کورونا وباء بن گئی مسلمانوں کے لئے سزا۔ منگلورو کے ایک گاؤں میں لگے مسلمانوں کے داخلے پر پابندی کے پوسٹر

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 6th April 2020, 12:12 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو 6/ اپریل (ایس او نیوز) پوری دنیا اس وقت کووڈ 19کے قہر میں مبتلا ہے جس میں ہمار املک بھی ہے۔ لیکن ہمارا  ملک اس لحاظ سے دنیا بھر سے الگ ہوگیا ہے کہ یہاں چین میں جنم لینے اور امریکہ و یوروپ میں پھلنے پھولنے والی اس بیماری کو بھی مسلمانوں کی طرف سے رچی گئی سازش قرار دیا جارہا ہے اور غیر مسلموں کے ذہنوں کو مسموم کرنے کی منصوبہ بند ساز ش کی جارہی ہے۔

 ایک تازہ رپورٹ کے مطابق اس وقت منگلورو سے قریب سومیشور ساحلی علاقے میں واقع کولیا۔۲ نامی گاؤں میں اشتہاری پرچے (پوسٹرس) لگائے گئے ہیں کہ ’جب تک کورونا کی وباء پوری طرح ختم نہیں ہوجاتی، اس علاقے میں مسلم تاجروں کا داخلہ ممنوع ہے۔‘

سوشیل میڈیا پر وائرل ہورہی اس خبر کے مطابق کولیا۔۲ میں الیکٹرک اور ٹیلی فون کے کھمبوں پر جابجا یہ پوسٹرس دیکھے جاسکتے ہیں، جس کے فوٹو سوشیل میڈیا پر شیئر کیے گئے ہیں۔ پوسٹرس میں لکھا گیا ہے کہ ’نوٹس: کولیا کنیر ٹوٹا کے عوام کی صحت کا خیال رکھتے ہوئے کورونا وائرس کے پوری طرح ختم ہونے تک ہمارے گاؤں میں کوئی بھی مسلمان تاجر کے داخلے پر پابندی لگائی گئی ہے۔‘ پوسٹرجاری کرنے والے کے نام کے بجائے صرف ’ہندو بھائی‘ لکھا ہواہے۔

 اس فرقہ وارانہ ذہنیت اور حرکت پر سوشیل میڈیا پر خوب بحث ہورہی ہے، لیکن تعجب خیز بات یہ ہے کہ اس کے خلاف اب تک پولیس یا کسی بھی سرکاری افسرکی طرف سے نہ کوئی کارروائی کی گئی ہے یا عوامی منتخب نمائندوں کی طرف سے اس کی نہ مذمت کی گئی ہے۔لگتا ہے کہ سب لوگ خاموشی اور نیم رضامندی کا مظاہرہ کررہے ہیں۔البتہ انسانی حقوق کے رضاکارکبیر اُلال نے بتایا کہ وہ اس معاملے کو ڈپٹی کمشنر کے علم میں لائیں گے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

بیرون ریاست سے بھٹکل آنے والوں کو سرکاری طور پر مقرر کردہ مراکز میں کیا جائے گا کوارنٹین۔ اسسٹنٹ کمشنر بھرت کا بیان

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے بتایاہے کہ جو بھی افراد بیرون ریاست سے بھٹکل آئیں گے انہیں نئے پروٹو کول کے مطابق سرکار کی طر ف سے مقرر کردہ مراکز میں ہی کوارنٹین کیا جائے گا۔

کرناٹک میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ معاملات؛ ایک ہی دن سامنے آئے 515 معاملات؛ صرف اُڈپی میں ہی 204 کورونا پوزیٹو

ملک بھر میں لاک ڈاون میں  ڈھیل دی جارہی ہے اور پورے ملک میں لاک ڈاون کے بعد اب  اگلے چند دنوں میں  حالات نارمل ہونے کے امکانات  نظر آرہے ہیں مگر دن گذرنے کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے  اُس میں مزید اضافہ ہی دیکھا جارہا ہے۔

بھٹکل میں ایک خاتون کی رپورٹ آئی کورونا پوزیٹو؛ یلاپور کے چھ اور کاروار سے ایک کی رپورٹ بھی کورونا پوزیٹو

کافی دنوں کے وقفے کے بعد آج بھٹکل میں ایک اور کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے، جبکہ ضلع اُترکنڑا کے یلاپور سے چھ اور کاروار سے ایک کورونا کے معاملات بھی سامنے آئے ہیں۔ یاد رہے کہ بھٹکل سے کورونا کا آخری معاملہ 17 مئی کو سامنے  آیا تھا اور وہ شخص  یکم جون کو  ڈسچارج ہوگیا ...

کیرالہ سے داخل ہوتے ہوئے ساحلی کرناٹکا میں مانسون نے دی دستک۔ کرناٹکا میں پوری طرح مانسون شروع ہونے میں ہوسکتی ہے تاخیر

حسب معمول جون کے آغاز میں ہی مانسون نے کیرالہ میں داخلہ لیااور پھر وہاں سے ہوتے ہوئے دودن پہلے ساحلی کرناٹکا میں دستک دی۔ جس کے ساتھ ہی مینگلور، اُڈپی، بھٹکل، کمٹہ اور کاروار وغیرہ علاقوں میں  موسلادھار بارش، طوفانی ہواؤں اور بادلوں کی گھن گھرج کے ساتھ مانسون نے اپنی آمد کا ...

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...

کرناٹک میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ معاملات؛ ایک ہی دن سامنے آئے 515 معاملات؛ صرف اُڈپی میں ہی 204 کورونا پوزیٹو

ملک بھر میں لاک ڈاون میں  ڈھیل دی جارہی ہے اور پورے ملک میں لاک ڈاون کے بعد اب  اگلے چند دنوں میں  حالات نارمل ہونے کے امکانات  نظر آرہے ہیں مگر دن گذرنے کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے  اُس میں مزید اضافہ ہی دیکھا جارہا ہے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔

یڈیورپا کا اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ اجلاس؛ بعض سرکاری دفاتر کو اندرون ایک ماہ بیلگاوی کے سورونا ودھان سودھا منتقل کرنے وزیر اعلیٰ کی ہدایت

وزیر اعلیٰ بی ایس یڈی یورپا نے حکام کو اندرون ماہ ریاست کے بعض سرکاری دفاتر کی نشاندہی اور ان کی بیلگاوی کے سورونا و دھان سودھا منتقلی کی ہدایت دی جس کا مقصد علاقائی توازن قائم کرنا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔