مرادآباد میں دلت لڑکی کی عصمت دری ، مندر کا 52 سالہ پجاری گرفتار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th July 2018, 1:02 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

مرادآباد،12؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) یوپی میں مرادآباد کے كندرکی علاقے میں ایک پجاری نے دلت لڑکی کی عصمت دری کئے جانے کا معاملہ روشنی میں آیا ہے۔پولیس ذرائع نے یہاں یہ اطلاع دی۔انہوں نے بتایا کہ كندركي علاقے کے اندھن پورن ننگلہ گاؤں میں شیو مندر کا 52 سالہ پجاری روندرپوري بیمار لوگوں کا جڑی بوٹی سے علاج کرتا تھا۔لڑکی کے لواحقین سات جولائی کو 20 سالہ بیمار لڑکی کو دوا دلانے مندر آئے تھے۔

پجاری نے کہا کہ ابھی ادویات تیار نہیں ہے۔ آپ لوگ لڑکی کو یہیں چھوڑ اپنا کام کریں ، دوا کچھ وقت بعد تیار کر دی جائے گی۔ اس کے بعد لڑکی کو لے جانا۔ لواحقین نوجوان لڑکی کومندر کے دھرمشالہ میں چھوڑ کر کام کے لئے چلے گئے۔کچھ دیر بعد لڑکی کے لواحقین مندر پہنچے تو لڑکی اور پجاری وہاں نہیں ملے اور دھرمشالہ کا تالا لگا ہوا ملا۔ لڑکی کے اہل خانہ کا الزام ہے کہ پجاری لڑکی کو بہلا پھسلا کر اپنے ساتھ لے گیا اور اس کی عصمت دری کی۔لڑکی کا کہنا ہے کہ کسی طرح پجاری کے چنگل سے وہ بدھ کو چھوٹ کر اہل خانہ کے ساتھ تھانے پہنچی اور پجاری کے خلاف رپورٹ درج کرائی۔

انہوں نے بتایا کہ معاملہ درج کرنے کے بعد چند گھنٹوں کے اندر ملزم ہوس کے پجاری روندر پوری کو گرفتار کر لیا گیا۔ لڑکی کو میڈیکل جانچ کے لئے اسپتال بھیج دیا گیا ہے۔ پادری نے اپنا گناه قبول کر لیا ہے جس کے بعد اسے جیل بھیج دیا گیا ۔

ایک نظر اس پر بھی

سوامی اگنی ویش معاملہ: بی جے پی یوا مورچہ کے ضلع صدر سمیت آٹھ کے خلاف ایف آئی آر

بندھوا مکتی مورچہ کے بانی اور سماجی کارکن سوامی اگنی ویش کے ساتھ مارپیٹ کے معاملے میں بھارتیہ جنتا یوا مورچہ (بھاج یومو) كے ضلع صدر سمیت کسان مورچہ اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے آٹھ کارکنان کے خلاف کل سٹی تھانے میں ایف آئی آر درج کی گئی۔

22سالہ بیٹے کے ساتھ50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے گریجویشن کی ڈگری حاصل کی

تعلیم حاصل کرنے کی کوئی عمرنہیں ہوتی۔ یہ سچ کرکے دکھایا ہے ممبئی کے50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے ۔ فاروق شیخ نے پچاس کی عمر میں اپنے 22 سالہ بیٹے کے ہمراہ کامرس میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی ہے۔

ڈھائی سال کے انس بھی بنیں گے حاجی، اپنے والدین کے ساتھ حج بیت اللہ کے لیے روانہ

ہندوستانی عازمین حج کی روانگی کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ پہلا قافلہ روانہ ہوگیا ہے اور اب روزانہ بڑی تعداد میں عازمین روانہ ہوں گے۔ تاہم پہلے قافلہ میں ایک ایک ڈھائی سال کا بچہ اندرا گاندھی انٹرنیشنل ایئر پورٹ ٹرمنل -2 پر لوگوں کی توجہ کا مرکز بن گیا۔

اقلیتی طلباء کے لیے اسکالرشپ اسکیمیں جاری رکھنے کوکابینہ کی منظوری

چھ نوٹیفائیڈاقلیتی فرقوں کے طالب علموں کی پری میٹرک، پوسٹ میٹرک اور صلاحیت و وسائل کی بنیاد پر مرتب کردہ اسکالرشپ اسکیموں کو جاری رکھنے کی تجویز آج وزیراعظم نریندر مودی کی صدارت میں اقتصادی امور کی کابینی کمیٹی نے منظوری دے دی۔

تین مسلم نوجوان دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث ہونے کے الزامات سے بری 

مسلم نوجوانوں کو قانونی امدادفراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علمائے مہاراشٹر (ارشد مدنی) کو آج اس وقت ایک بار پھر کامیابی حاصل ہوئی جب کرناٹک کے شہربلاری کی نچلی عدالت نے تین مسلم نوجوانوں کو دہشت گردی کے الزامات سے باعزت بری کردیا۔

22سالہ بیٹے کے ساتھ50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے گریجویشن کی ڈگری حاصل کی

تعلیم حاصل کرنے کی کوئی عمرنہیں ہوتی۔ یہ سچ کرکے دکھایا ہے ممبئی کے50سالہ ٹیکسی ڈرائیور فاروق شیخ نے ۔ فاروق شیخ نے پچاس کی عمر میں اپنے 22 سالہ بیٹے کے ہمراہ کامرس میں گریجویشن کی ڈگری حاصل کی ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی میں صفائی کرمچاری پرہاتھ اُٹھانے کا الزام؛ کام بند کرکے کیا گیا احتجاج؛ صلح صفائی کے بعد معاملہ حل

بھٹکل ٹائون میونسپالٹی کے ایک صفائی کرمچاری پر میونسپالٹی کے ہی ایک آفسر کے ذریعے ہاتھ اُٹھانے کا الزام عائد کرتے ہوئے  سبھی صفائی کرمچاریوں نے آج جمعرات کو احتجاج کرتے ہوئے کام کاج بند کردیا۔ مگر قریب تین گھنٹوں بعد  آپسی صلح صفائی کے بعد معاملہ حل کرلیا گیا۔

منگلورومیسکام مزدوروں کو لگا ہائی ٹینشن وائر کا جھٹکا۔ ایک ہلاک 8شدید زخمی

مارائوور بس اسٹائنڈ  کے قریب  الیکٹرک کا نیا کھمبا نصب کرنے میں مصروف منگلورو الیکٹرک سپلائی کمپنی (میسکام) کے مزدور ہائی ٹینشن وائر کی زد میں آنے سے ایک کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی جبکہ بجلی کے جھٹکے لگنے سے دیگر 8مزدور شدید زخمی ہوگئے ،جنہیں علاج کے لئے نجی اسپتال لے جایا ...

یلاپور میں برقی تار چھونے سے دو کسانوں کی موت

ضلع اُترکنڑا کے یلاپور تعلقہ کے  ڈونڈیان کوپّا میں  دوکسان اُس وقت ہلاک ہوگئے جب وہ  منگل شام کو کھیتوں میں کام کاج نپٹا کر واپس گھر جارہے تھے کہ اچانک راستے پر پڑی برقی تار  پر ان کے قدم پڑ گئے۔