فروری میں 133 فلسطینی مسجد اقصیٰ سے بے دخل کیے گئے، تیرہ سال قید رہنے والا فلسطینی رہائی کے 10 دن بعد پھر گرفتار.... فلسطین کی مزید خبریں

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 6th March 2019, 6:57 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

مقبوضہ بیت المقدس 6 مارچ ( آئی این ایس انڈیا ) القدس میں قائم وادی حلوۃ انفارمیشن سینٹر کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ فروری 2019 کے دوران اسرائیلی فوج اور پولیس کی فول پروف سکیورٹی میں 2 ہزار کے قریب یہودی آباد کاروں نے مسجد اقصیٰ میں گھس کر مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔وادی حلوہ انفارمیشن سینٹر کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ ماہ صہیونی حکام کی طرف سے فلسطینیوں کی مسجد اقصیٰ کی جبری بے دخلی 17 بچوں سمیت 133 فلسطینیوں کو مسجد اقصیٰ سے بے دخل کیا گیا۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ قبلہ اول پر دھاوے بولنے والے یہودی آباد کاروں میں 520 یہودی مذہبی اداروں کے طلباء ، اسرائیلی وزیر زراعت اوری ارئیل اور یہودی انتہا پسند رکن کنیسٹ یہودا گلیک شامل ہیں۔

گذشتہ ماہ یہودی آبادکاروں کی طرف سے قبلہ اول پر دھاووں میں اضافہ دیکھا گیا۔ فلسطینیوں نے 16 سال سے بند باب رحمت میں نماز کی ادائیگی  کرکے 16 سال سے بند اس مقام کو کھلوالیا۔اسرائیلی فوج نے گذشتہ ماہ بیت المقدس سے 229 فلسطینیوں کو حراست میں لیا۔ ان میں 170 فلسطینیوں کو 18 سے 28 فروری کے درمیان باب الرحمت میں کشیدگی کے دوران گرفتار کیا گیا۔گرفتار فلسطینیوں میں 43 بچے اور 2 خواتین بھی شامل ہیں۔گذشتہ ماہ گرفتار ہونے والے فلسطینیوں میں القدس کی اسلامی اوقاف کونسل کے چیئرمین عبدالعظیم سلھب، ان کے نائب ناجح بکیرات، القدس کے فلسطینی گورنر عدنان غیث اور کئی دیگر سرکردہ رہنماؤں حراست میں لے لیا۔

اسلامی جہاد کے رہ نما الشیخ خضر عدنان اسرائیلی جیل سے رہا
قابض صہیونی جیلوں میں طویل بھوک ہڑتالوں کی وجہ سے مشہور اسلامی جہاد کے رہ نما الشیخ خضر عدنان کو رہا کردیا۔ صہیونی حکام نے الشیخ خضر عدنان کو جنین شہر الجلمہ چوکی پر لایا جہاں سے انہیں ان کے اقارب اور جماعت کے رہ نماؤں نے استقبال کی شکل میں ان کے آبائی علاقے عرابہ لایا گیا۔الشیخ خضرعدنان کے استقبال کے لیے ان کی رہائش گاہ پر شہریوں کی بڑی تعداد جمع تھی۔خیال رہے کہ الشیخ خضرعدنان کو اسرائیلی فوج نے چند ہفتے قبل ایک ہزار شیکل جرمانہ وصول کرنے کے بعد رہا کیا تھا۔الشیخ خضر عدنان کو اسرائیلی فوج بار بار گرفتار کرتی اور انہیں بلا جواز قید میں ڈالتی ہے۔ وہ اپنی بڑی اور گھنی داڑھی کے ساتھ اسرائیلی اسرائیلی جیلوں میں طویل بھوک ہڑتالیں کرنے کی وجہ سے بھی شہرت رکھتے ہیں۔

تیرہ سال قید رہنے والا فلسطینی رہائی کے 10 دن بعد گرفتار
قابض صہیونی فوج نے 17 سال تک پابند سلاسل رہنے والے ایک فلسطینی کو رہائی کے 10 دن بعد دوبارہ حراست میں لے لیا۔سابق اسیر عبدالرحمان محمود کو عوفرحراستی مرکز میں طلب کیا اور اسے تین گھنٹے تفتیش کے بعد جیل منتقل کردیا گیا ہے۔مقامی فلسطینی ذرائع کا کہنا ہے کہ اسیر محمود کو آئندہ منگل تک حراست میں رکھنے اور اسے عدالت میں پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔خیال رہے کہ اسیر عبدالرحمان محمود کو اسرائیلی فوج نے 10 روز قبل 17 سال پابند سلاسل رہنے کے بعد حراست میں لے لیا تھا۔

غرب اردن میں کشیدگی، اسرائیلی اخبار نے خطرے کی گھنٹی بجا دی
اسرائیل کے مؤقر اخبار’ہارٹز‘ نے اپنی رپورٹ میں خبردار کیا ہے کہ دریائے اردن کے مغربی کنارے کے علاقوں میں کشیدگی میں اضافے کا خدشہ ہے اور فلسطینیوں میں پایا جانے والا غم وغصہ آتش فشاں بن کر پھٹ سکتا ہے۔اسرائیلی اخبار نے اپنی رپورٹ میں خبردار کیا ہے کہ اسرائیل کے سیکیورٹی اداروں نے حکومت کو غرب اردن میں پائی جانے والی کشیدگی کے حوالے سے خبردارکیا ہے۔اخباری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اسرائیلی سیکیورٹی اداروں نے خبردار کیا ہے کہ انتخابات کے دباؤ میں اسرائیلی حکومت نے غرب اردن کے فلسطینیوں کے خلاف جو اقدامات کیے ہیں ان کے رد عمل میں غرب اردن میں کشیدگی بڑھ سکتی ہے۔سیکیورٹی اداروں کی طرف سے کہا گیا ہے کہ فلسطینیوں کے ٹیکسوں کی رقوم روکنے کے غرب اردن میں امن وامان کی صورت حال پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔صہیونی فوج کی طرف سے خبردار کیا ہے کہ مسجد اقصیٰ میں پائی جانے والی کشیدگی آسانی کے ساتھ غرب اردن کے علاقوں میں کشیدگی پیدا کرسکتی ہے۔اسرائیلی اخبار کے مطابق فلسطینی اتھارٹی موجودہ حالات میں فلسطینی اسیران کے خاندانوں کی رقوم روکنے کی اہل نہیں اگر فلسطینی اتھارٹی ایسا کرتی ہے تو اس کے نتیجے میں غرب اردن کی سلامتی کو خطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔ 

مصر کے ساتھ تعلقات ’تزویراتی مکالمہ‘ کے دور میں داخل ہوگئے ہیں: ھنیہ
حماس کے سیاسی شعبے کے سربراہ اسماعیل ھنیہ نے کہا ہے کہ ان کی جماعت اور مصر کے درمیان اعتماد سازی مزید اگلے مرحلے میں داخل ہوگئی ہے۔ اب حماس اور مصر کے درمیان تعلقات تزویراتی ڈائیلاگ کے دور میں داخل ہوگئے ہیں۔اسماعیل ھنیہ غزہ میں ایک تفصیلی کانفرنس سے خطاب میں کہا کہ انہوں نے حالیہ دورہ مصر کے دوران مصری قیادت سے دو طرفہ تعلقات، غزہ کی پٹی کیعوام کو درپیش مشکلات،فلسطینی دھڑوں میں مصالحتی کوششوں، غزہ کی معاشی ناکہ بندی کے خاتمے اور دیگر امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔اسماعیل ھنیہ نے تفصیلی پریس کانفرنس میں اپنے دورہ مصر، فلسطین کی تازہ ترین صورت حال اور عرب ممالک میں ہونے والی پیش رفت کے قضیہ فلسطین پر اثرات کا جائزہ لیا گیا۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ عرب ممالک کے ذرائع ابلاغ قضیہ فلسطین کو خاطر خواہ کوریج دے رہے ہیں اور قضیہ فلسطین عرب ذرائع ابلاغ پر گہرے اثرات مرتب کررہاہے۔حماس رہ نما نے فلسطینی ذرائع ابلاغ میں قومی قضیے اور تحریک آزادی اور مزاحمت کیحوالے سے ہونے والی کوششوں کو سراہا۔ ان کا کہنا تھا کہ فلسطینی ذرائع ابلاغ نے حالیہ ایام میں مسجد اقصیٰ، مقبوضہ بیت المقدس اور باب رحمت میں صہیونیوں کی غنڈی گردی کو بھرپور کوریج دی، جس کے نتیجے میں عالمی سطح پر صہیونی ریاست کو شرمندگی کا سامنا کرنا پڑا۔ان کا کہنا تھا کہ حماس اور مصر کے درمیان تعلقات تیزی کے ساتھ پروان چڑھ رہے ہیں۔ حماس اور مصر کے درمیان تعلقات تزویراتی ڈائیلاگ کے دور میں داخل ہوگئے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں اسماعیل ھنیہ کا کہنا تھا کہ مصری انٹیلی جنس کے چیف جنرل عباس کامل اور ملٹری انٹیلی جنس کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں مصر کے فلسطینیوں کے حقوق کے خلاف ڈاکہ ڈالنے کے پروگرام صدی کی ڈیل کے بارے میں تفصیلی بات چیت کی گئی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سری لنکا: مسلم مخالف فسادات میں ایک شخص ہلاک، مساجد کو نقصان

حکومتی وزیر رؤف حکیم کے مطابق مسلم مخالف فسادات میں ایک مسلمان ہلاک ہو گیا ہے جبکہ مسلمانوں کی املاک کو بھی نذر آتش کرنے کے واقعات سامنے آئے ہیں۔ رؤف حکیم کا تعلق مسلم کانگریس نامی سیاسی جماعت سے ہے۔ یہ سیاسی پارٹی حکومتی اتحاد میں شامل ہے۔ حکیم کے مطابق مشتعل افراد نے پیر تیرہ ...

بنگلور میں 23/ مئی کو ووٹوں کی گنتی کے دوران امتناعی احکامات نافذ

23 مئی کو لوک سبھاانتخابات کے نتائج کا اعلان ہورہا ہے۔ انتخابات کے نتائج ظاہر ہونے کے مرحلے میں کوئی ناخوشگوار صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے شہر کے پولیس کمشنر سنیل کمار نے 23مئی کی صبح چھ بجے سے شہر بھر میں امتناعی احکامات نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔

بلدی انتخابات کے لئے 5945 نامزدگیاں داخل

ریاست بھر کے بلدی اداروں کے لئے 29 مئی کو ہونے والے انتخابات میں حصہ لینے کے لئے نامزدگیوں کے اندراج کی تاریخ کل ختم ہونے کے بعد جملہ 5945 نامزدگیاں داخل کی گئی ہیں۔

مودی کی اقتدار میں واپسی کے تمام راستے بند: راہل گاندھی

 کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے حزب اختلاف کے طور پر کانگریس کی کارکردگی کو کامیاب بتاتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ پانچ برسوں کے دوران پارٹی نے مؤثر طریقہ سے عوام کے مسائل کو اٹھایا ہے اور وزیر اعظم نریندر مودی کو دوبارہ اقتدار میں آنے سے روکنے کے لئے ان کے تمام راستے بند کر دئے گئے ...