اسکول کی پہلی جماعت میں داخلے کے لئے بچے کی عمر کم ازکم عمر 5سال 5مہینے 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th March 2019, 12:08 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

کاروار 7؍مارچ (ایس او نیوز) ریاستی حکومت نے اسکول کی پہلی جماعت میں داخلے کے لئے مقررہ عمر کی حد میں پھر ایک بار تبدیلی کردی ہے اور اب نئے حکم کے مطابق جس بچے کی عمر 5سال5مہینے ہوگی ، اس کا داخلہ پہلی جماعت میں کیا جاسکے گا۔

آر ٹی ای ایکٹ 2009کے تحت تعلیمی سال2016-17میں امدادی و غیر امدادی اور اقلیتی اسکولوں میں بچوں کے داخلے کی عمر کے تعلق سے جو حد مقرر کی گئی تھی اس کے مطابق ایل کے جی کے لئے 3سال10مہینے سے 4سال 10مہینے اور پہلی جماعت کے لئے 5سال 10مہینے سے 6سال10مہینے عمر ہونا چاہیے تھا۔ پھر سال 2018میں عمر کی حد میں تبدیلی کرتے ہوئے امدادی و غیر امدادی اسکولوں کی پہلی جماعت میں داخلہ لینے والے طالب علم کی عمر یکم جون تک 5سال10مہینے پورے ہونا ضروری قرار دیا۔ اس قانون کے مطابق سال 2015اور2016میں جن طلبہ کو 3سال 10مہینے کی حد پوری کیے بغیر ہی اپنی مرضی سے ایل کے جی میں داخلہ دیا گیا تھاان کی عمر پہلی جماعت میں داخلے کے وقت 5سال10مہینے کے نشانے کو پورا نہیں کررہی ہے اور وہ پہلی جماعت میں داخلے کے قابل نہیں رہتے ہیں۔

اس مسئلے کے پس منظر میں محکمہ تعلیمات نے دوبارہ اس پر غور کرتے ہوئے صرف سال 2017کے لئے پہلی جماعت میں داخلے کی عمر گھٹا کر 5سال 5مہینے کر دی تھی۔اب چونکہ سینٹرل اسکولوں میں بچوں کے داخلے کی عمر کم ازکم 5سال اور زیادہ سے زیادہ 7سال کردی ہے، اس لئے ریاستی محکمہ تعلیمات نے بھی عمر کی حد پر نظر ثانی کرکے پہلی جماعت میں داخلے کی کم ازکم عمر 5سال5مہینے مقرر کردی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شہر بھر میں پانی سپلائی کرنے پر مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین نے کی بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کی خوب پذیرائی؛ اللہ کی مخلوق کو فائدہ پہونچانے والے لوگ ہی اللہ کو سب سے زیادہ محبوب ترین؛ مقررین کا اظہار خیا

شدت کی گرمی  اور روزہ کی حالت میں بھی شہر کے مختلف علاقوں میں پانی سپلائی کرنے  پر بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کے ذمہ داروں  کی زبردست پذیرائی اور ستائش کرتے ہوئے  آج جمعرات شام کو یہاں  مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین کی طرف سے   خصوصی اجلاس کا انعقاد کیا گیا اور فیڈریشن کے صدر ...

کاروار: ایس ایس ایل سی میں ناکام ہونے والوں کے لئے 21 جون سے ہوگا سپلیمنٹری امتحان

ایس ایس ایل سی میں ناکام ہونے والے طلبا و طالبات کے لئے مورخہ 21 جون سے 28 جون کے لئے سپلیمنٹری امتحانات منعقد کئے گئے ہیں  اور   متعینہ مدت میں  امتحانی مراکز کے 200 میٹر تک کے  دائرہ میں  امتناعی احکامات دفعہ 144 جاری کئے گئے ہیں، اس بات کی اطلاع اُترکنڑا کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش ...

کرناٹک سی ایم کا دعویٰ: جے ڈی ایس ممبر اسمبلی کو بی جے پی لیڈر نے دس کروڑکی پیش کش کی

رناٹک میں حکومت گرانے کے لیے ’آپریشن لوٹس‘ کا ڈر مخلوط حکومت کو دوبارہ ستانے لگا ہے۔وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بی جے پی پر ان کی پارٹی کے ایک رکن اسمبلی کو رشوت دینے کی کوشش کا الزام لگایا۔

روشن بیگ کے خلاف کانگریس کی کارروائی، پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل

کرناٹک کے سابق ریاستی وزیر آرروشن بیگ کے خلاف کانگریس نے کارروائی کی ہے۔ انہیں پارٹی مخالف سرگرمیوں کے الزام میں معطل کردیا گیا ہے۔ روشن بیگ نے کانگریس کے ریاستی لیڈروں کے خلاف نازیبا الفاظ استعمال کئے تھے۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی سے منظوری ملنے کے بعد کرناٹک پردیش کانگریس ...

رہائشی علاقوں میں کاروباری سرگرمیوں پر روک لگانے میں بلدیہ ناکام

بنگلور شہر کے رہائشی علاقوں میں رہائشی عمارتوں کے اندر سے کاروباری سرگرمیوں پر قدغن لگانے کے سلسلہ میں بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) کی مہم مکمل طور پر ناکام رہی ہے اور پچھلے دو سالوں کے عرصہ میں بلدیہ کی طرف سے صرف پانچ فیصدی ایسے اداروں کو بند کیا گیا ہے-