بھارت بند کے دوران اُڈپی میں بی جے پی اور کانگریس کارکنوں کے درمیان جھڑپ؛ پولس لاٹھی چارج؛ امتناعی احکامات نافذ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th September 2018, 3:06 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

اُڈپی 10/ستمبر (ایس او نیوز) ملک گیر سطح پر منائے جارہے بھارت بند کے دوران اُڈپی کےبننجے میں  کانگریس اور بی جے پی کارکنوں کے درمیان جھڑپ شروع ہوگئی، جس پر قابو پانے کے لئے پولس نے لاٹھی چارج شروع کردیا اور کارکنوں کو منتشر کردیا۔  اب حالات زیرقابو بتائے گئے ہیں اور پیشگی حفاظتی  اقدامات کے طور پر یہاں   تعلقہ انتظامیہ نے پورے اُڈپی شہر میں دفعہ 144 کے تحت  امتناعی احکامات  نافذ کردئے ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ بھارت بند کے موقع پر اُڈپی ایس پی آفس کے قریب بننجے  میں   کانگریسی کارکن  سینکڑوں کی تعداد میں جمع ہوکر احتجاج کررہے تھے، یہاں احتجاجیوں نے مرکز کی مودی سرکار کے خلاف نعرے بازی کی، جس کے دوران  یہاں بی جے پی کارکن آگئے اور کانگریسی کارکنوں کے ساتھ بھڑ گئے۔لفظی جھڑپ بعد میں ہاتھاپائی تک پہنچ گئی، آمنے سامنے کارکنوں کے درمیان ہورہی جھڑپ جب بے قابو ہوگئی اور پولس  کے بار بار سمجھانے کے بائوجود اُنہیں روکنے میں پولس ناکام رہی  تو ضلع کے ایس پی نے  بے قابو بھیڑ کو منتشر کرنے کے لئے لاٹھی چارج کا حکم دیا۔ لاٹھی چارج میں کئی لوگ زخمی ہوئے ہیں جس میں اُڈپی کے ایک کونسلر بھی شامل ہیں۔ پولس نے بعد میں  حالات پر قابو پالیا ہے۔

کانگریسی کارکنوں پر پولس کی جانب سے لاٹھی برسانے  کے خلاف  کانگریس  نے  سخت ناراضگی ظاہر کی ہے اور پولس پر الزام لگایا ہے کہ  کانگریس کی طرف سے اعلان شدہ بھارت بند کے دوران پولس کو پیشگی طور پر  پولس کا مناسب بندوبست کرنا چاہئے تھا، مگر اس موقع پر کچھ شرپسندوں نے کانگریسی کارکنان پر حملہ کرنے کی کوشش کی اور کانگریسی احتجاج کو ناکام کرنے کی کوشش کی اور پولس اُن کارکنوں کو روکنے میں ناکام رہی۔ ریاست کے سابق وزیر پرمود مدھوراج نے  واقعے پر سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے بتایا کہ پولس نے کئی کانگریسی لیڈران پر لاٹھی برسائی ہے جس میں ایک  کانگریسی  کونسلر بھی  زخمی ہوئے ہیں۔ انہوں نے پولس کے اس اقدام کی سخت مذمت کی ہے۔

اُدھر اُڈپی ضلعی انتظامیہ نے  حالات پر مکمل قابو پانے کے لئے امتناعی احکامات دفعہ 144 نافذ کردیا ہے اور کسی بھی طرح کے  جلسے اور جلوس پر کل صبح چھ بجے تک کے لئے  پابندی عائد کردی ہے۔

پولس نے حالات پر فوری طور پر قابو پالیا ہے اور پولس نے حفاظتی اقدامات بھی سخت کردئے  ہیں۔

 

 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو کے گمشدہ نوجوان کی لاش تملناڈو میں دستیاب۔ قتل کیے جانے کا شبہ

گنجی مٹھ کے رہنے والے سمیر (35سال) کے والد احمد نے پولیس میں گم شدگی کی شکایت درج کی گئی تھی اور بتایا گیا تھا کہ اپنی بیوی ا وربچی کو ساتھ لے کر ہوائی جہاز کے ذریعے بنگلورو جانے کے بعد وہ لاپتہ ہوگیا ہے اور اس کی بیوی ااپنی بچی کے ساتھ کاپ میں واقع اپنے مائیکے واپس پہنچ گئی تھی۔

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

روپے کی قدر میں گراوٹ:سستاحج کرانے کادعویٰ بھی فرضی؟ حجاج کرام پر بوجھ میں اضافہ ،مزید پیسے وصولے جاسکتے ہیں

سرکارایک طرف دعویٰ کررہی ہے کہ اس نے اس بارسستاحج کرایاہے ۔لیکن اب روپیے کی گراوٹ کی وجہ سے پھرحاجیوں سے وصولی کی جائے گی ۔عالمی بازار میں ڈالر کے مقابلے ہندوستانی کرنسی کی قدر میں ہورہی گراوٹ کی وجہ سے اب حجاج کرام پر مزید بوجھ پڑنے والاہے۔