پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف منگلورومیں ہوگا10 ستمبر کو 28تنظیموں کا مشترکہ احتجاجی مارچ 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th September 2018, 12:55 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

منگلورو 8؍ستمبر (ایس او نیوز) پٹرول اور ڈیزل کے بڑھتی قیمتوں کے خلاف ایم ایل سی ایوان ڈیسوزا کی قیادت میں 10ستمبر کومنگلورو میں ہمپن کٹا سرکل سے ڈپٹی کمشنر آفس تک احتجاجی مارچ کا اہتمام کیا جائے گا۔جس میں تقریباً 28تنظیموں کی شرکت کا اعلان کیا گیا ہے۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایوان ڈیسوزا نے کہا کہ پٹرول کی قیمتیں لگاتار بڑھتی جارہی ہیں اور اب یہ قیمت فی لیٹر80روپے سے آگے نکل گئی ہے، جبکہ بین الاقوامی مارکیٹ میں کچے تیل کی قیمت کم ہوگئی ہے۔2014 ؁ء میں 108.26امریکی ڈالر فی بیرل کے وقت پٹرول کی قیمت65روپے فی لیٹر تھی۔ جبکہ اس کے مقابلے میں کچے تیل کی قیمت 2018 میں 65امریکی ڈالر فی بیرل ہوگئی ہے، اور پٹرول 81روپے فی لیٹر سے آگے نکل گیا ہے۔یہی حال ڈیزل کی قیمتوں کا بھی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کی وجہ سے عام آدمی کی زندگی بری طرح متاثر ہوئی ہے۔اس لئے 28تنظیموں کے اشتراک سے احتجاجی مظاہرے کا اہتمام کیا گیا ہے۔احتجاجی مظاہرے سے قبل دو دنوں تک پٹرول کی بڑھتی قیمتوں کے سلسلے میں عوام کے اندر بیداری لانے کے لئے مختلف مقامات پر پروگرام منعقد کیے جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو کے گمشدہ نوجوان کی لاش تملناڈو میں دستیاب۔ قتل کیے جانے کا شبہ

گنجی مٹھ کے رہنے والے سمیر (35سال) کے والد احمد نے پولیس میں گم شدگی کی شکایت درج کی گئی تھی اور بتایا گیا تھا کہ اپنی بیوی ا وربچی کو ساتھ لے کر ہوائی جہاز کے ذریعے بنگلورو جانے کے بعد وہ لاپتہ ہوگیا ہے اور اس کی بیوی ااپنی بچی کے ساتھ کاپ میں واقع اپنے مائیکے واپس پہنچ گئی تھی۔

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

روپے کی قدر میں گراوٹ:سستاحج کرانے کادعویٰ بھی فرضی؟ حجاج کرام پر بوجھ میں اضافہ ،مزید پیسے وصولے جاسکتے ہیں

سرکارایک طرف دعویٰ کررہی ہے کہ اس نے اس بارسستاحج کرایاہے ۔لیکن اب روپیے کی گراوٹ کی وجہ سے پھرحاجیوں سے وصولی کی جائے گی ۔عالمی بازار میں ڈالر کے مقابلے ہندوستانی کرنسی کی قدر میں ہورہی گراوٹ کی وجہ سے اب حجاج کرام پر مزید بوجھ پڑنے والاہے۔