بھٹکل میونسپالٹی عمارت پر توڑ پھوڑ کا معاملہ؛ سنگھ پریوار کے کارکنوں کی گرفتاری کے خلاف انکولہ میں احتجاج۔ بھٹکل چلو ریالی کا اعلان

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 21st September 2017, 9:25 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

انکولہ 21؍ستمبر (ایس او نیوز)بھٹکل میں بلدیہ عمارت پر حملے کے بعد توڑ پھوڑ اور سرکای عمارت کو نقصان پہنچانے کے الزام میں جہاں ایک طرف پولیس متعلقہ افراد کو گرفتار کررہی ہے، وہیں پر ضلع کے مختلف مقامات پر اسے ہندو مسلم تفرقہ کا رنگ دیتے ہوئے پولیس پر الزام لگایا جارہا ہے کہ وہ بلاوجہ ہندوؤں کو ہراساں کررہی ہے اور اس کے لیڈروں کو گرفتار کر رہی ہے۔ 

پولیس کارروائیوں کے خلاف تازہ احتجاج انکولہ میں  ہندو شدت پسندتنظیموں کی طرف سے کیا گیا اور دوکاندار رامچندرا نائک کی خودکشی کے لئے ٹی ایم سی کے افسران کو ہی ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے کڑی مذمت کی گئی۔ بی جے پی ضلع یووا مورچہ کے صدر منجو ناتھ جنّو نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ بھٹکل میں کچھ لوگ ایک ایک دکان کا کرایہ ڈیڑھ لاکھ روپے تک ادا کررہے ہیں۔ اسے دیکھ کر سوال پیدا ہوتا ہے کہ ان دکانوں میں کیا چیز فروخت ہوتی ہوگی اور کیا وہاں کچھ دوسری سرگرمیاں تو نہیں چل  رہی ہیں۔ اس بات کی تحقیقات ہونی چاہیے۔منجو ناتھ نے کہا کہ جس طرح منگلورو چلو ریالی منعقد کی گئی تھی اسی انداز میں اب بی جے پی یووا مورچہ کی طرف سے بھٹکل چلو ریالی کا انعقاد ہوگا۔

خیال رہے کہ گذشتہ سال اگست میں میونسپالٹی دکانوں کو ائوکشن کے ذریعے نیلام کیا گیا تھا جس میں ایک چھوٹی سی دکان کا کرایہ چھ سو سے بڑھتے بڑھتے ایک لاکھ 800 روپیہ تک پہنچ گیا تھا۔ یہ بات الگ ہے کہ اس دکان کو حاصل کرنے والا پرانا ہی کرایہ دار منجوناتھ شیٹ ہے، جس کے بارے میں غالباً بی جے پی اور سنگھ پریوارکے لوگ انجان ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی اور سنگھ پریوار کے احتجاج اور تشدد کے چلتے بالاخر کرناٹک سرکار کا ہوناور کے پریش میستا کی موت کا معاملہ سی بی آئی کے حوالے کرنے کا اعلان

ریاست میں کافی بحث کا موضوع بنے ہوناور کے پریش میستا کی موت کی گتھی سلجھانے کے لئے بالاخر اب ریاستی حکومت نے   اس  معاملے کو سی بی آئی کے ذریعہ تحقیق کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ رام لنگا ریڈی  نے کہا کہ سچائی کو منظر عام پر لانے کے لئے ...

ضلع اُتر کنڑا میں وہاٹس ایپ پر اشتعال انگیزپیغامات پوسٹ کرنے پر 28 معاملات درج

ہوناور میں ایک نوجوان کی ہلاکت کے بعدبی جے پی اور سنگھ پریوار کی حمایت میں  اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف سوشیل میڈیا پر اشتعال انگیز پیغامات روانہ کئے جارہے تھے، ساتھ ساتھ سوشیل میڈیا کے ذریعے مختلف علاقوں میں بند منائے جانے اور احتجاج کے پیغامات پھیلائے جارہے تھے، جس پر ...

ہوناور پریش میستا کی موت کا معاملہ؛ وہاٹس ایپ پراشتعال انگیز افواہیں پھیلانے کے الزام میں ہائی اسکول ٹیچر گرفتار

ہوناور فساد کے پس منظر میں سوشیل میڈیا اور خاص کر وہاٹس ایپ پر افواہیں پھیلا کر ماحول خراب کرنے کے الزام میں کاروار کے ایک ہائی اسکول ٹیچر کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔

ضلع اُتر کنڑا میں وہاٹس ایپ پر اشتعال انگیزپیغامات پوسٹ کرنے پر 28 معاملات درج

ہوناور میں ایک نوجوان کی ہلاکت کے بعدبی جے پی اور سنگھ پریوار کی حمایت میں  اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف سوشیل میڈیا پر اشتعال انگیز پیغامات روانہ کئے جارہے تھے، ساتھ ساتھ سوشیل میڈیا کے ذریعے مختلف علاقوں میں بند منائے جانے اور احتجاج کے پیغامات پھیلائے جارہے تھے، جس پر ...

ہوناور پریش میستا کی موت کا معاملہ؛ وہاٹس ایپ پراشتعال انگیز افواہیں پھیلانے کے الزام میں ہائی اسکول ٹیچر گرفتار

ہوناور فساد کے پس منظر میں سوشیل میڈیا اور خاص کر وہاٹس ایپ پر افواہیں پھیلا کر ماحول خراب کرنے کے الزام میں کاروار کے ایک ہائی اسکول ٹیچر کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔

امن کے باغ میں تشدد کا کھیل کس لئے؟ خصوصی اداریہ

ضلع شمالی کینر اکو شاعرانہ زبان میں امن کا باغ کہا گیا ہے۔یہاں تشدد کے لئے کبھی پناہ نہیں ملی ہے۔تمام انسانیت ،مذاہب اور ذات کامائیکہ کہلانے والی اس سرزمین پر یہ کیسا تشددہے۔ ایک شخص کی موت اور اس کے پیچھے افواہوں کا جال۔پولیس کی لاٹھی۔ آمد ورفت میں رکاوٹیں۔ روزانہ کی کمائی سے ...

سرسی فساد کے9 ملزمین کی ضمانت پر رہائی؛ 62کو بھیجا گیا عدالتی حراست میں

سرسی فساد کے پس منظر میں جن ملزمین کو حراست میں لیا گیا تھا ان میں ایم ایل اے وشویشور ہیگڈے کاگیری سمیت  9 ملزمین کو ضمانت پر رہا کردیا گیا جبکہ 62 ملزمین کو عدالتی حراست میں دھارواڑ جیل بھیج دیا گیا ہے۔