کارکلا: فاریسٹ افسران کا دھاوا۔ بی جے پی لیڈر کے قبضے سے نکلے کروڑوں روپے مالیت والے درختوں کے تنے

Source: S.O. News Service | Published on 17th February 2020, 11:59 AM | ساحلی خبریں |

پُتّور17/فروری (ایس او نیوز)محکمہ جنگلات کے افسران نے ایک زبردست مہم چلاتے ہوئے بی جے پی لیڈر اور کارکلا تعلقہ پنچایت کے رکن کے گھر پر دھاوا بولا اور اس کے احاطے میں زمین کی کھدائی کرکے کروڑوں روپے مالیت کے درختوں کے تنے زمین کے اندر سے برآمد کرلیے۔

معلوم ہوا ہے کہ ہیبری محکمہ جنگلات کی طرف سے دو سال قبل غیر قانونی سرگرمیاں چلانے اور جنگلاتی دولت کو لوٹنے کا الزام لگاتے ہوئے  اس شخص کے خلاف کیس درج کیا گیا تھا۔ تحقیقات کے دوران ہیبری اور اطراف کے بہت سارے لوگ اس گینگ میں شامل ہیں اور یہ بی جے پی لیڈر اس گینگ کا سرغنہ ہے۔ اس پر1.5لاکھ روپے جرمانہ بھی عاید کیا گیا تھا۔

منی راج نامی نئے نوجوان فاریسٹ آفیسر کا تقرر جب ہیبری میں ہوا تو تو جنگلات لوٹنے والی اس گینگ پر ہاتھ ڈالنے کا منصوبہ بنایا گیااور اسی کے تحت یہ کارروائی کی گئی۔اور زمین کے اندر چھپا کر رکھے گئے 100سے زائد درختوں کے تنے برآمد کیے گئے۔اس اقدام کے لئے عوام کی طرف سے منی راج کی تعریف اور ستائش کی جارہی ہے۔ لیکن یہ خدشہ بھی ظاہر کیا جارہا ہے کہ سیاسی دباؤ کی وجہ سے منی راج کو اس کارروائی کی قیمت چکانی پڑسکتی ہے اور اس کا تبادلہ کسی اور مقام پر کیے جانے کے پورے امکانات ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کورونا نے ڈھایا قہر، ایک ہی دن 210 معاملات سامنے آنے پر ریاست بھر میں تشویش؛ کرناٹک میں کورونا معاملات میں اول نمبر پر پہنچ گیا اُڈپی

 کرناٹک کے ساحلی ضلع اُڈپی میں  آج منگل کو ایک ہی دن 210 کورونا پوزیٹو کے معاملات سامنے آنے کے بعد نہ  صرف ساحلی علاقوں بلکہ پوری ریاست میں تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ ایک  ماہ قبل تک اُڈپی میں کورونا کے کوئی معاملات نہیں تھے مگر مہاراشٹرا کی سرحد کھلتے ہی یہاں  کورونا نے سر ...