انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے انتخابات، سرپرست سمیت 81 اراکین کے ناموں کا اعلان؛ 15فروری کو ہوگی پہلی میٹنگ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 13th February 2020, 10:18 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 13/فروری (ایس او نیوز) 96 اراکین انتظامیہ پر مشتمل قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے اب تک 81 اراکین کے ناموں کا اعلان ہوچکا ہے جس میں گیارہ سرپرست بھی شامل ہیں۔ الیکشن کمشنر جناب اسحاق شاہ بندری نے بتایا کہ  فی الحال عمان سے دو اراکین کا انتخاب ہونا باقی ہے، اسی طرح پہلی انتظامیہ میٹنگ میں دس اراکین کا انتخاب ہوگا جبکہ عہدیداران کے انتخاب کے بعد صدر صاحب کو مزید تین اراکین کو انتظامیہ میں شامل کرنے کا اختیار ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ  دیگر تمام شہروں اور علاقوں میں جہاں جہاں انجمن کے اراکین موجود ہیں، ممبران  کا انتخاب ہوچکا ہے۔

الیکشن کمشنر کی جانب سے جن 81 ناموں کی لسٹ جاری کی گئی ہے، اُس کی تفصیل کچھ اس طرح ہے:

تحلیل شدہ انتظامیہ میں سے  دس اراکین کا انتخاب کیا گیا تھا، جن کے نام یہ ہیں: محمد آصف دامودی، محمد محسن شاہ بندری، ڈاکٹر محمد زُبیر کولا، ڈاکٹر سید سلیم ایس ایم، سید احمد پرویز ایس ایم، سید عبدالرحمن باطن ایس ایم،  عبدالواجد کولا، مولوی محمد طلحہ رکن الدین ندوی، محمد آفتاب قمری، محمد اسحاق شاہ بندری۔

بھٹکل میں جو عام انتخابات ہوئے تھے، اُس میں 23 اراکین کا انتخاب عمل میں آیا تھا، جن کے نام یہ ہیں:  ایڈوکیٹ محمد مزمل قاضیا، عبدالرحیم جوکاکو، محمد صادق پلور، سید ہاشم ایس جے، برہان کوکاری کے ایم،  سلمان احمد جوباپو، محمد احید محتشم، مولوی محمد شفیع ملپا قاسمی، مولانا محمد امین رکن الدین ندوی، اسماعیل صدیق، حافظ ارشاد احمد صدیقی ندوی، محمد اسماعیل جوباپو، ایڈوکیٹ نہزان ائیکری،  عنایت اللہ شاہ بندری، عبدالرحمن باشہ رکن الدین پہلوان،  سید عبدالعظیم ایس ایم، محمد زُبیر آرمار، سعداللہ رکن الدین، محمد ارشاد گوائی، رئیس احمد خطیب (بوٹا)، محی الدین رکن الدین کوچو باپا، مُبشر حسین ہلارے، سجاد کولا۔

دبئی سے منتخب ہونے والے اراکین: محمد اشفاق سعدا، محمد یوسف برماور، محمد سمیر کوکاری کے ایم، فیاض احمد کولا، سید سمیر سقاف ایس ایم، محمد زُبیر مصباح، عبدالوحید کولا، سرفراز جوکاکو، سید محمد افضل ایس ایم، عبدالمنان مصباح۔

ابوظبی سے محمد فاروق مصباح، جدہ سے شریف اکرمی اور  قمر سعدا، ریاض سے محمد عمار عبدالعلیم قاضیا، ینبو سے  فضل الرحمن رکن الدین، منطقۃ الشرقیہ سے ارشاد صدیقہ، یونس قاضیا، الیاس صدیقہ، مزمل رکن الدین اور  جاوید کولا۔بحرین سے محمد اسحاق پلور، کویت سے محمد ہاشم معلم اور  قطر سے محمد زبیر خلیفہ کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔

اسی طرح اندرون ہند کے  شہروں سے بھی اراکین کاانتخاب  کیا جاچکا ہے۔  بنگلور سے  عبدالمعیدکاڈلی اور  محمد نعمان شاہ بندری پٹیل، کیرالہ سے سید باشاہ ایس ایم، فیاض احمد مصباح اور  عبدالستار قاضیا،  چینائی سے سید محی الدین محمد جعفر ایس ایم (مارکٹ)اور  عبدالرحیم پٹیل، مینگلور سے عبدالعظیم دامودی، مڈکیری سے نظام الدین صدیق، کولکاتہ سے محمد ہاشم محتشم، آندھرا سے محمد فوّاز محتشم اور  بلال احمد رکن الدین، ممبئی سے  ریاض جاکٹی اور عادل ناگرمٹ۔

الیکشن کمشنر جناب اسحاق شاہ بندری نے بتایا کہ انجمن کے 11 سرپرست بھی ہیں، جن کے نام یہ ہیں:  ڈاکٹر ایس ایم سید خلیل الرحمن ، دامدا حسن شبر، سید حسن سقاف ایس ایم، محمد میراں صدیق، سعید حُسین دامودی، محمد ابراہیم قاضیا، عبدالعلیم قاضیا، ڈاکٹر محمد اسماعیل قاضیا، محمد ذکریا شینگری، الحاج ایس محسن شاہ بندری، محمد میراں اسماعیلجی۔

انہوں نے بتایا کہ اب صرف عمان کی دو سیٹوں کو پُر  کرنا باقی ہے اور عمان کے لئے دو اراکین کا انتخاب انجمن کی پہلی انتظامیہ میٹنگ میں کیا جائے گا۔ خیال رہے کہ انجمن کے نو منتخب اراکین انتظامیہ کی پہلی میٹنگ مورخہ 15فروری کو بلائی  گئی ہے جس میں مجلس انتظامیہ کے لئے دس اراکین کو بھی باہمی مشورے سے منتخب کیا جائے گا۔اسی طرح 22/فروری کو انتظامیہ کی دوسری نشست میں عہدیداران کا انتخاب عمل میں آئے گا۔عہدیداران کے انتخاب کے بعد نومنتخب صدر کو تین مزید اراکین کو انتظامیہ میں شامل کرنے کا اختیار ہوگا۔ اس طرح جملہ 96 ممبران پر مشتمل انتظامیہ ہوگی۔

خیال رہے کہ  قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین  کا قیام 1919 میں ہوا تھا، یہ ادارہ اب سوسال کی تکمیل پر صد سالہ جشن منارہا ہے اور تقریب کا اختتامی اجلاس ہونا ابھی باقی ہے۔ یہ بھی واضح رہے کہ انجمن کے تحت کنڈر گارٹن، نرسری،  پرائمری  او ر  ہائی اسکول سے لے کر گریجویٹ، پوسٹ گریجویٹ،  انجینرنگ، بی ایڈ،  بی سی اے ، بی بی اے اور ایم بی اے وغیرہ  کی بھی تعلیم دی جاتی ہے۔اسی طرح انجمن کے تحت لڑکیوں اور خواتین کی تعلیم کے لئے بھی الگ کیمپس قائم ہیں جہاں  پر بھی  اعلیٰ تعلیم کا بہترین  انتظام ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے معروف تاجر یونس قاضیا کی تہنیت

بھٹکل کی سرکاری اسپتال کی عمارت کو پینٹنگ کے تمام اخراجات ادا کرنے اور اسپتال کو خوبصورتی بخشنے پر   بھٹکل کے مشہورو معروف تاجر اور بھٹکل مسلم خلیج کونسل کے جنرل سکریٹری جناب محمد یونس قاضیا کے خدمات کی سراہنا کرتے ہوئے  بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے شال پوشی کرتے ہوئے ...

بھٹکل اتی کرم داروں کی تکرار عرضی پر جالی پنچایت ممبران کو اعتراض : تحصیلدار سے ملاقات

بھٹکل کرکٹ اکیڈمی میدان میں اتی کرم ہوراٹ گارر ویدیکے کی قیاد ت میں سونپی گئیں ہزاروں عرضیوں کے متعلق بھٹکل جالی پٹن پنچایت کو کسی بھی طرح کی کو ئی اطلاع دئیے بغیر تھصیلدار کی معرفت ڈپٹی کمشنر کو عرضیاں روانہ کرنے پر پنچایت ممبران نے سخت اعتراض جتایا ہے اور بھٹکل تحصیلدار ...

بھٹکل میں ہزاروں فوریسٹ اتی کرم داروں نے ڈپٹی کمشنر کے نام سونپی تکرار عرضی :سالہا سال سے اتی کرم زمین پر رہنے والوں کو منظوری دینے کا مطالبہ

فوریسٹ حقوق قانون کے تحت داخل کی گئی عرضیوں کو قانونی دعوے کے مطابق منظوری دینے کی کارروائی کو فوری طور پر انجام دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے   جنگلاتی زمینات کے  اتی کرم داروں نے بدھ کو بھٹکل کرکٹ اکیڈمی میدان میں زوردار مہم چلائی، جس میں پانچ ہزار کے قریب آتی کرم داروں نے ...

کمار سوامی کے ٹویٹ پر ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا پلٹ وار: شان وشوکت کی نمائش پر بھی دیوار گرنے کا خوف

امریکن صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بھارت دورے کے موقع پر احمدآباد کے سلم علاقے کی جھگی ۔جھونپڑیوں کو چھپانے کے لئے تعمیر کی جارہی دیوار پر سابق وزیراعلیٰ کماراسوامی نےکڑی تنقید کرتے ہوئے ٹویٹ کیا تھا جس   پر شمالی کینرا کے  رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے پلٹ وار کیا ہے۔

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔