یلاپور ضمنی انتخاب:سپریم کورٹ کا فیصلہ نہیں آنے سے  شیورام ہیبار اور ان کے حمایتی الجھن کا شکار

Source: S.O. News Service | Published on 24th September 2019, 6:08 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

یلاپور 24/ستمبر (ایس او نیوز) کانگریس پارٹی سے استعفیٰ دے کر مخلوط حکومت گرانے کاسبب بننے اور اسپیکر کی طرف سے نااہل قرار دئے جانے والے یلاپور ایم ایل اے شیورام ہیبار اور ان کے حمایتی تشویش اور الجھن میں مبتلا ہوگئے ہیں، کیونکہ سپریم کورٹ کا فیصلہ آنے میں تاخیر ہونے کی وجہ سے ان کا سیاسی مستقبل یونہی ہوا میں معلق ہوکر رہ گیا ہے۔

بی جے پی میں شمولیت اور وزارتی قلمدان کے لالچ میں جن اراکین اسمبلی نے اپنا سیاسی مستقبل داؤ پر لگایا تھا ان میں شیورام ہیبار بھی شامل ہیں۔ نااہلی کے سلسلے میں تاحال سپریم کورٹ کا فیصلہ نہیں آنے سے ان کے لئے کوئی بھی قدم اٹھانا ممکن نہیں ہے۔ضمنی انتخاب کا اعلان ہوچکا ہے۔ شیورام ہیبار کے لئے بی جے پی داخلہ فی الحال ممکن نہیں ہے۔ کانگریس اور جنتا دل کے دروازے ان پر بند ہوچکے ہیں۔ ایسے وہ کیا کریں گے اور ان کے حمایتی اب کس کا ساتھ نبھائیں گے، اس سوال کا جواب نہیں مل رہا ہے۔زمینی حقائق کی بات کریں تو منڈگوڈ اور یلاپور کے علاقے میں شیورام ہیبار کو چاہنے والوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے۔اس حلقے میں کانگریس پارٹی کو مستحکم کرنے میں بھی ان کا بڑا اہم کردار رہا ہے۔علاقے کے کانگریسی لیڈروں پر ان کی پکڑ بھی مضبوط تھی۔ اسی وجہ سے جب شیورام ہیبار نے کانگریس سے استعفیٰ دیا تو بلاک کانگریس صدر اوردیگر مضافاتی یونٹس کے ذمہ داران شیورام ہیبار کی حمایت میں کھڑے ہوگئے تھے۔ ہیبار کو نااہل قرار دئے جانے کے بعدد کانگریس پارٹی نے ان کی حمایت کرنے والے پارٹی کے کئی ذمہ داروں کو ان کے عہدے ہٹا کر نئے لوگوں کو اس مقام پر بٹھا دیا ہے۔

 شیورام ہیبار کے حمایتی اس وجہ سے بھی کچھ مایوس دکھائی دے رہے ہیں کہ ہیبار کو بی جے پی میں شامل کرنے اور انتخابی اکھاڑے میں اتارنے کا موقع ہاتھ سے نکل جانے کے بعد شیورام کے بیٹے ویویک کو ٹکٹ دینے یا کوئی بڑا عہدہ دینے کے بارے میں بھی بی جے پی کی طرف سے کوئی اشارہ نہیں کیا جارہا ہے۔ لیکن اب بھی بہت سے حمایتیوں کی نظر سپریم کورٹ پر لگی ہوئی ہے اور وہ سوچ رہے ہیں کہ30 ستمبر سے قبل شاید سپریم کورٹ کا فیصلہ نااہل قرار دئے گئے اراکین اسمبلی کے حق میں آجائے گا اور شیورام ہیبار ہی بی جے پی کے ٹکٹ پر یلاپور حلقے سے امیدوار بنادئے جائیں گے۔

 اس دوران منڈگوڈ سے ملنے والی ایک خبر کے مطابق جنگلاتی زمین پر قبضہ داروں کے حقوق کے لئے جدوجہد کرنے والی اتی کرم ہوراٹا سمیتی کے ضلع صدر ویندرا نائک پر اتی کرم داروں کی طرف سے دباؤ بنایا جارہا ہے کہ وہ یلاپور حلقے سے الیکشن لڑیں تاکہ سیاسی قوت کے ساتھ وہ جنگلاتی زمین کے قبضہ داروں کو انصاف دلانے میں کامیاب ہوسکیں۔منڈگوڈ علاقے کے اتی کرم داروں کا احساس ہے کہ برسہابرس سے جنگلاتی زمین پر رہائش اور کھیتی باڑ ی کرنے والے ہزاروں افراد کے مسائل حل کرنے اورانہیں اپنے حقوق دلانے کے لئے رویندرا نائک کا انتخاب لڑنا بہت ہی بہتر ہوگا۔

دوسری طرف سرکاری طور پر یلاپور حلقے کے لئے انتخابی تیاریاں شروع ہوگئی ہیں۔ محکمہ زراعت کے جوائنٹ ڈائریکٹر ہونپّا گووندا گوڈا کو ضمنی انتخاب کے لئے الیکشن آفیسر مقرر کیا گیا ہے۔ تحصیلدار ڈی جی ہیگڈے معاون الیکشن آفیسر ہونگے۔نامزدگی فارم 23ستمبر سے تحصیلدار دفتر میں قبول کیے جانے کا اعلان کیا گیا ہے۔ 30ستمبر کو سرکاری تعطیل ہے اس دن کو چھوڑ کر بقیہ دنوں میں صبح 11بجے سے 3بجے تک نامزدگی فارم قبول کیے جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

منکی اور مرڈیشور کے ساحل اور محمد حیات کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کے کرکٹ یونیورسٹی بلیو منتخب

کھیل کے میدان میں بھٹکل اور اطراف کے کھلاڑیوں کا یونیورسٹی بلیو منتخب ہونا عام ہوتاجارہا ہے، تازہ خبر یہ ہے کہ  پڑوسی علاقہ منکی اور مرڈیشور سے تعلق رکھنےو الے دونوجوان کرکٹ میں کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کی کرکٹ ٹیم کے لئے  منتخب ہوگئے ہیں

مینگلور کے قریب پتورمیں ایک بزرگ مرد اور نوجوان لڑکی کا دوہرا قتل۔ مقتول بزرگ کی اہلیہ شدید زخمی

قریبی علاقہ  پتور کے ہوسمار علاقے میں ایک وحشت ناک دوہرے  قتل کی واردات پیش آئی ہے جس میں کوگّو صاحب (65 سال) اور ان کی نواسی سمیحہ بانو(16سال) جاں بحق ہوگئے ہیں جبکہ کوگّو صاحب کی اہلیہ خدیجہ بی(۵۵سال) شدید زخمی ہوگئی ہیں اور انہیں زندگی اور موت کی کیفیت میں علاج کے لئے اسپتال میں ...

شیواجی نگر حلقے سے کانگریس کا راست مقابلہ بی جے پی سے عوام کو حلقے کی فلاح کے حق میں فیصلہ لینا ہوگا۔ انتشار سے فرقہ پرست بی جے پی کو فائدہ ہوگا: رضوان ارشد

یواجی نگر اسمبلی حلقہ جو ان اسمبلی حلقوں میں شامل ہے جس کے اراکین اسمبلی نے بی جے پی کے آپریشن کنول کا حصہ بن کر اپنی رکنیت سے استعفیٰ دیا اور نا اہل قرار پائے اس حلقے میں 5دسمبر کو ضمنی انتخابات کے لئے تینوں اہم سیاسی جماعتوں سے امیدوار میدان میں آچکے ہیں۔

بیدر میں گرلزاسلامک آرگنائزیشن کی جانب سے یومِ اُردو کا انعقاد؛ ”ایک قدم...اُُردو کی بقاء ترقی و ترویج کیلئے“

گرلز اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا کرناٹک (بیدریونٹ) کی جانب سے یومِ اُردو بعنوان ”ایک قدم...اُردو کی بقا ء ترقی و ترویج کیلئے“کا انعقاد بیدر میں منعقد ہوا  جس میں مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے محترمہ ڈاکٹر سرورعرفانہ سی آر پی بھا لکی محکمہ تعلیمات عامہ بیدر نے کہا کہ ...