منڈگوڈ میں پکوان گیس سلینڈروں کی قلت : مسئلہ کو ختم کرنے عوام کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 10th September 2019, 9:17 PM | ساحلی خبریں |

منڈگوڈ:10؍ستمبر(ایس اؤ نیوز)تعلقہ میں پکوان گیس سلینڈروں کی قلت سے عوام  کوپریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ماہ اگست کے ابتداء سے  شروع ہوا مسئلہ ابھی تک جاری رہنےپر عوام نے سخت برہمی کا اظہار کیا ہے۔

پکوان گیس سلینڈر  کے لئے عوام گیس ایجنسی کے سامنے قطاروں میں کھڑے دیکھے جاسکتےہیں۔ ایجنسی مالک کا مکان بھی وہیں رہنے کی وجہ سے عوام ایجنسی اور مکان کے سامنے  پکوان گیس کی ہنگامہ خیزی سے مالک کی نیند حرام ہوگئی ہے ، کبھی کبھی سلینڈروں کا  لوڈ آتا ہے تو عوام ہجوم کی شکل میں  امڈآنے کی بات کہی جارہی ہے۔ اس کے علاوہ بعض دفعہ لوڈ آنے کی اطلاع پاتےہی عوام گیس گوڈاؤن چلے جاتےہیں وہیں قطار میں کھڑے ہوئے لوگوں کے درمیان پکوان گیس سلینڈر  تقسیم کئے جاتے ہیں جنہیں نہیں ملا وہ ملامت کرتے لوٹتے دیکھے گئے۔ فون پر بکنگ کی سہولت ہونے تک عوام بالکل راحت میں تھے۔ لیکن ماہ اگست میں مسلسل بارش برسنے کے نتیجےمیں سڑکوں کی خرابی ، خستگی ، برجوں کے ٹوٹنے ، راستے بند ہونےکی وجہ سے گیس سلینڈروں کے لوڈ کم آرہے ہیں۔ جس کی وجہ سے پکوان گیس سلینڈروں کی قلت ہونے کی بات کہی جارہی ہے۔

عوام نے شکایت درج کرتے ہوئے کہاکہ پکوان کے دوران ہی گیس ختم ہوجاتی ہے تو کیاکریں۔ پہلے جس طرح فون بکنگ کے ذریعے گھر تک سلینڈر پہنچائے جاتےتھے ویسے پہنچانے کامطالبہ کیا۔ مسئلے کو لےکر ایچ پی گیس ایجنسی کے مالک بسوراج اوشی مٹھ نے واضح کیا ہے کہ ہم لوگ 4-5لوڈ کا آرڈر کرتے ہیں صرف 1-2لوڈ آتے ہیں۔ ہر طرف سے سپلائی کا دباؤ ہے ، بارش کم ہوئی ہے، اگلے ہفتہ تک معاملہ ٹھیک ہونےکی امید جتائی۔

 

ایک نظر اس پر بھی

مرڈیشور میں سڑک توسیع کی مانگ لے کر عوام نےتعمیراتی کام روک کر احتجاج کیا

مرڈیشور میں پشکرنی کے اطراف سڑک توسیع کے لئے سہولت ہونے کے باوجود افسران ان دیکھی کرتے ہوئے پرانی سڑک پر ہی اکتفا کرکےتعمیری کام کئے جانے پر دیہی عوام نے تعمیراتی کام روک کر اپنی مخالفت کا اظہار کیا ہے۔

کاروار میں ماہی گیر خواتین کا احتجاج : میونسپالٹی افسران پر دوغلی پالیسی اپنانے کا الزام

شہر میں زیر تعمیر نئی مچھلی مارکیٹ کو لے کر میونسپالٹی کے افسران عدالت کو ایک اور ماہی گیروں کو ایک جانکاری دیتے ہوئے دھوکہ دے رہے ہیں، اس معاملے میں افسران دوغلاپن اختیار کرنے کا الزام لگاتے ہوئے سابق رکن اسمبلی ، کانگریس لیڈر ستیش سئیل کی قیادت میں ماہی گیر خواتین نے ڈپٹی ...

یلاپور ضمنی انتخاب: کیا کانگریس کا’ہاتھ‘ چھوڑنے والے بی جے پی امیدوار شیورام ہیبار کو ان کے اپنے ہی شکست دیں گے؟!

سابقہ اسمبلی انتخاب کے دوران ضلع اُترکنڑا کے یلاپورحلقے سے کانگریس کے ٹکٹ پر بہت ہی کم ووٹوں کے ساتھ جیت درج کرنے والے شیورام ہیبار نے اُس وقت اپنے طبقے کے لوگوں کو دوش دیتے ہوئے کہا تھا کہ میرے اپنے لوگوں نے مجھے جیت دلانے کے لئے خوش دلی سے ووٹ نہیں ڈالے تھے۔

کیاقرضوں کی معافی اور سیلاب زدگان کی باز آبادکاری میں ریاستی حکومت دیوالیہ ہوگئی ہے؟۔ طلبہ کی اسکالرشپ کے لئے فنڈ نہیں ہے!

آج کل عوام کے ذہنوں میں یہ سوال گونج رہا ہے کہ کسانوں کے قرضوں کی معافی اور سیلاب زدگان کی راحت کاری کے کام میں کیا ریاستی حکومت دیوالیہ ہوچکی ہے۔ جس کی وجہ سے معاشی طور پر کمزور طبقات کے طلبہ کو دی جانے والی اسکالرشپ جاری کرنے کے لئے فنڈ کی کمی ہونے کی بات کہی جارہی ہے۔

منڈگوڈ:بی جے پی کے سابق رکن اسمبلی وی ایس پاٹل کے بیٹے باپو پاٹل نے کیا کانگریس میں شمولیت کااعلان

منڈگوڈ میں بی جے پی کے کٹر حامی خاندان کے طور پر پہچانے جانے والے سابق رکن اسمبلی اور موجود کے ایس آر ٹی سی چیرمین وی ایس پاٹل کے بیٹے اور بی جے پی کے یووا لیڈر باپوپاٹل نے بی جے پی سے رشتہ توڑ کر کانگریس میں شامل ہونے کا اعلان کیا ہے۔

منکی اور مرڈیشور کے ساحل اور محمد حیات کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے کرکٹ یونیورسٹی بلیو منتخب

کھیل کے میدان میں بھٹکل اور اطراف کے کھلاڑیوں کا یونیورسٹی بلیو منتخب ہونا عام ہوتاجارہا ہے، تازہ خبر یہ ہے کہ  پڑوسی علاقہ منکی اور مرڈیشور سے تعلق رکھنےو الے دونوجوان کرکٹ میں کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کی کرکٹ ٹیم کے لئے  منتخب ہوگئے ہیں