکنک کالج کے طلبا کی طرف سے پیش کردہ الکڑانک بم کو ناکارہ بنانے والی مشین کے متعلق ہر ایک نے تعاریفی کلمات کہے۔

بھٹکل روٹری کلب کا انڈور اسٹیڈیم بھی قومی شاہراہ کی نذر : یادداشت کے لئے 29مارچ سے شٹل بیڈمنٹن ٹورنامنٹ کا انعقاد

قومی شاہراہ توسیع کام کو لے کر کچھ ہی دنوں میں نکال باہر ہونے والے دوردرشن مرکز سے متصل روٹری کلب کے انڈور اسٹیڈیم میں 29مارچ سے تین دنوں تک شٹل بیڈمنٹن ٹورنامنٹ منعقد کئے جانے کی روٹری کلب کے سکریٹری شری نواس پڈیار نے جانکاری دی ۔

سداپور : 5مرتبہ ایم پی منتخب ہونے والے اننت کمار سے ضلع کو کوئی فائدہ نہیں : آزاد امیدوار کی حمایت کریں گے

آئندہ ہونے والے لوک سبھا انتخابات میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخاب لڑنےو الے وکیل جی ٹی نائک کی ہم لوگ حمایت کریں گے۔ کیونکہ وکیل جی ٹی نائک غریب، پسماندہ ، کسان اور مظلو م طبقات کے متعلق فکر رکھتے ہیں ۔ہیمنت نائک، ہریش نائک، ارون نائک نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے اعلان کیا ...

کانگریس کاچیلنج: مودی بتائیں کہ وہ ’نیائے‘ منصوبہ کے حق میں ہیں یا مخالف، بی جے پی گمراہی نہ پھیلائے،پالیسی کمیشن اب پالٹیکل کمیشن بن گیاہے

کانگریس نے ’کم از کم آمدنی منصوبہ بندی‘ کے تحت غریب خاندانوں کو سالانہ 72 ہزار روپے دینے کے انتخابی وعدے کو لے کر بی جے پی کے حملے پر جوابی حملہ کیا اور کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو یہ واضح کرنا چاہئے کہ کیا وہ غر یبوں کے مسائل کا تکفل کرنے والے اس مجوزہ اقدام کے حامی ہیں یا ...

پتور: منگلورو جارہے ٹرک ڈرائیور کو باندھ کرنیشنل ہائی وے 75پر لوٹا گیا

ایک تین رکنی لٹیروں کی ٹیم نے نیشنل ہائی وے 75پر مال سے لدے ہوئے ٹرک کو روکا اور ڈرائیور کے منھ میں کپڑا ٹھونس کر اسے باندھنے کے بعد ٹرک سے کچھ ساما ن کے علاوہ ٹرک ڈرائیور کے پاس موجود 5,200روپے اور موبائل فون لوٹ کر فرار ہوگئے ۔