تبلیغی جماعت سے وابستہ12 انڈونیشیائی اراکین کی ضمانت منظور

Source: S.O. News Service | Published on 8th May 2020, 8:30 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ممبئی،8 /مئی (پریس ریلیز) انڈونیشیا سے تعلق رکھنے والے تبلیغی جماعت سے وابستہ  12  احباب جن پر پاسپورٹ کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرکے غیر قانونی طریقہ سے انڈیا میں داخل ہونے،کرونا وائرس پھیلانے، اقدام قتل دفعہ 307   اور دفعہ 304 انڈین پینل کورٹ  دفعہ 14 اور سیکشن کوڈ 19  سینٹرل ایکٹ کے الزام میں گذشتہ پندرہ دنوں سے قید و بند کی صعوبتیں جھیلنے والے جماعت کے ساتھیوں کی آج یہاں جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے لیگل ٹیم کی کامیاب پیروی کے نتیجہ میں ممبئی کی خصوصی عدالت سے پولیس کی جا نب سے ابھی تک ان کے خلاف عدالت میں کوئی ثبوت فراہم نہ کئے جانے کی بنیاد پر ضمانت کی منظوری عمل میں آئی ہے،جس سے جماعت سے وابستہ انڈونیشائی اراکین اور ممبئی جماعت کے ذمہ داروں کو کافی راحت حاصل ہوئی ہے۔ اس بات کی اطلاع آج یہاں اس مقدمہ کو مفت قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدر مولانا حافظ محمد ندیم صدیقی نے دی ہے۔

واضح رہے کہ 29 فروری 2020  کو تبلیغی جماعت کے طریقہ کار کو دیکھنے کے لئے انڈونیشا کا ایک وفد انڈیا کے مرکز نظام الدین دہلی آیاچند دن قیام کے بعد ۶/مارچ کو انڈو نیشا کا وہ وفد بذریعہ ٹرین ممبئی پہونچا اور نوی ممبئی کے مختلف علاقوں میں قیام پذیر رہا،ملک میں اچانک لاک ڈاؤن کے اعلان اور پھر مرکز کا معاملہ سامنے آنے کے بعد انہیں حراست میں لے کرکے باندرہ میں کورنٹائن کر دیا گیاتھا،ا ن کا ٹسٹ کرایا گیا جن میں سے10 لوگوں کی رپورٹ نگیٹیو آئی،کورنٹائن کی مدت مکمل ہوتے ہی پولیں نے انہیں گرفتار کرکے ان پر مختلف الزامات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔  ان کی ضمانت کے لئے جمعیۃ لیگل سیل نے پہلے باندرہ میٹرو پولٹین مجسٹریٹ کورٹ میں درخواست ضمانت داخل کی، وہاں سے مسترد ہونے کے بعد ضمانت عرضداشت ممبئی سیشن کورٹ میں داخل کی گئی لیکن گرفتاری سے لے کر پولیس ان کے خلاف عدالت میں آج تک اپنے دعوی کے مطابق کوئی خاطر خواہ ثبوت پیش نہیں کر سکی ہے جس کی بنیاد پر ممبئی سیشن کورٹ نے ان کی ضمانت منظور کردی ہے۔

جمعیۃ علماء مہاراشٹر کے صدر مولانا حافظ ندیم صدیقی نے انڈونیشاء سے تعلق رکھنے والے جماعت کے ساتھیوں کی ضمانت پر اللہ کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ جب یہ مقدمہ ہمارے پاس پیروی کے لئے آیا تھا تو ہم نے اپنے ذرائع سے ان بارے میں مکمل معلومات حاصل کی، جس سے ہمیں معلوم ہوا کہ یہ لوگ بے قصور ہیں اور پولیس نے ان پر زیادتی کرتے ہوئے بیجا گرفتار کیا ہے۔ ہم نے اپنے وکلاء سے صلاح ومشورہ کے بعد اس مقدمے کی پیروی کا فیصلہ کیا۔الحمدا للہ ہمارے وکلاء نے انتہائی محنت اور ایمانداری سے اس کی پیروی کی جس کے نتیجے میں عدالت نے ان کی ضمانت کو منظور کر لیا ہے۔اور دیگر دو انڈونیشائی جماعت کے ساتھیوں گرفتاری سے قبل ہی ضمانت منظور کی جاچکی ہے جمعیۃ علماء مہا راشٹر کی جا نب سے اس مقدمہ کی پیروی  جمعیۃ لیگل کے سکریٹری ایڈوکیٹ پٹھان تہور خان کی نگرانی میں ایڈوکیٹ عشرت علی خان اور ایڈوکیٹ طارق سید  کررہے تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوستان کی طرف نگاہ اٹھانے والوں کو مناسب جواب دیا جائے گا: مودی

پی ایم نریندر مودی نے آج چین اور پاکستان کا نام لئے بغیر کہا کہ ہندوستان کی طرف نگاہ اٹھانے والوں کو مناسب جواب دیا جائے گا اور لداخ میں دنیا نے اس کی جھلک دیکھی ہے۔ پی ایم مودی نے 74ویں یوم آزادی کے موقع پر لال قلعہ کی فصیل سے پرچم کشائی کے بعد ملک سےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ پورا ملک ...

یوم آزادی: لال قلع کی فصیل سے پی ایم مودی نے مجاہدین آزادی کے ساتھ ساتھ ’کورونا واریرس‘ کو بھی کیا سیلیوٹ

زیر اعظم نریندر مودی نے ملک کی حفاظت میں اپنی جانوں کی قربانی پیش کرنے والے ہندوستان کے سپوتوں کے ساتھ ساتھ آج ملک بھر کے کورونا وائریرز کو بھی خراج عقیدت پیش کی اور سیلیوٹ کیا ۔

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

بنگلورو فساد: مسلمانوں نے پیش کی ہم آہنگی کی مثال، انسانی زنجیر بناکر مندر کی حفاظت

کرناٹک کی راجدھانی بنگلورو میں سوشل میڈیا کی ایک قابل اعتراض پوسٹ کے بعد بھڑکنے والے فرقہ وارانہ فساد کے درمیان مسلم نوجوانوں نے مذہبی ہم آہنگی کی مثال پیش کرتے ہوئے ایک مندر کی حفاظت کی اور ہندوستان کی اس خوبصورت تصویر کو نمایاں کیا جس پر ہر ہندوستانی کو فخر ہونا چاہیے۔

 بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت کی تعمیرروک دی جائے۔ پنچایت اراکین نے کیا اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ 

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے اراکین نے اسسٹنٹ کمشنرکو میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کا جو کام شروع کیا ہے