اُڈپی ضلع میں کورونا کے بڑھتے ہوئے معاملات سے نمٹنے کے لئے کنداپور اور بیندور میں کووِڈ اسپتالوں کا قیام۔ ڈپٹی کمشنر جگدیش کا اعلان

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd June 2020, 5:36 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

اڈپی 3/جون (ایس او نیوز) ضلع اُڈپی کے ڈپٹی کمشنر جی جگدیش نے بتایا کہ ضلع میں کووِڈ 19سے متاثرین کی تعداد میں روزبرو ز اضافہ کو دیکھتے ہوئے کنداپور اور بیندو ر میں 400 بستروں کی سہولت کے ساتھ کووِ ڈ اسپتال قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

 اس ضمن میں غور و خوض کرنے کے لئے ڈپٹی کمشنر نے کنداپور تعلقہ پنچایت کے میٹنگ ہال میں ہیلتھ آفیسر اور دیگر محکمہ جاتی افسران کے ساتھ خصوصی نشست منعقد کی۔انہوں نے بتایا کہ فی الحال کنداپور سرکاری اسپتال میں کووِڈ وارڈ کے لئے 120بستروں کا انتظام ہے، جبکہ پرانی عمارت میں بھی 80بستر کووِڈ مریضوں کے لئے دستیاب ہیں۔ اب اس تعلقہ اسپتال کو پوری طرح کووِڈ اسپتال میں تبدیل کیا جائے گا۔اس کے علاوہ آدرش اسپتال میں 65مریضوں کے لئے انتظام کیا گیا ہے۔

 ڈی سی بتایا کہ بیندورتعلقہ میں بھی اب تک 2,500افراد مہاراشٹراسے لوٹے ہیں۔ اس وجہ سے وہاں پر بھی کووِڈ سے متاثر ہونے کے معاملات بڑی تعداد میں سامنے آرہے ہیں۔اس صورتحال سے نمٹنے کے لئے تلّور میں واقع للیتا مبیکا گیسٹ ہاؤس کو 200بستروں والے اسپتال میں تبدیل کرنے کا انتظام کیا گیا ہے۔

 ڈپٹی کمشنر نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ بیندور اور کنداپور کے اسپتالوں میں صرف ان مریضوں کو رکھا جائے گا جن کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے مگر ان کے اندر بیماری کی علامات موجود نہیں ہیں۔ بیماری کی علامات والے افراد، حاملہ خواتین اورسنگین حالت میں پہنچے ہوئے مریضوں کو اڈپی کے کووِڈ اسپتال میں داخل کرکے علاج فراہم کیا جائے گا۔

کنداپور اسپتال کو مکمل طور پر کووِڈ اسپتال میں تبدیل کرنے کے بعد یہاں پر موجود زچگی کے شعبے کو کوٹا اور برہماور کے کمیونٹی اسپتالوں میں منتقل کیا جائے گا۔اور باہری مریضوں کے شعبے (او پی ڈی)کو کنداپور کے پرانے ونائیک اسپتال میں منتقل کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا سے اُڈپی میں مرنے والوں کی تعداد ہوگئی 6؛ بھٹکل میں بھی ایک شخص کی موت

جمعرات کو اُڈپی میں مزید ایک شخص کی کورونا سے موت واقع ہونے کے بعد ضلع میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 6 ہوگئی ہے۔ اسی طرح بدھ کی شب کو بھٹکل میں بھی ایک شخص کی موت واقع ہونے کی خبر  موصول ہوئی ہے جس کی رپورٹ آج جمعرات کو کورونا پوزیٹیو آنے کی اطلاع ملی ہے۔اس طرح بھٹکل ...

مینگلور : دکشن کنڑا میں ایک ہفتہ تک جاری رہنے والے لاک ڈاون کا آج سے ہوا نفاذ، راستے سنسان، دکانیں بند، عام زندگی مفلوج

کورونا کے بڑھتے معاملات اور روز بروز اضافہ کو دیکھتے ہوئے  ایک ہفتہ طویل لاک ڈاون کا آج  سے مینگلور سمیت دکشن کنڑا ضلع میں نفاذ عمل میں آیا جس کے دوران شہر کی سڑکیں سنسان اور بہت زیادہ چہل پہل والے علاقوں میں بھی سناٹا نظر آیا۔ 

بنگلورکے ساتھ ساتھ ساحلی کرناٹکا میں کورونا کا قہر جاری؛ اُترکنڑا میں 76 معاملات؛ بھٹکل میں پھر ایک شخص کی موت

ریاست کرناٹک بالخصوص بنگلور میں کورونا کا قہر جاری ہے مگر ساحلی کرناٹکا میں بھی کورونا کے معاملات رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں، ایک طرف آج ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے 76 معاملات سامنے آئے تو وہیں پڑوسی ضلع اُڈپی میں 52 اور دکشن کنڑا میں 76 پوزیٹیو کیسس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بنگلورو میں ایک ہفتہ طویل لاک ڈاؤن، سڑکیں سنسان، راستوں سے سواریاں غائب

بنگلورو میں جہاں ایک ہفتہ طویل لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا ہے، سڑکیں  سنسان رہیں اور راستوں پر لوگوں کی نقل و حرکت بھی بہت کم رہی۔ کورونا وائرس کیسس میں اضافہ کے پیش نظر حکومت کرناٹک نے مذکورہ لاک ڈاؤن نافذ کیا ہے۔

مینگلور : دکشن کنڑا میں ایک ہفتہ تک جاری رہنے والے لاک ڈاون کا آج سے ہوا نفاذ، راستے سنسان، دکانیں بند، عام زندگی مفلوج

کورونا کے بڑھتے معاملات اور روز بروز اضافہ کو دیکھتے ہوئے  ایک ہفتہ طویل لاک ڈاون کا آج  سے مینگلور سمیت دکشن کنڑا ضلع میں نفاذ عمل میں آیا جس کے دوران شہر کی سڑکیں سنسان اور بہت زیادہ چہل پہل والے علاقوں میں بھی سناٹا نظر آیا۔ 

بنگلورکے ساتھ ساتھ ساحلی کرناٹکا میں کورونا کا قہر جاری؛ اُترکنڑا میں 76 معاملات؛ بھٹکل میں پھر ایک شخص کی موت

ریاست کرناٹک بالخصوص بنگلور میں کورونا کا قہر جاری ہے مگر ساحلی کرناٹکا میں بھی کورونا کے معاملات رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں، ایک طرف آج ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے 76 معاملات سامنے آئے تو وہیں پڑوسی ضلع اُڈپی میں 52 اور دکشن کنڑا میں 76 پوزیٹیو کیسس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بھٹکل میں کورونا مریضوں کی تعداد میں اضافے سے خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں۔معمولی علامات پر جانچ کروانے ڈپٹی کمشنر کی ہدایت 

ضلع اُترکنڑا کے  ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے عوام سے اپیل کی  کہ بھٹکل میں کورونا مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کو دیکھ کر گھبرانے یا خوف کھانے کی ضرورت نہیں ہے، بلکہ کورونا پر قابو پانے کے لئے اس کی علامات ظاہرہوتے ہی  اس کا علاج کرنے کی ضرورت ہے۔ بھٹکل میں کورونا کے بڑھتے ...