بھٹکل نیشنل ہائی وے پر تیزرفتار بس، لاری سے ٹکراگئی؛ 25 سے زائد زخمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th December 2019, 4:34 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 12/ڈسمبر (ایس او نیوز) یہاں وینکٹاپور نیشنل ہائی وے 66 پر ایک تیز رفتار بس، پارک کی ہوئی لاری سے  ٹکراگئی جس کے نتیجے میں بس پر سوار 25 سے زائد مسافر زخمی ہوگئے، جن میں سے دو کو کنداپور اور باقی کو بھٹکل سرکاری اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

حادثہ بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب قریب 12 بجے بھٹکل تعلقہ کے وینکٹاپور بریج پر پیش آیا۔

بتایا گیا ہے کہ بیلگام جانے والی لاری کا پہیہ پنکچر ہوگیا تھا جس کی وجہ سے وہ لاری  وینکٹاپور بریج پر سڑک کے کنارے پارک کی گئی تھی، پہیہ تبدیل کرنے کے دوران حادثہ نہ ہو، اس کے لئے  اسی کمپنی کی  دوسری لاری اگلی لاری کو تحفظ فراہم کرنے کے لئے اُسی کے پیچھے کھڑی کی گئی تھی کہ کولّور مندر سے گوکرن جانے والی تمل ناڈو کی ایک تیز رفتار بس پیچھے سے دوسری والی لاری سے ٹکراگئی۔

ٹکر اتنی شدید تھی کہ بس کے اگلے حصے کے پرخچے آڑگئے ساتھ ساتھ ٹکر لگنے والی لاری کو بھی شدید نقصان پہنچا۔ جبکہ بس پر سوار 25 سے زائد مسافروں کو چوٹیں آئیں۔ مقامی لوگوں نے فوری طورپر امداد پیش کرتے ہوئے تمام زخمیوں کو مختلف ایمبولنس کی مدد سے بھٹکل سرکاری اسپتال منتقل کرایا۔ دو مسافروں کو سرپر چوٹ لگی ہے جس کی وجہ سے اُنہیں کنداپور اسپتال شفٹ کیا گیا ہے۔

بس پر تمل ناڈو سے تعلق رکھنے واالے ائیپّا کے بھگت سوار تھے جو ائیپّا کی پوچا کے لئے نکلے تھے۔

مقامی لوگوں نے بتایا کہ نیشنل ہائی وے کی توسیع کا کام جاری رہنے کو لے کریہاں سواریوں کے لئے دشواریاں پیش  آرہی ہیں، سواریوں کو معلوم نہیں ہورہاہے کہ اُنہیں کس سڑک سے جانا ہے، کونسی سڑک ون وے ہے اور کس سڑک پرسامنے سے بھی سواریاں آنے والی ہیں، مقامی لوگوں نے یہ بھی بتایا کہ  رات کا اندھیرا ہونے کی وجہ سے بس ڈرائیور کو معلوم نہیں ہوسکا کہ ہائی وے پر لاری سڑک کنارے پارک کی گئی ہے۔

بھٹکل مضافاتی پولس تھانہ میں معاملہ درج کیا گیا ہے اور پولس معاملے کی چھان بین کررہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

دبئی :شیرورگرین ویلی اسکول کے صدر ڈاکٹر سید حسن کی دختر دانیا کو ملا شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس‘

عرب امارات میں بہترین ہمہ جہتی تعلیمی کارکردگی کے لئے طالب علموں کو دیا جانے والا ’’ہَرہا ئنیس شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس“ امسال دانیا حسن کو تفویض کیا گیا ہے جس کا تعلق  بھٹکل کے پڑوسی علاقہ شرور سے ہے۔

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

بنگلورو فساد: مسلمانوں نے پیش کی ہم آہنگی کی مثال، انسانی زنجیر بناکر مندر کی حفاظت

کرناٹک کی راجدھانی بنگلورو میں سوشل میڈیا کی ایک قابل اعتراض پوسٹ کے بعد بھڑکنے والے فرقہ وارانہ فساد کے درمیان مسلم نوجوانوں نے مذہبی ہم آہنگی کی مثال پیش کرتے ہوئے ایک مندر کی حفاظت کی اور ہندوستان کی اس خوبصورت تصویر کو نمایاں کیا جس پر ہر ہندوستانی کو فخر ہونا چاہیے۔

 بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت کی تعمیرروک دی جائے۔ پنچایت اراکین نے کیا اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ 

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے اراکین نے اسسٹنٹ کمشنرکو میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کا جو کام شروع کیا ہے