کرناٹکا سے تعلق رکھنے والے بی ایس ایف کے دو سپاہی چھتیس گڑھ نکسل وادی حملے میں ہلاک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th July 2018, 12:20 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار 11؍جولائی (ایس او نیوز) چھتیس گڑھ کے کانکیرضلع میں نکسل وادیوں کی طرف سے کیے گئے بارودی سرنگ(مائن) بلاسٹ میں کرناٹکا سے تعلق رکھنے والے بی ایس ایف کے دو جوان ہلاک ہوگئے ہیں۔

موصولہ رپورٹ کے مطابق ہلاک ہونے والے سپاہیوں کی شناخت کار وار کے وجیا نندا سریش نائک (29سال) اورخانہ پور بیلگاوی کے سنتوش لکشمن گروا کے طور پر کی گئی ہے۔ 

موصولہ تفصیلات کے مطابق کانکیر ضلع میں بارڈر سیکیوریٹی فورس کی آٹھ ٹیمیں نکسل وادیوں کے خلاف کارروائی میں مصروف تھی۔جب تالابوڈ نامی علاقے میں نکسل وادیوں کی موجودگی خبر ملی تو بی ایس ایف کی ٹیم 13موٹر سائیکلوں پر اس مقام کے لئے روانہ ہوئی۔ اس قافلے میں چوتھی موٹر بائک پروجیانند اور سنتوش سفر کررہے تھے۔مگر دوران سفر راستے میں نکسل وادیوں کی طرف سے چھپائی گئی بارودی سرنگ پر سے ان کی موٹر بائک گزری اور دھماکہ ہوگیا۔ اس کے نتیجے میں دونوں شدید زخمی ہوگئے۔ علاج کے لئے قریبی اسپتال میں داخل کرنے کے باوجود دونوں کو بچایا نہیں جاسکا۔

کاروار کے وجیا نند کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اس نے چار سال قبل بی ایس ایف میں شمولیت اختیا رکی تھی اور ابھی وہ غیر شادی شدہ تھا۔ جبکہ خانہ پور کے سنتوش گرواپانچ سال پہلے بی ایس ایف میں شامل ہوا تھا۔ گزشتہ سال ہی اس کی شادی ہوئی تھی اور اس کی بیوی چار مہینے کی حاملہ بتائی جاتی ہے۔

کہاجاتا ہے کہ یہ دونوں سپاہی آپس میں جگری دوست تھے اور زیادہ تر ایک دوسرے کے ساتھ رہنا پسند کرتے تھے۔ قدرت کا کھیل دیکھیے کہ دونوں کی موت بھی ایک ساتھ واقع ہوگئی۔

ایک نظر اس پر بھی

بیلتھنگڈی میں غیر قانونی ریت کا ذخیرہ ؛ تحصیلدار کی قیادت میں چھاپہ : کشتیاں ضبط

بیلتھنگڈی تحصیلدار کی قیادت میں تعلقہ کے دھرمستھل ، اجکوری نامی مقام پر چھاپہ مارتے ہوئے افسران نے ندی کنارے جاری غیر قانونی ریت سپلائی کے ذخیرے اور کشتیوں کو ضبط کرلینے کا واقعہ پیش آیا ہے۔

منگلورمیں سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی ریت سپلائی کرنے والی ٹپر لاریاں ضبط

منگلورو جنوبی زون کے اے سی پی ، جنوبی زون راؤڑی نگراں دستہ کے ساتھ مشترکہ طورپر کنکناڑی شہری پولس تھانہ حدود کے پڈیل جنکشن اور پمپ ویل قومی شاہراہ پر سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی طورپر ریت سپلائی کرنےو الی لاریوں کا پتہ چلنے پر سواریوں کو ضبط کرنے کا واقعہ پیش آیا ہے۔

ہوناور شراوتی ندی سے ریت سپلائی کے انتظار میں مزدور، ٹھیکدار اور سواری مالکان :کیا حکومت اس طرف توجہ دے گی ؟

گذشتہ جون سے بند ریت سپلائی ستمبر ختم ہونےکو ہے شروع ہونے کے کوئی آثار نظر نہیں آنے  سے ریت پر انحصار کرنے والے مزدور، سواری مالکان، ٹھیکدار سب پریشان ہیں۔ سرکاری عمارات سمیت کئی پرائیویٹ عمارات کی تعمیر ریت نہیں ملنے کی وجہ سے رکی ہوئی ہیں، ترقی کو گرہن لگاہے۔

مینگلور کے قریب بنٹوال میں نابالغہ کی عصمت دری کی کوشش : تین ملزم گرفتار

چہارم جماعت میں زیر تعلیم نابالغہ کی عصمت دری کی کوشش کئے جانے کا واقعہ بنٹوال تعلقہ پانے منگلورو کے قریب گوڈینبلی میں پیش آیاہے۔ اس سلسلے میں بنٹوال شہری تھانہ پولس نےمعاملے کو لےکر تین ملزموں کو گرفتار کیا ہے۔

یڈیورپا میرے صبر کا امتحان نہ لیں؛ حکومت کو گرانے کی بارہا کوشش بی جے پی کو زیب نہیں دیتی: کمار سوامی کا بیان

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو متنبہ کیا ہے کہ بارہا ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش کرکے وہ ان کے صبر کا امتحان نہ لیں۔اگر یہ کوشش جاری رہی تو یڈیورپا کو اس کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

منگلورمیں سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی ریت سپلائی کرنے والی ٹپر لاریاں ضبط

منگلورو جنوبی زون کے اے سی پی ، جنوبی زون راؤڑی نگراں دستہ کے ساتھ مشترکہ طورپر کنکناڑی شہری پولس تھانہ حدود کے پڈیل جنکشن اور پمپ ویل قومی شاہراہ پر سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی طورپر ریت سپلائی کرنےو الی لاریوں کا پتہ چلنے پر سواریوں کو ضبط کرنے کا واقعہ پیش آیا ہے۔