سعودی عرب : کرونا وائرس کے کل کیسوں کی تعداد 223327 اور اموات 2100 ہوگئیں

Source: S.O. News Service | Published on 9th July 2020, 10:05 PM | خلیجی خبریں |

ریاض،9؍جولائی(ایس او نیوز؍ایجنسی) سعودی عرب کی وزارتِ صحت نے جمعرات کے روز کرونا وائرس کے 3183 نئے کیسوں کی تصدیق کی ہے جس کے بعد مملکت میں کووِڈ-19 کے اب تک تصدیق شدہ کیسوں کی تعداد 223327 ہوگئی ہے۔

نئے کیسوں میں 364 کی دارالحکومت الریاض میں تشخیص ہوئی ہے۔الدمام میں 247 ، جدہ میں 246 اور الہفوف میں 196 نئے کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ باقی کیس مملکت کے دوسرے علاقوں سے رپورٹ ہوئے ہیں۔

سعودی عرب میں پہلے سے کرونا وائرس کا شکار مزید 41 افراد وفات پاگئے ہیں۔ اب اس مہلک وائرس سے وفات پانے والے مریضوں کی تعداد 2100 ہوگئی ہے۔

کووِڈ-19 میں مبتلا مزید 3046 مریض صحت یاب ہوگئے ہیں۔ اس طرح اب تک صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 161096 ہوگئی ہے۔ 9 جولائی کوسعودی عرب میں کرونا وائرس کے 60131 فعال کیس تھے۔

خطے میں سعودی عرب میں اب تک کرونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسوں کی تصدیق ہوئی ہے۔اس کے بعد قطر خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) میں شامل ممالک میں کرونا کے مریضوں کی تعداد کے لحاظ سے دوسرے نمبر پر ہے۔ جان ہوپکنز یونیورسٹی کے اعداد وشمار کے مطابق قطر میں کرونا وائرس کے تصدیق شدہ کیسوں کی تعداد 101553 ہے۔

سعودی عرب جی سی سی کے رکن ممالک میں آبادی اور رقبے کے اعتبار سے سب سے بڑا ملک ہے۔اس کی آبادی تین کروڑ 47 لاکھ 60 ہزار سے زیادہ نفوس پرمشتمل ہے اور اس طرح اس کی آبادی جی سی سی کے دوسرے پانچ ممالک کی مجموعی آبادی سے زیادہ ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہ عبدالعزیز لائبریری کا "چلڈرنز بُک کلب" ، منصوبے میں 15 ہزار سے زیادہ بچوں کا اندراج

ریاض میں واقع "شاہ عبدالعزیز لائبریری" کے منصوبے "چلڈرنز بُک کلب" کے لیے بچوں کی دل چسپی میں اضافہ ہو رہا ہے۔ اب تک مملکت کی سطح پر 15 ہزار سے زیادہ بچے اس منصوبے میں اپنا اندراج کرا چکے ہیں۔ ان بچوں کو مختلف نوعیت کی کتب ارسال کی جاتی ہیں۔ وہ ان کا مطالعہ کر کے کہانیوں ، افکار اور ...

سعودی عرب اور یو اے ای کو لبنان امدادی کانفرنس میں شرکت کی دعوت ، ایران غیرمدعو

سعودی عرب ، متحدہ عرب امارات اور خلیج تعاون کونسل کے دوسرے رکن ممالک اتوار کو فرانس میں منعقد ہونے والی لبنان امدادی کانفرنس میں شرکت کریں گے۔ چین اور روس بھی اس کانفرنس میں شرکت کررہے ہیں لیکن ایران کو اس میں شرکت کی دعوت نہیں دی گئی ہے۔

بیروت دھماکے کے بعد غصے میں بپھرے عوام کو مظاہرے کے لیے اکٹھا ہونے کی کال

لبنان میں جمعے کی شام متعدد شہری تنظیموں اور سوسائٹیز کی جانب سے سامنے آنی والی کال میں عوام سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ ہفتے کی سہ پہر مقامی وقت کے مطابق 4 بجے سے بیروت کے وسط میں الشہداء اسکوائر پر جمع ہونا شروع ہو جائیں۔

لبنان کی مشکل اور پیچیدہ صورت حال میں مدد کے لیے حاضر ہیں: احمد ابو الغیط

عرب لیگ کے سکریٹری جنرل احمد ابو الغیط آج ہفتے کے روز بیروت پہنچے ہیں۔ اپنے دورے میں وہ لبنانی صدر میشل عون، وزیر اعظم حسان دیاب اور پارلیمنٹ کے اسپیکر نبیہ بری سے ملاقات کریں گے۔ ابو الغیط بیروت کی بندرگاہ پر دھماکے کی جگہ کا دورہ بھی کریں گے۔بیروت کے ہوائی اڈے پر پہنچنے کے ...