’وادیٔ گلوان میں ہمارے فوجی بھی مارے گئے تھے‘، چین کا اعتراف

Source: S.O. News Service | Published on 18th September 2020, 9:19 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

بیجنگ،18؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) چین نے بالآخر یہ اعتراف کرلیا ہے کہ لداخ میں حقیقی کنٹرول لائن (ایل اے سی) کے قریب وادیٔ گلوان میں 15 جون کو ہندوستانی فوج کے ساتھ پرتشدد جھڑپ میں اس کے فوجی بھی مارے گئے تھے۔

وادیٔ گلوان میں کتنے چینی فوجی مارے گئے تھے اس بارے میں سرکاری تفصیلات ابھی تک سامنے نہیں آسکی ہیں ، لیکن ’گلوبل ٹائمز‘ نے پہلی بار چینی فریق کے نقصان کا اعتراف کیا ہے۔ اس سے قبل وہ اپنے فوجیوں کی ہلاکت کی خبروں کو مسترد کرتا رہا تھا۔

چین کی کمیونسٹ پارٹی کا ترجمان اخبار ’گلوبل ٹائمز‘ کے ایڈیٹر ہو شی جن نے اعتراف کیا کہ وادیٔ گلوان میں ہونے والے تنازع میں چینی پیپلز لبریشن آرمی (پی ایل اے) کے فوجی بھی مارے گئے ہیں۔ انہوں نے جمعرات کو ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا ’’ہمارے فوجیوں کا بھی جانی نقصان ہوا۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ مشرقی لداخ میں ایل اے سی پر پرتشدد جھڑپوں کے سبب وادی گلوان میں حالات کشیدہ ہیں۔ خیال رہے ہندوستان چین کے درمیان کشیدگی کو کم کرنے کیلئےبدھ کے روز تین گھنٹوں تک مذاکرات جاری رہے ، جو نتیجہ خیز نہیں ثابت نہیں ہوئے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا متاثرین کی تعداد تقریباً 80 لاکھ

ملک میں اتوار کے روز کورونا وائرس ’کووِڈ۔19‘ وبا سے متاثرین کی تعداد تقریباً 80 لاکھ یعنی 79,07,321 ہو گئی ہے لیکن راحت کی بات یہ ہے کہ متاثرین کے مقابلے صحتیاب ہونے والوں کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

زرعی قانون کے خلاف وجے دشمی پر پی ایم مودی، اڈانی اور امبانی کا کسانوں نے جلایا مجسمہ

زرعی قوانین کے خلاف پنجاب میں وجے دشمی کے موقع پر کسانوں کے ذریعہ وزیر اعظم مودی، اڈانی اور امبانی کے مجسموں کو نذر آتش کرنے کے بارے میں ایک رپورٹ شیئر کرتے ہوئے کانگریس کے رہنما راہل گاندھی نے کہا کہ "یہ کل پورے پنجاب میں ہوا۔

بہار کے عوام کو مفت ویکسین، تو کیا ہم بنگلہ دیشی ہیں؟: ادھو ٹھاکرے

 شیو سینا کی 66 سالہ تاریخ میں پہلی بار کسی دوسری جگہ منعقد کی گئی دسہرہ ریلی سے خطاب کے دوران مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ اور شیو سینا کے سربراہ ادھو ٹھاکرے نے وزیر اعظم نریندر مودی پر براہ راست اور سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ "بہار کے عوام کو مفت ویکسین کی تقسیم، تو کیا ہم ...

انتخابی اشتہارات: ٹرمپ اور بائیڈن کی مہمات کیسے مختلف ہیں؟

امریکہ میں ری پبلکن جماعت کے صدارتی امیدوار ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے حریف جو بائیڈن نے فیس بک اور انسٹا گرام پر اشتہارات چلانے کے لیے 100 ملین ڈالر استعمال کیے ہیں۔ یہ رقم تین نومبر کے صدارتی انتخاب کے لیے دونوں جانب سے جون سے اب تک خرچ کی گئی ہے۔