مکینوں کی طرف سے انڈر پاس کی تعمیر کے منصوبہ کا خیر مقدم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 1st September 2018, 12:16 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، یکم ستمبر(ایس او نیوز) بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) نے یشونت پور ریلوے اسٹیشن کے قریب واقع پائپ لائن روڈ کو متی کیرے میں جے پی پارک سے جوڑ نے کے لئے ایک انڈر پاس کی تعمیر کا منصوبہ تیار کیا ہے جو ان دونوں ہی علاقوں میں مقیم مکینوں کو بڑی راحت فراہم کرنے والا ہے۔

اس وقت چونکہ ان دونوں علاقوں بالخصوص ٹمکور روڈ اور متی کیرے کے درمیان براہ راست رابطہ نہیں پایا جاتا، دونوں ہی علاقوں کے مکینوں کو ان تک پہنچنے کے لئے تقریباً چھ کلو میٹر کا سفر کرنا پڑتا ہے۔گاڑی سوار ایک جگہ سے دوسری تک جانے کے لئے اس وقت مین روڈ کا استعمال کر تے ہیں جو پورے چھ کلو میٹر طویل ہے، اگر یہ انڈر پاس تعمیر ہو جاتا ہے تو یہ فاصلہ صرف ایک یا دو کلو میٹر کا ہو کر رہ جائے گا، اس کے علاوہ ریلوے ٹریک کو پار کرنے کی بھی پریشانی نہیں ہوگی، واضح رہے کہ اس راستہ پر بہت سارے حادثات ہوتے رہتے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ بی بی ایم پی نے ، اس علاقہ میں آبادی کے اضافہ کو ذہن میں رکھتے ہوئے انڈر پاس کی تعمیر کا منصوبہ تیار کیا ہے۔بی بی ایم پی کے مئیر سمپت راج، کمشنر این منجو ناتھ پرساد اور رکن اسمبلی منی رتھنا نے یشونت پور ریلوے اسٹیشن کے قریب اس مقام کا حال ہی میں دورہ کیا تھا۔اکثر اس راستہ پر سفر کرنے والے چندرا شیکھر کا کہنا ہے کہ ’’گولڈن گرانڈ اپارٹمنٹ کو موہن کمار روڈ سے جوڑنے والے انڈر پاس کی تعمیر یقیناًہمارے لئے مدد گار ثابت ہو سکتی ہے، راستہ کی طوالت سے بچنے کے علاوہ ایک اور بڑا مسئلہ ہمارے لئے ٹریفک کے سگنل اور ٹریفک اژدھام ہوتا ہے‘‘۔ایک اور گاڑی سوار راجو نے بتایا کہ ’’بی بی ایم پی نے آحر کار انڈر پاس کی تعمیر کا منصوبہ تیار کر لیا ہے ، یہ انتہائی ضروری تھا۔متعلقہ افسران کو چاہئے کہ عوام کی سہولت کے پیش نظر اس کام کو جلد سے جلد مکمل کر لیں‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

نظام الدین کے اجتماع میں شریک حضرات جانچ کروالیں: اقلیتی بہبود کے سکریٹر اے بی ابراہیم کی اپیل

ریاستی محکمہ اقلیتی بہبود کے سکریٹر اے بی ابراہیم نے اپنے ایک اخباری بیان میں تبلیغی مرکز نظام الدین کے اجتماع میں مارچ کے دوران شرکت کرنے الوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے ضلع یا تعلقہ میں محکمہ صحت سے رابطہ کر کے اپنی جانچ کروالیں۔

کرناٹک سے درجنوں افراد نے مرکز نظام الدین کے اجتماع میں شرکت کی؛ کورونا سے ایک کی موت، باقی کی نشاندہی کر کے کورانٹائن، 13/ افراد میں وائرس نہ ہونے کی تصدیق

دہلی کے مرکز نظام الدین میں 10/ مارچ کو ہوئے اجتماع میں شریک افراد میں سے 24 کے کورونا وائرس کا شکار ہوجانے اور ان میں سے6/افراد کی موت کی خبروں کے بعد اس مرکز کے اجتماع میں شرکت کے بعد اپنے اپنے مقامات پر لوٹنے والے افراد کی نشاندہی کر کے انہیں کورانٹائن کرنے کا سلسلہ شروع ہوا ہے۔

بھٹکل: کوروناوائرس کی روک تھام اور لاک ڈاون میں مزید سختی برتنے اب اُڑائے جائیں گے ڈرون کیمرے؛ گلی کوچوں میں آوارہ گردی کرنے والے ہوشیار

صرف کرناٹک ہی نہیں بلکہ ملک بھر میں بھٹکل کو لے کر تشویش پائی جارہی ہے کیونکہ  اتنے چھوٹے سے علاقہ میں  کورونا وائرس سے متاثرہ لوگوں کی تعداد  بڑھتی جارہی ہے۔چونکہ یہاں کے اکثر لوگ بیرون ممالک میں رہتے ہیں، اس لئے یہ وائرس دوسرے ملکوں سے یہاں آرہی ہے۔  ہمیں دہلی سے فون بھی ...