کرناٹک ہائی کورٹ نے منگلورو تشدد سے متعلق شکایتوں پر پولیس کارروائی کی طلب کی تفصیل

Source: S.O. News Service | Published on 5th February 2020, 12:14 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلورو،5؍ فروری (ایس او نیوز) 19؍دسمبر کو منگلورو میں شہریت قانون کے خلاف  پولیس فائرنگ اور تشدد کے واقعات کو لے کر اب تک پولیس میں جتنی بھی شکایتیں درج ہیں انہیں عدالت میں پیش کیا جائے اور اب تک ان پر پولیس نے کیا کارروائی کی ہے اس کی بھی تفصیل عدالت کوفراہم کی جائے۔ یہ حکم منگل کے روز کرناٹک ہائی کورٹ نے صادر کیا ۔

منگلورو پولیس فائرنگ اور تشدد کے سلسلہ میں درج شکایتوں کے متعلق پولیس کی لاپروائی کے خلاف مجاہد آزادی دورے سوامی اینگار کی طرف سے داخل کی گئی عرضی کی سماعت کرتے ہوئے ریاستی ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ابھئے سرنیواس اوکا اور جسٹس ہیمنت چند گوڈا پر مشتمل ڈیو یژنل بینچ نے ریاستی حکومت کو یہ ہدایت دی کہ اب تک تمام شکایتوں پر کیا پیش رفت ہوئی ہے اس کی تفصیل عدالت کو دی جائے ۔

عرضی گزار کی طرف سے پیروی کرتے ہوئے سینئر وکیل پروفیسر روی ورما کمار نے کہا کہ اس واقعے کے سلسلہ میں جتنی بھی شکایتیں درج ہوئی ہیں ان میں سے ایک پر بھی پولیس نے کارروائی نہیں کی ہے۔ اس پر عدالت میں موجود ریاست کے ایڈوکیٹ جنرل پربھو لنگا نوادگی نے کہا کہ پولیس کی طرف سے شکایتوں کی جانچ کی جارہی ہے اس کے علاوہ معاملہ سی آئی ڈی کے سپرد کیا گیا ہے۔ ضلع کے دپٹی کمشنر کی طرف سے بھی رپورٹ تیار کی جارہی ہے ۔ 176 لوگوں کی گواہی ریکارڈ کی گئی ہے۔

اس موقع پر منگلورو تشدد کی جانچ میں مصروف مجسٹریٹ نے عدالت کو اپنی تحقیق کی پیش رفت کے بارے میں جانکاری ایک بند لفافے میں فراہم کی ۔ ان تمام کو کیس میں داخل کرتے ہوئے عدالت نے حکومت کو یہ ہدایت دی کہ منگلورو تشدد کے واقعات سے جڑے تمام سی سی ٹی وی مناظر اور تشدد کے دوران پولیس کی طرف سے کی گئی ریکارڈنگ کو محفوظ رکھا جائے ۔ اس کے ساتھ ہی آنے والے دنوں میں اس کیس میں سی بی آئی کی طرف سے جو بھی پیش رفت حاصل کی جائے گی ان تمام سے عدالت کو واقف کرایا جائے ۔ اس کیس کو عدالت نے اگلی سماعت تک ملتوی کردیا۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی اور دکشن کنڑا اضلاع میں خانگی بسوں کی خدمات آج سے شروع ؛ کرایوں میں اضافہ کا اعلان، 10 روپئے اقل ترین کرایہ

اُڈپی اور دکشن کنڑا اضلاع میں یکم جون سے بس خدمات بحال ہوگئی جو خانگی آپریٹرس چلاتے ہیں۔ کرایوں میں 15 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ کنارا بس اسوسی ایشن صدر راج ورما بلال نے یہ بات  کہی ۔ 

کاروار:  ہوٹل اور ریسارٹ والوں کو کوارنٹین کی سہولت فراہم کرنا پڑا مہنگا۔ کئی افراد نکلے پوزیٹیو۔ ہوٹل ہوگئے سیل ڈاؤن!

لاک ڈاؤن کے دوران کاروبار بالکل بند رہنے سے ہوٹل، لاڈج اور ریسارٹ مالکان بہت ہی زیادہ پریشان ہوگئے تھے۔ اس موقع پر ضلع کے باہر سے آنے والوں کو سرکاری طورپر کوارنٹین کرنے کے لئے مناسب انتظام نہ ہونے پر کچھ ہوٹلوں اور ریسارٹس کو کوارنٹین مراکز کے طور پر استعمال کرنے کی تجویز ...

مینگلور: جنوبی کینرا تک پہنچ گیا’ٹڈی دَل‘ کا حملہ۔ کورونا کے ساتھ کسانوں کے لئے شروع ہوگئی نئی آفت!

پچھلے کچھ مہینوں سے راجستھان اور شمالی ہندوستان کی مختلف ریاستوں میں زرعی فصلوں کی تباہی کا سبب بننے والا ’ٹڈی دَل‘اب جنوبی کینرا تک پہنچ گیا ہے جس کی وجہ سے کورونا وباء اور لاک ڈاؤن سے پریشان حال کسانوں کی نیندیں حرام ہوگئی ہیں۔ 

اُترکنڑا میں پھرسامنے آئے کورونا کے معاملات؛ کمٹہ میں چار اور سداپور میں ایک کی رپورٹ کورونا پوزیٹو

ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹو کے معاملات ہر روز سامنے آرہے ہیں، آج تازہ رپورٹ کمٹہ اور سداپور سے سامنے آئی ہے جہاں بالترتیب چار اور ایک کیس کورونا پوزیٹو موصول ہوئی ہے۔

کیا کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف بغاوت کے پیچھے ایک مرکزی وزیر کا ہاتھ ہے؟ کیا ریاست کی کمان کسی اور کو سونپنے کے لئے ہورہی ہیں کوششیں ؟

کرناٹک بی جے پی میں وزیر اعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف 27 اراکین اسمبلی کی طرف سے شروع کی گئی بغاوت کو ایک مرکزی وزیر کی طرف سے ہوا دیئے جانے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔

کرناٹک میں عبادت گاہیں یکم جون نہیں ، 8؍ جون کو کھلیں گی۔ ریاستی حکومت نے سابقہ فیصلہ واپس لیا، مساجد کے متعلق وقف بورڈ سے رہنما خطوط ایک دو دن میں

کرناٹک بھر میں ریاستی حکومت کی طرف سے یہ اعلان کیا گیا تھا کہ چوتھے لاک ڈاؤن 31 ؍ مئی کو ختم ہوتے ہی ریاست بھر میں یکم جون سے تمام عبادگاہوں کو کھول دیا جائے گا۔

ساحلی کرناٹکا میں رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں کورونا معاملات؛ مینگلور میں دو دنوں میں 28 اور اُڈپی میں 23 معاملات؛ آج اُترکنڑا میں بھی پانچ پوزیٹو

مہاراشٹرا سے واپس آنے والوں میں  جس طرح کرناٹک کے دیگر اضلاع میں کورونا کے معاملات میں  تشویشناک حدتک اضافہ دیکھنے میں آرہاہے، اُسی طرح  ساحلی کرناٹکا کے اضلاع  اُترکنڑا، اُڈپی اور دکشن  کنڑا میں بھی کورونا کے معاملات میں روز بروز اضافہ دیکھا جارہا ہے۔

ریاستی بی جے پی حکومت میں میں بغاوت کے آثار، سرگرمیاں تیز ؛ جگدیش شٹر یا پرہلاجوشی کو وزیر اعلیٰ بنانے دو مختلف دھڑوں کی لابی

بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی ) میں دل بدلی کر کے آنے والوں سے پارٹی کے بنیادی ورکرس اور قائدین کے ساتھ ناانصافی ہورہی ہے، جس کی وجہ سے حکومت پھر ایک مرتبہ ڈانواں ڈول نظر آرہی ہے ۔ یہ بات کے پی سی سی کے کارگزار صدر شیش جارکی ہولی نے کہی۔

مرکزی اور ریاستی بی جے پی حکومتیں کورونا وائرس سے نپٹنے میں ناکام ؛ رام مندر سپریم کورٹ کے فیصلہ سے بن رہا ہے ، مودی اپنے سر سہرانہ بنادھیں : کانگریس

کرناٹک میں کانگریس نے کہا ہے کہ اس ملک کو ترقی کی راہ پر لانے کے لئے پچھلے 50 سال کے دوران جو محنت ہوئی تھی مودی نے اپنے 6 سالہ دور اقتدار میں اس ساری محنت پر پانی پھیر دیا ہے اور ملک کو انہوں نے اسی مقام پر پہنچا دیا ہے جب ملک کی حیثیت صفر تھی ۔کے پی سی سی صدر ڈی کے شیو کمار اور ...