آئی ایم اے پونزی اسکیم میں لاکھوں روپیوں کی سرمایہ کاری کرکے برباد ہونے والوں کے لئے خوش خبری؛ منظم انداز میں قانونی لڑائی لڑنے بنگلور میں اسوسی ایشن کا قیام

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd October 2019, 3:30 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلور3/اکتوبر (ایس اونیوز)   آئی مونیٹری ایڈوائزری  عرف آئی ایم اے گروپ  نامی پونزی اسکیم میں  لوگوں کا کروڑوں  روپیہ ڈوبنے کے بعد  متاثرین نے  اپنی رقومات کو واپس حاصل کرنے قانونی لڑائی  لڑنے کا فیصلہ کیا ہے ۔  چونکہ چالیس سے پچاس  ہزار لوگوں نے اس کمپنی میں  اپنا سرمایہ لگایا ہے، اس لئے منظم ہوکر لڑائی لڑنے کےلئے ایک کمیٹی تشکیل دی  گئی ہے اور اسے باقاعدہ رجسٹرڈ بھی کیا گیا ہے۔

  کرناٹکا اے پی سی آر کے صدر ایڈوکیٹ  عثمان پی، اے پی سی آر سکریٹری ایڈوکیٹ محمد نیاز سمیت  کرناٹکا ہائی کورٹ کے سابق  پبلک پروسیکوٹر اور معروف ہائی کورٹ وکیل ایڈوکیٹ  بی ٹی وینکٹیش  کی رہنمائی میں  اب  IMA Depositors Welfare Association (آئی ایم اے ڈپوزیٹرس ویلفئیر اسوسی ایشن) کے نام سے  کمیٹی قائم کی گئی ہے اور  کمیٹی میں  آئی ایم اے سے متاثرہ لوگوں کو ممبرشپ دی جارہی  ہے۔

اس تعلق سے بدھ کو بینگلور میں ایک میٹنگ کا انعقاد کیا گیا تھا جس میں  عہدیداران کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔ محترمہ ڈاکٹر سلیم النساء کو اس کمیٹی کا صدر منتخب کیا گیا ہے، اسی طرح  سلیم احمد جنرل سکریٹری،  نجمہ رفیق اور سفیر احمد خان  جوائنٹ سکریٹری منتخب ہوئے ہیں ۔ ریاض احمد خان کو  اس کمیٹی  کا خازن مقرر کیا گیا ہے۔

اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے  جوائنٹ سکریٹری جناب سفیر آصف  خان نے بتایا کہ  کرناٹکا اے پی سی آر کے زیر اہتمام   متاثرین کو قانونی امداد فراہم کرنے  کے تعلق سے گذشتہ ماہ جو  اجلاس منعقد کیا گیا تھا، اُس میں ریاست بھر سے قریب 1800 لوگوں نے اپنے نام درج کروائے تھے، اُس کے بعد ہوئی میٹنگوں میں اس بات کا فیصلہ کیا گیا تھا کہ  انفرادی طور پر قانونی جدوجہد  کرنے  سے ایک طرف لوگوں کا وقت ضائع ہوگا، اُسی طرح وکیلوں کے پیچھے پیسہ بھی برباد ہوگا۔ لہٰذا میٹنگ میں  فیصلہ کیا گیا تھا کہ  ایک کمیٹی تشکیل دے کر اور اُسے باقاعدہ رجسٹرڈ کرکے  کمیٹی کے ذریعے ہی  قانونی لڑائی لڑنے کی ضرورت ہے، اُسی کی مناسبت سے  کمیٹی ترتیب دے کر عہدیداران کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کمیٹی کو  ہائی کورٹ کے سنئیر وکلاء بالخصوص اے پی سی آر کی    بھرپور حمایت حاصل ہے۔

سفیر آصف  خان نے  آئی ایم اے سے متاثرہ تمام لوگوں سے درخواست کی ہے  کہ   وہ پہلی فرصت میں  اس کمیٹی  کا فارم پُر کرکے ممبر بنیں۔ ممبرشپ کے لئے  معمولی  فیس رکھی گئی ہے۔ انہوں نے  ریاست کرناٹک سمیت ملک و بیرون ملک بالخصوص گلف میں مقیم ہزاروں متاثرین سے  درخواست کی ہے کہ وہ اس کمیٹی کی ممبرشپ حاصل کرکے  قانونی طور پر مضبوطی کے ساتھ منظم انداز میں  اپنی لڑائی لڑیں۔  مزید تفصیلات کے لئے  جناب سفیر آصف صاحب سے موبائل نمبر  : 9844578102 پر رابطہ کرسکتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا میں بھٹکل کے 9لوگوں سمیت 23 لوگوں کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ مینگلور اسپتال میں بھی بھٹکلی خاتون کی رپورٹ پوزیٹیو آنے کی خبر

ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے مزید معاملات آج اتوار کو بھی سامنے آئے ہیں جس میں بھٹکل کے بھی 9 معاملات شامل ہیں۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  کمٹہ سے 5، منڈگوڈ  اور ہلیال سے 3، 3، انکولہ، کاروار، سرسی سے ایک ایک کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے۔

بھٹکل:کورونا سے متاثرہ لوگ سونارکیری اسکول سے ویمن سینٹر منتقل؛ جےڈی نائیک سمیت کئی لیڈران کی رپورٹ آنی باقی

بھٹکل میں  کورونا کے تیسرے حملے میں جہاں ایک طرف دو لوگ جاں بحق ہوگئے وہیں   اب تک  بھٹکل میں 63 لوگ کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں، بھٹکل کی ایک معروف  شخصیت مینگلور اسپتال میں ایڈمٹ ہیں تو دیگر لوگ بھٹکل سونارکیری اسکول اور بھٹکل تعلقہ سرکاری اسپتال میں داخل کئے گئے تھے ۔ اب ...

آج 16 پوزیٹیو آنے والوں میں تین دبئی سے اور آٹھ وجے واڑہ سے لوٹے لوگ شامل

بھٹکل کے آج جن 16 لوگوں کی رپورٹ کورونا  پوزیٹیو آئی ہے، اُن میں سے تین لوگ دبئی سے آئے ہوئے لوگ ہیں، آٹھ لوگ وجئے واڑہ ،  تین لوگ  اُترپردیش  اور مہاراشٹرا سے لوٹا ہوا ایک شخص بھی آج کی لسٹ میں شامل ہیں۔

کورونا اَپ ڈیٹ:جنوبی کینرامیں آج صبح سے اب تک ہوئی 2افراد کی موت۔ضلع میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد ہوئی 22

جنوبی کینرا میں کورونا وباء کے اثرات بہت زیادہ سنگین صورت اختیار کرتے جارہے ہیں۔ آج صبح سے اب تک کووِڈ کے 2 مریض موت کا شکار ہوگئے ہیں جس کے بعد ضلع میں وباء کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 22ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں نجی اسپتال کی نرس کو لگ گیا کورونا کا مرض۔ایس ایس ایل سی کی طالبہ نرس کی بیٹی کو کیا گیا ہوم کوارنٹین

ایک نجی اسپتال میں خدمات انجام دینے والی نرس کو کووِڈ کا مرض لاحق ہونے کے بعدایس ایس ایل سی کا امتحان دے رہی اس کی بیٹی کو امتحان سے باز رکھتے ہوئے ہوم کوارنٹین کیا گیا ہے۔

بھٹکل ٹاؤن، ہیبلے پنچایت اور جالی پنچایت علاقوں میں لاگو رہے گارات کا کرفیو۔سیل ڈاؤن کیے جارہے ہیں ’ہاٹ اسپاٹس‘

بھٹکل تعلقہ میں کورونا وباء کی بدلتی صورتحال پر قابو پانے کے لئے ضلع انتظامیہ نے لاک ڈاؤن قوانین میں دوبارہ کچھ سختی برتنے کافیصلہ کیا ہے۔اسی کے تحت جمعہ کے دن شام میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے عوام کے لئے جو ہدایات جاری کیں اس کے مطابق ...

کورونا سے متاثر ہو کرمرنے والوں کی تدفین میں رکاوٹ درست نہیں، لاک ڈاؤن ہو یا نہ ہو اپنے آپ احتیاط برت کر وائرس سے بچنے کی کوشش کریں: ضمیر احمد خان

شہر بنگلورو میں کورونا وائرس کے کیسوں کی تعداد میں جس طرح کا بے تحاشہ اضافہ ہو رہا ہے اسی رفتار سے اس مہلک وباء کی زد میں آکر مرنے والوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہو تا جارہا ہے۔ اس وباء کا شکار ہو کر مرنے والے افراد کی تدفین اور دیگر آخری رسومات کے لئے عالمی صحت تنظیم کی طرف سے جو ...

کوروناکاقہر جاری،کرناٹک میں ایک ہی دن 21اموات، 24گھنٹوں کے دوران بنگلورومیں 994سمیت جملہ 1694کووڈکاشکار

ریاست میں آج ایک ہی دن کوروناوائرس کی زدمیں آکر21مریض ہلاک ہوگئے جبکہ 1694 کووڈمعاملات کا پتہ چلاہے۔ کرناٹک میں بھی کوروناوائر س کاخوفناک پھیلاؤ رکنے اورتھمنے کا نام نہیں لے رہاہے،ہرگزرتے لمحے اوردن کے ساتھ کوروناوائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتاجارہاہے،