کولکاتہ کورٹ نے ششی تھرور کے خلاف جاری کیا گرفتاری وارنٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th August 2019, 10:16 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کولکاتہ، 13 اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)کولکاتہ کی میٹروپولیٹن کورٹ نے کانگریس لیڈر ششی تھرور کے خلاف گرفتاری وارنٹ جاری کیا ہے۔دراصل تھرور کے ’ہندو پاکستان‘ کے بیان پر وکیل سلیم چودھری نے درخواست دائر کی تھی۔اس درخواست پر سماعت کرتے ہوئے عدالت نے تھرور کے خلاف گرفتاری وارنٹ جاری کیا ہے۔اس سے پہلے ان کے خلاف کولکاتہ ہائی کورٹ نے بھی سمن جاری کیا تھا۔ششی تھرور نے بی جے پی پر حملہ بولتے ہوئے کہا تھا کہ اگر بی جے پی 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں کامیاب ہوتی ہے تو اس سے ملک ہندو پاکستان بن جائے گا۔ترنت پورم میں ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی اگر جیتتی ہے تو وہ نیا آئین لکھے گی، جس سے یہ ملک پاکستان بننے کی راہ پر آگے بڑھے گا جہاں، اقلیتوں کے حقوق کا کوئی احترام نہیں کیا جاتا ہے۔ششی تھرور کے اس بیان کو لے کر گلیاروں میں بڑا ہنگامہ مچا تھا۔بی جے پی کے حملہ آور ہونے کے بعد تھرور کے بیان سے کانگریس نے بھی پلہ جھاڑ لیا تھا۔کانگریس نے اپنے رہنماؤں کو سوچ بولنے کی ہدایت دی تھی۔کانگریس ترجمان رندیپ سرجیوالا نے کہا تھا کہ گزشتہ چار سالوں میں مودی حکومت نے تقسیم، تعصب، نفرت اور عدم برداشت کا ماحول بنا دیا ہے۔دوسری طرف کانگریس ہندوستان کی ایک تنوع بھری تہذیب، مختلف قسم کے، مختلف مذہب اور سپردایاو میں ہم آہنگی کی حمایتی رہی ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

ریزرویشن سے متعلق آر ایس ایس اور بی جے پی کے ارادے ٹھیک نہیں: تیجسوی یادو

  بہار اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر تیجسوی پرساد یادو نے ریزرویشن کے معاملے پر راشٹریہ سوئم سیوک سنگھ ( آر ایس ایس ) کے چیف موہن بھاگوت کے حالیہ بیان پر پلٹ وار کرتے ہوئے کہا کہ ریزرویشن کو لے کر آر ایس ایس اور بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی ) کے ارادے ٹھیک نہیں ہیں۔

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کاروارمیں ریڈ الرٹ کے باوجود کوسٹل سیکیوریٹی پولیس کی انٹر سیپٹر کشتیاں نہیں اتریں سمندر میں!

ابھی دو دن پہلے ملک کی خفیہ ایجنسی نے سمندری راستے سے دہشت گردانہ حملہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا تھا جس کے بعد پوری ریاست کرناٹکا میں اور بالخصوص ساحلی کرناٹکا میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے۔