کورونا وائرس: نیویارک میں لاشوں کا ڈھیر لگنے کا اندیشہ، ٹرکوں کو مردہ گھر بنانے کی تیاری

Source: S.O. News Service | Published on 26th March 2020, 9:59 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نیویارک،26؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) امریکہ میں اس وقت کورونا وائرس کا قہر اپنے عروج پر نظر آ رہا ہے اور تشویشناک بات یہ ہے کہ حالات مزید خطرناک ہی ہوتے چلے جا رہے ہیں۔ امریکہ کے شہر نیو یارک میں سب سے زیادہ مشکل حالات دیکھنے کو مل رہے ہیں جہاں اب تک 30 ہزار سے زیادہ لوگ کورونا وائرس انفیکشن میں مبتلا ہو گئے ہیں۔ اس شہر میں گزشتہ روز 150 سے زائد اموات بھی ہوئی ہیں جس کے بعد لوگوں کی تشویش میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔ اس شہر میں حالات کچھ ایسے بن گئے ہیں کہ ٹرکوں پر مردہ گھر بنانے کی تیاریاں شروع ہو گئی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق نیو یارک میں ہر تیسرے دن مریضوں کی تعداد دوگنی ہو رہی ہے اور یہاں آئندہ کچھ دنوں میں سینکڑوں لوگوں کی موت ہو سکتی ہے۔ لہٰذا کورونا وائرس سے ہونے والی اموات کے سبب لاش کو علیحدہ رکھنے کی تیاریاں چل رہی ہیں۔ سی این این کے مطابق نیویارک کے کئی اسپتالوں میں ٹینٹ اور ریفریجریٹڈ ٹرک پر مردہ گھر بنائے جا رہے ہیں۔ ایک اسپتال کے میڈیکل افسر نے اس بات کا اعتراف بھی کیا ہے کہ حالات انتہائی بے قابو ہوتے جا رہے ہیں اور اسی لیے نیو یارک میں پہلے ہی ایمرجنسی کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جس طرح ریفریجریٹڈ ٹرک پر مردہ گھر بنانے کا سلسلہ نیویارک میں شروع ہوا ہے، اسی طرح عارضی مردہ گھر 11/9 حملے کے بعد بھی تیار کیے گئے تھے تاکہ بڑی تعداد میں لاشوں کو رکھا جا سکے۔ اس وقت نیویارک میں ٹرکوں کو مردہ گھر اس لیے بھی بنایا جا رہا ہے تاکہ کورونا سے ہلاک ہونے والوں کو علیحدہ رکھا جا سکے اور اس وائرس کو پھیلنے سے روکا جا سکے۔ ہندوستان میں بھی کورونا سے ہلاک ہونے والے افراد کے پوسٹ مارٹم یا اٹوپسی پر روک لگا دی گئی ہے۔ ہندوستان میں لاشوں کو دفن کرنے کے لیے گائیڈ لائنس بھی جاری کیے گئے ہیں۔

بہر حال، کچھ میڈیا ذرائع کے مطابق نیو یارک کے علاوہ نارتھ کیرولینا میں بھی اسی طرح ٹینٹ اور ریفریجریٹڈ ٹرک تیار کیے جا رہے ہیں۔ امریکہ میں اب تک 900 سے زائد لوگوں کی موت ہو چکی ہے اور کہاں جا رہا ہے کہ آنے والے دنوں میں وینٹی لیٹر کی کمی بھی ہو سکتی ہے۔ خصوصی طور پر نیو یارک کو اس مسئلہ کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ عالمی صحت ادارہ یعنی ڈبلیو ایچ او نے بھی اپنے بیان میں کہا ہے کہ امریکہ پوری دنیا کے لیے کورونا وائرس کا نیا مرکز بن گیا ہے اور چین کے وُہان کے بعد سب سے زیادہ موت امریکی شہر نیویارک میں ہو سکتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

پوری دنیا میں کورونا کا قہر جاری، متاثرین کی تعداد 63 لاکھ سے تجاوز

پوری دنیا میں عالمی وبا کورونا وائرس کا قہر جاری ہے اور ہر روز متاثرین اور اس سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد میں مستقل اضافہ ہو رہا ہے۔تازہ اعداد و شمار کے مطابق کورونا متاثرین کی تعداد 63لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ اس وبا سے اب تک 3.73لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔

عراق: فضائی حملے میں دو فوجی اور دو دہشت گردوں کی موت

عراق کے صوبہ نینوا اور دييالہ میں پیر کو ایک فضائی حملے اور ایک بم دھماکے میں دو فوجی ہلاک ہو گئے جبکہ دو دہشت گرد بھی مارے گئے۔ عراق کے جوائنٹ آپریشن کمانڈ کے میڈیا آفس نے ایک بیان میں بتایا کہ ایک حملہ میں دوعراقی فوجی ہلاک اور دو دیگر زخمی ہو گئے۔

انگلینڈ میں لاک ڈاؤن میں نرمی، 10 ہفتوں بعد کھلے اسکول

10 ہفتوں کے بعد برطانیہ کے انگلینڈ ریجن میں لاک ڈاؤن کے بعد اسکول کھول دیئے گئے، مگر نصف کے قریب والدین نے اپنے بچوں کو اسکول بھیجنے سے گریز کیا ہے۔ برطانوی حکومت نے گزشتہ روز لاک ڈاؤن میں نرمی کرنے کا اعلان کیا تھا جس میں اسکولوں کا کھولا جانا بھی شامل تھا، کچھ علاقوں میں ...

لاک ڈاؤن کے دوران جان گنوا نے والے مہاجر مزدوروں کے اہل خانہ کو 25لاکھ روپئے معاوضہ دینے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

   سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا  کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے   مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بغیر تیاری کے اعلان کردہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کام کرنے کی جگہ اور اپنے گھروں کو پیدل سفر کرنے والے جو مہاجر مزدور بھوک اور تھکن سے جان گنو ا چکے ہیں،  ان کے ...

کرناٹک میں ایک ہی دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو، تین ہزار سے پار ہوا اکڑہ

ریاست کرناٹک میں پیر کے دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو پائے گئے ، جس سے کل تعداد 3408 ہوگئی ۔ 2026 افراد زیر علاج ہیں۔ 110 مریض شفایاب ہو کر رخصت ہوئے ۔ اب تک رخصت ہونے والوں کی تعداد 1328 ہوگئی ہے، 52 ؍ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

بھٹکل میں لاک ڈاون میں چھوٹ مگر کنٹیمنٹ زون میں آنے کی وجہ سے عدالت میں صرف ای فائلنگ کی سہولت

گذشتہ ماہ ایک ساتھ بھٹکل میں کورونا کے 30 معاملات سامنے آنے کے بعد بھٹکل کو کنٹیمنٹ زون کے زمرے میں رکھا گیا تھا، مگر اب بھٹکل میں لاک ڈاون میں چھوٹ دی گئی ہے اور دکانوں اور دیگر کاروباری اداروں کو صبح آٹھ بجے سے دوپہر دو بجے تک کھولنے کی اجازت دی گئی ہے، جس کے ساتھ ہی پورے شہر ...

وندے بھارت مشن کے تحت مزید 6ممالک  کے بھارتی  لوٹیں گے وطن : پرائیویٹ ہوائی جہازوں کے استعمال کا فیصلہ

کووڈ لاک ڈاؤن کی وجہ سے گزشتہ دو مہینوں سے مختلف بیرونی ممالک میں پھنسے ہوئے بھارتیوں کے لئے بڑی بری خبر ہے کہ فی الحال بین الاقوامی ہوائی جہاز کی خدمات شروع نہیں ہونے کی جانکاری ملی ہے۔