بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th August 2018, 9:42 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل15؍اگست (ایس او نیوز) بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔

میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ 18-20سال قبل اس پارک کی تجدیدکاری کی گئی تھی۔ خوبصورت پھولوں کے پودے لگاے گئے تھے اور اس پارک کی اچھی طرح دیکھ بھال کے لئے میونسپالٹی کی طرف سے دو مستقل ملازمین کا تقرر کیا گیا تھا۔جس کی وجہ سے یہ پارک عوامی استعمال میں آرہا تھا اور یہاں ہر قسم کی غیر اخلاقی حرکتوں پر روک لگ گئی تھی۔مگر اس کے بعد میونسپالٹی افسران کی بے پروائی اور ٹھیکیدار کی بدعنوانی کی وجہ سے یہ پارک ویران ہوگیا۔ یہاں کے سازوسامان کو زنگ لگ گیاہے۔ پانی کے فوارے سوکھ گئے ہیں۔
یادداشت میں مزید کہا گیا ہے کہ اب پھرتجدید کاری کے نام پر صرف ٹائلس اور بیٹھنے کے بینچ تبدیل کیے گئے ہیں۔سلائڈر اور کھیل کود کے سامان ٹوٹ پھوٹ جانے کے باوجود تجدیدکاری کے نام پراس کے اوپر صرف رنگ چڑھادیا گیا ہے۔سال 2017میں اس پارک کی تجدید کاری کے لئے تقریباً 2لاکھ روپے خرچ کیے گئے تھے۔ اس وقت نیا رنگ و روپ دینے کے نام پر وہاں پرپارک کے نام والاجو کنڑا بورڈ تھا اس میں اردو میں بھی نام لکھا گیا۔لیکن یہ بورڈ ایک سال کے اندر ہی ٹوٹ کر زمین پرآگیا۔

میمورنڈم میں الزام لگایا گیا ہے کہ اب نئے سرے سے اس پارک کی تجدید کاری کے لئے 4.5لاکھ روپے کا منصوبہ بنایاگیا ہے۔جس کے تحت ہونے والا کام انتہائی غیر معیاری ہے اور ابھی سے زیر تعمیر سلائڈر کے اندر سوراخ پڑ گئے ہیں۔اس طرح میونسپل پارک کی تعمیر نو کے نام پر بہت زیادہ بدعنوانی دیکھنے کو مل رہی ہے۔

میمورنڈم میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ اس تعلق سے ضروری تحقیقات کی جائیں۔ اس کے علاوہ میونسپالٹی کے افسران اور انجینئر وغیرہ اس خوبصورت پارک کو بہتر طریقے سے تعمیر کرتے ہوئے عوام کے استعمال کے لائق بنائیں۔ضلع ڈپٹی کمشنر سے گزارش کی گئی ہے کہ اس مسئلے پر سنجیدگی سے دھیان دیں، اور ضروری احکامات جاری کریں۔ 

میمورنڈم میں مزید کہا گیا ہے کہ اگر افسران کی طرف سے اسی طرح بے پروائی اور غفلت کا مظاہرہ ہوتارہا تو پھر عوام کی طرف سے پرزور احتجاج کیا جائے گا۔ اس موقع پر شریکانت نائک، ایشور این نائک، کرشنا نائک، منی پجاری، ویویک نائک ، شری دھر نائک  وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل :میں ہتک آمیز جذبات نہیں رکھتا : پنچایت ممبر کی الزام تراشی کا رکن اسمبلی نے دیا جواب

ہوناور تعلقہ کیلگی نور پنچایت موگلی ائییپا مندر کونکال باہر کرنےکے معاملے میں تعلقہ پنچایت ممبر گنپیا گوڈا کی طرف سےلگائے گئے الزامات کا بھٹکل رکن اسمبلی سنیل نائک نے تحریری دیتے ہوئے کہا ہےکہ میں ایک شریف خاندان سے تعلق رکھتاہوں اور میری پرورش  انہی کے درمیان ہوئی ہے۔ غلط ...

کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ اتھلیٹک مقابلے میں مرڈیشور بینا وئیدیا ڈگری کالج کی طالبات  رنر اپ

ہوناور کے ایس ڈی ایم ڈگری کالج میں منعقدہ  کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے اتھلیٹک کھیل مقابلوں میں مرڈیشور کی بینا وئیدیا کامرس اور سائنس ڈگری کالج کی طالبات نے رنر اپ کا مقام حاصل کیا ہے۔

ایران میں قید ضلع شمالی کینرا کے ماہی گیروں نے رہائی کی اپیل کے ساتھ جاری کیا نیا ویڈیو؛ اُترکنڑا کے ڈپٹی کمشنر نے جلد رہائی کی دی یقین دہانی

ایرانی سمندری حدود کے خلاف ورزی کرنے کے الزام میں دبئی سے ماہی گیری کے لئے نکلنے والے شمالی کینرا کے جن 18افراد کو ایرانی حفاظتی دستے نے گزشتہ تقریباً ساڑھے تین مہینوں سے ’کشتیوں میں قید‘کررکھا ہے ، انہوں نے ایک نیا ویڈیو جاری کرتے ہوئے مجلس اصلاح وتنظیم، دبئی جماعت ، ضلع ...

کْولنگ ٹیکنالوجی میں اہم اختراعات کے تین ملین امریکی ڈالر انعام کا اعلان 

آج نئی دہلی میں دو روزہ گلوبل کْولنگ انوویشن سمٹ کے افتتاحی اجلاس کے دوران معیاری روم ایئر کنڈیشننگ(آر اے سی)کے مقابلے میں پانچ گنا کم ماحولیاتی اثرات کی حامل رہائشی کولنگ ٹیکنالوجی میں اختراع اور ترقی کو ترغیبات فراہم کرنے کے لیے ایک بین الاقوامی مسابقہ گلوبل کولنگ پرائز کا ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

مدھیہ پردیش : اقتدار میں آئے تو سرکاری دفاتر میں نہیں ہوگی آر ایس ایس کی نشست ، ملازمین پر بھی پابندی

مدھیہ پردیش میں انتخابی ماحول گرم ہے۔ سیاسی پارٹی ووٹروں کو لبھانے کے لئے زور شور سے تشہیر میں مصروف ہیں۔ تمام طرح کے وعدے کئے جا رہے ہیں۔ اس دوران کانگریس نے اپنا منشور جاری کر دیا ہے۔