اکھلیش یادو ’ٹائیگر بام‘ کی طرح ہیں : مایاوتی 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 22nd April 2019, 12:40 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

لکھنؤ: 21 /اپریل(ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا)اتر پردیش کی سیاست کے دو بڑے قد آور ملائم سنگھ یادو اور مایاوتی جب دہائیوں پرانی دشمنی بھلا کر مین پوری کی ریلی میں ایک ہی مشترکہ اسٹیج پر آئے تو ان کی تصاویر خوب وائرل ہوئیں دیکھی گئیں۔ دشمنی بھلا کر دونوں رہنماؤں نے اب اتر پردیش میں بی جے پی کو روکنے کی کوشش کرنے کی ایک طرح سے قسم کھائی ہے۔ ان دونوں رہنماؤں کو ایک ساتھ لانے میں ملائم سنگھ کے بیٹے اور اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے کا بڑا رول رہا ہے۔ سماجوادی پارٹی کی آئی ٹی سیل کا دعوی ہے کہ ان دونوں رہنماؤں کی مشترکہ ریلی نے یو ٹیوب میں سارے ریکارڈ توڑ دیئے ہیں ۔ یہ بھی بات غور کرنے والی ہے کہ ملائم سنگھ یادو اس اتحاد کے حق میں نہیں تھے اور اکثر عوامی طور پر اس کی کئی بار مذمت بھی کی۔ تجزیہ کاروں کا خیال تھا کہ 7 مراحل میں اتر پردیش میں بی جے پی کو فائدہ پہنچاہے ؛ لیکن حقیقت میں مایاوتی اور اکھلیش یادو کے اتحاد کا زیادہ فائدہ مل سکتا ہے، کیونکہ دونوں کی کوشش ہے تمام بڑے علاقوں میں مشترکہ طور پر عوام سے رابطہ کیا جائے ۔اپنے ووٹروں میں مقبول ملائم سنگھ یادو نے مین پوری کی ریلی میں کہا کہ سماج وادی پارٹی کو مایاوتی کی عزت کرنی چاہئے، کیونکہ وہ ہمارے برے وقت میں ساتھ کھڑی ہیں۔ وہیں جواب میں مایاوتی نے بھی پی ایم مودی کے مقابلے میں ملائم سنگھ یادو کی خوب تعریف کی۔ ملائم سنگھ یادو یہ سن کر جذباتی ہو گئے اور ان کو شکریہ ادا کیا۔ مایاوتی نے کہاکہ :’آپ کے پاس اچھا بیٹا ہے، آپ نے اس کو اچھے سے بڑا کیا ہے، وہ ’ٹائیگر بام‘کی طرح ہے۔ مایاوتی کی یہ بات ایسی تھی گویا وہ گیسٹ ہاؤس کانڈ کے زخموں پر مرہم لگا رہی ہیں، جب 1995 میں ان کے اوپر سماج وادی پارٹی کے لوگوں نے حملہ کر دیا تھا اور ان کو خود کو ایک کمرے میں بند کرنا پڑا۔ اس واقعہ کے بعد ہی ملائم اور مایاوتی نے ایک دوسرے کا چہرہ نہ دیکھنے کی قسم کھائی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔