سابق وزیراعلیٰ سدرامیا کا اُترکنڑا دورہ؛کاروار پہنچ کر کہا؛ کووڈکی تیسری لہر کی روک تھام کرنےکے بجائے وزیرا علیٰ باربار دہلی بھاگ رہے ہیں

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 2nd August 2021, 8:00 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

کاروار:2؍اگست (ایس اؤ نیوز) اترکنڑا ضلع کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کرنے کے بعد کرناٹک کے سابق وزیراعلیٰ اور حزب مخالف لیڈر سدرامیا نے کاروار میں اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے  بی جےپی ہائی کمان اور بی جے پی کی ریاستی حکومت کو مشورہ دیا کہ  وہ   ریاست کے حالات کو سمجھتے ہوئے  وقت سے پہلے پیشگی اقدامات کی طرف توجہ دیں۔

سدرامیا نے کہا کہ حال ہی میں ہم لوگ  کورونا جیسی خطرناک وباکی وجہ سے کافی ساری مشکلات جھیل  چکے ہیں، مناسب اسپتال، بیڈس، وینٹی لیٹرس ، آکسیجن کی کمی سےہزاروں لوگ موت کا شکار ہوچکے  ہیں ، ریاستی حکومت کو چاہئے کہ  ان حالات کو دوبارہ ہونے نہ دیں بلکہ وقت سے پہلے مناسب پیشگی اقدامات کریں۔ اس کے برخلاف وزیر اعلیٰ بسوراج بومائی کابینہ کی تشکیل کے لئے بھاگ دوڑ کر رہے ہیں۔ سدارامیا نے کہا کہ  وزیراعلیٰ  ایک بار دہلی جا تے ہیں تو کوئی مسئلہ نہیں ہے، لیکن اُنہیں  باربار دہلی  جانےکی کیا ضرورت ہے؟ بی جےپی ہائی کمان کو بھی چاہئےکہ وہ ریاست کے حالات کو سمجھتے ہوئے  وقت سے پہلے پیشگی اقدامات کی طرف توجہ دیں۔

 سدرامیا نے  کہاکہ ریاستی حکومت کی پہلی ترجیح یہی ہونی چاہئے کہ کورونا کی تیسری لہر ریاست میں نہ آنے پائے۔ پڑوس کی ریاستیں مہاراشٹرا اور کیرلا میں تیسری لہر جاری ہونے سے متاثرین میں اضافہ ہو رہا ہے۔ متعلقہ ریاستوں سے ہماری ریاست کوآنے والو ں کی تعداد بھی زیادہ ہے، اس لئے سرحدی علاقوں پر کڑی نگرانی کرنے  سدرامیا نے حکومت پر زور دیا۔  

کیرلا سے ساحلی اضلاع ، چامراج نگر اور کورگ ضلع کو زیادہ لوگ آرہے  ہیں۔ ریاست کی سرحد پر ان کی کڑی جانچ کرنے کے بعد جو لوگ دو مرتبہ ڈوز لےچکے ہیں انہی کو داخلہ دیا جائے اور جانچ میں نگیٹیورپورٹ آنے کے بعد ہی انہیں اندر آنے کی منظوری دیں۔

بی جے پی کے ارکان اسمبلی بنگلورو میں  وزارت کے لئے اپنی اپنی لابی  بنانے میں مگن ہیں۔ ایک بھی رکن اسمبلی اپنے حلقہ کو لوٹ کر کام نہیں کررہاہے،سدرامیا نے  کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ  ان ارکان کو  لوگوں کی زندگی سے زیادہ وزیر بننا  اہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ  بسوراج بومائی ابھی ابھی وزیرا علیٰ  بنے ہیں اس لئے  ان پر تنقید کرنا صحیح نہیں ہوگا۔ البتہ انہیں ریاست کے مسائل کی طرف توجہ دینا ضروری ہے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل : مہاتماگاندھی گرام سوراجیا پروگرام میں بھٹکل کانگریس عہدیداران کی فہرست جاری : ضلع پنچایت ، تعلقہ پنچایت انتخابات کی تیاریاں

بھٹکل بلاک کانگریس نیند سے بیدار ہونے کا ثبوت دیتے ہوئے بھٹکل اربن بینک ہال میں منعقدہ گرام سوراجیا پروگرام میں پارٹی عہدیداران کی فہرست جاری کرتےہوئے پارٹی کو مضبوط و مستحکم کرنےپر زور دیا ہے۔

بھٹکل میں منی پال ہیلتھ کارڈ 2021 کا افتتاح؛ KMC اسپتال میں علاج کرانے پر پچیس سے پچاس فیصد تک رعایت

مشہور و معروف  KMC اسپتال  کی  ساحلی کرناٹکا میں واقع کسی بھی شاخ  میں  منی پال ہیلتھ کارڈ دکھانے پر پچیس سے  پچاس فیصد تک رعایت دینے کا اعلان کرتے ہوئے    منی پال اکیڈمی آف  ہائیر ایجوکیشن پرو چانسلر  ڈاکٹر ایچ ایس بلّال  نے آج جمعرات کو   منی پال ہیلتھ کارڈ 2021  کا اجراء ...

سرسی: اتی کرم داروں کی عرضیوں کی جانچ کے حکم پر آتی کرم ہوراٹا سمیتی کا سخت اعتراض ؛ ریاستی چیف سکریٹری کو دی رٹ پیٹییشن

ریاستی پسماندہ طبقات فلاح و بہبودی ڈائرکٹوریٹ کے ذریعے  اتی کرم داروں کی عرضیوں کی جانچ کے حکم پر  آتی کرم ہوراٹا سمیتی نے  سخت اعتراض جتاتے  ہوئے  ریاستی چیف سکریٹری  کو    رٹ پیٹییشن دی ہے اور  الزام  لگایا ہے کہ   جنگلاتی حقوق کے تحت سب ڈویزن اورڈسٹرکٹ لیول کی جنگلاتی ...

سرسی : جنگلاتی زمین حقوق کے سلسلے میں ریاستی حکومت کوئی ٹھوس فیصلہ کرے ۔ رویندرا نائک کا مطالبہ

بنگلورو کے  پریس کلب میں اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے  ہوئے  جنگلاتی زمین حقوق کے لئے جدوجہد کررہی کمیٹی کے ریاستی صدر رویندرا نائک نے مطالبہ کیا کہ ریاستی حکومت جنگلاتی حقوق قانون کو نافذ کرنے کے سلسلے میں کوئی ٹھوس فیصلہ کرے ۔

بھٹکل ہیبلے پنچایت علاقہ میں کچرا نکاسی کا مسئلہ ۔ حنیف ویلفیئر ایسو سی ایشن نے اے سی کو دیا میمورنڈم

  ہیبلے گرام پنچایت کے حنیف آباد، رحمت آباد، ماسٹر کالونی، طلحہ کالونی، سرگنڈی مندر روڈ اور مینا روڈ وغیرہ پر سڑک کنارے کچروں کا ڈھیر جمع  ہونے اور پنچایت کی طرف سے اس کی نکاسی کا انتظام نہ کرنے کے خلاف حنیف ویلفیئر ایسوسی ایشن کی جانب سے اسسٹنٹ کمشنر بھٹکل کو میمورنڈم دیا گیا ...

کرناٹک: ریاست کی 6 لاکھ ہیکڑ فوریسٹ زمین غریبوں میں تقسیم کی جائے گی : ودھان سبھا اجلاس میں ریاستی وزیر آر اشوک کا بیان؛ لیکن کیا حقیقت میں ایسا کرنا ممکن ہے ؟

ریاست کی 6لاکھ ہیکڑ فوریسٹ زمین کو دوبارہ روینیو محکمہ کو لوٹائی جائے گی اور متعلقہ زمین ریاست کے غریبوں کو دی جائے گی۔یہ بات ریاستی روینیو وزیر آر اشوک نے  ودھان سبھا اجلاس میں ایک سوال کے جواب میں کہی، مگر کیا حقیقیت میں چھ لاکھ ہیکٹر فوریسٹ زمین کو روینو کے حوالے کیا ...

کرناٹک: بی جے پی رکن اسمبلی گولی ہٹی شیکھر کا الزام ’عیسائی مشنریوں نے والدہ کا مذہب تبدیل کرا دیا‘

کرناٹک کے سابق وزیر اور بی جے پی کے رکن اسمبلی گولی ہٹی شیکھر نے مبینہ طور پر بڑے پیمانے پر تبدیلی مذہب کے لئے ہوسدرگا اسمبلی حلقہ میں سرگرم عیسائی مشنریوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے مزید الزام عائد کیا کہ عیسائی مشنریوں نے ان کی ماں کو عیسائی مذہب قبول کرا دیا ...

25 ستمبر کو وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کا پہلی مرتبہ دورہ ٹمکور، مختلف ترقیاتی وتعمیری کاموں کا افتتاح وسنگ بنیاد

ضلع کے مختلف ترقیاتی وتعمیر ی کاموں کا افتتاح وسنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں شرکت کیلئے پہلی مرتبہ وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی اسی ماہ کی 25تاریخ کو ضلع کا دورہ کریں گے۔

کرناٹک میں انسداد تبدیلی مذہب قانون لانے کا منصوبہ ، جبراً یا لالچ دلاکر مذہب بدلنے والوں کو بخشا نہیں جائے گا: اسمبلی میں وزیر داخلہ کا اعلان

کرنا ٹک کی بی جے پی حکومت اُتر پردیش اور مدھیہ پردیش کی بی جے پی حکومتوں کے نقش قدم پر چلتے ہوئے ریاست میں بھی تبدیلی مذہب کو روکنے کے لئے ایک قانون لانے پر غور کر رہی ہے- یہ بات وزیر داخلہ ارگا گیانیندرا نے ریاستی اسمبلی میں صفر ساعت کے دوران کہی-

کرناٹک میں پی یو سی دوم کے نتائج کا اعلان ؛ 18،414 طلبا میں سے 5،507 طلبا کا میاب

پی یو سی دوم کا چیلنجنگ امتحان لکھنے والے طلبا کے نتائج ظاہر کردئے گئے  ہیں۔ جملہ 18،414 طلبا نے امتحان کے لئے اپنا اندراج کرویا تھا۔ ان میں سے 17،470 پرائیویٹ طلبا ، 351 رپیٹرس ، 592 فریشریس  طلبا نے امتحان میں شرکت کی ۔