فارمولین کے مسئلے پر گوا میں بیرونی ریاست کی مچھلیوں پر لگی پابندی۔ ساحلی علاقوں میں مچھلی فروشوں کو لگا زبردست جھٹکا

Source: S.O. News Service | Published on 6th November 2018, 8:32 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

اڈپی6؍نومبر (ایس او نیوز) پڑوسی ریاست گوا کی حکومت نے بیرونی ریاستوں سے آنے والی مچھلیوں میں فارمولین نامی کیمیکل کی موجودگی پر سخت قدم اٹھاتے ہوئے مچھلیوں کی درآمد پر پابندی لگادی ہے۔اس سے خاص کر ساحلی کرناٹکا کے ماہی گیروں اور مچھلی کے تاجروں کو زبردست جھٹکا لگا ہے۔کیونکہ ساحلی کرناٹک کے مختلف مقامات سے روزانہ ہر ٹرک میں 6سے7ٹن مچھلیوں کے ساتھ 15تا20ٹرک مچھلیاں گوا میں فروخت کی جاتی تھیں۔

خیال رہے کہ حکومت گوا کی طرف سے بیرونی ریاستوں سے فروخت کے لئے لائی جانے والی مچھلیوں کو فارمولین سے پاک رکھنے کی ہدایت جاری کیہے اور اس کے لئے فوڈ اینڈ ڈرگ ڈپارٹمنٹ کی طرف سے سرٹفکیٹ لازمی قرار دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ مچھلیاں سپلائی کرنے والے ٹرکس کو انسولیٹ کرنا اوراس میں سے سڑک پر گندا پانی نہ چھوڑنے کا بندوبست کرنا بھی ضروری کیا گیا ہے۔ مچھلی کے تاجروں نے ان قوانین پر عمل کرنے کے لئے کچھ مہلت طلب کی تھی، لیکن حکومت گوا کے افسران سرحد پر ہی چیکنگ کررہے ہیں اور ان کے قوانین کے مطابق عمل نہ کرنے والے ٹرکس کو گوا میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دے رہے ہیں۔اس وجہ سے ساحلی کرناٹکا کے مچھلیوں کے ٹرکس ماجالی چیک پوسٹ پر قطاردرقطار کھڑے نظر آرہے ہیں۔

اس صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے’ملپے ماہی گیر ایسوسی ایشن‘ کے صدر ستیش کندر نے کہا کہ :’’ہم نے فارمولین کے تعلق سے ملپے میں مچھلیوں کا معائنہ کیا۔ ابتدا میں تملناڈو سے آنے والی مچھلیوں کے اندر فارمولین پایا گیا ۔ لیکن اب اس کی مسلسل جانچ اور نگرانی کی وجہ سے مچھلیوں کو محفوظ کرنے کے لئے فارمولین کا استعمال مکمل طورپر بند ہوگیا ہے۔ لیکن حکومت گوا کی جانب سے اچانک کیے گئے فیصلے کی وجہ سے ماہی گیر اور تاجروں کوکروڑوں روپوں کا نقصان ہوا ہے۔ ایک تو مانسون اور اس کے بعد طوفان کی وجہ سے سمندر میں ماہی گیری پر پابندی لگی تھی اور گوا کی حکومت کی پابندی سے دوسرا زبردست جھٹکا لگاہے۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔

پارلیمینٹ گلبرگہ کے مسلمانوں سے کھڑگے کے حق میں قیمتی ووٹ دینے ڈاکٹر اصغر چلبل کی اپیل 

ڈاکٹراصغرچلبل سابق صدر گلبرگہ اربن ڈیولوپمینٹ اتھارٹی نے ایک صحافتی بیان میں کہا ہے کہ ملک کے موجودہ پارلیمانی انتخابات نہایت اہمیت کے حامل ہیں ۔2019کے پارلیمانی انتخابات مسلمانوں کے لئے آر پار کی لڑائی کی طرح سمجھے جارہے ہیں ۔پچھلے پانچ سالوں میں بی جے پی سرکار میں دلتوں ، ...

سدارامیا کے دوبارہ وزیراعلیٰ بننے میں غلط کیا ہے؟ کس کے نصیب میں کیا لکھا ہے کوئی نہیں جانتا : کمار سوامی

سدارامیا کے دوبارہ وزیر اعلیٰ بننے میں غلط کیا ہے ؟ اس قسم کا چونکانے والا بیان ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے دیا ہے ۔ ضلع کے مدے بہال تعلقہ میں اخباری نمائندوں سے انہوں نے کہا کہ کس کے نصیب میں کیا لکھا ہے ، کسی کو معلوم نہیں ہے ۔

کرناٹک کا سب سے اہم حلقہ گلبرگہ؛ کیا ا س بار کانگریس اپنا قلعہ بچا پائے گی..؟ (آز: قاضی ارشد علی)

ملک بھر میں چل رہے 17ویں لوک سبھا کے انتخابات کے دو مراحل مکمل ہوچکے ہیں ۔تیسرا مرحلہ 23؍اپریل کو مکمل ہوگا ۔ریاستِ کرناٹک کے28پارلیمانی حلقہ جات میں سے14حلقہ جات میں رائے دہی مکمل ہوچکی ہے ۔باقی رہ گئے14حلقہ جات میں الیکشن پروپگنڈہ زوروں پر ہے۔18؍اپریل کو ہوئے14حلقہ جات میں ...

دیوگوڑا پر یدی یورپا کا طنز، 7 سیٹ پر لڑ رہے ہیں اور بنناچاہتے ہیں وزیر اعظم

حال ہی میں سابق وزیر اعظم اور جنتا دل (سیکولر) کے سربراہ ایچ ڈی دیوگوڑا نے کہا تھا کہ انتخابات کے بعد اگر راہل گاندھی وزیر اعظم بنتے ہیں تو وہ ان کا ساتھ دیں گے۔ان کے اسی بیان پر طنز کستے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر بی ایس یدی یورپا نے کہا ہے کہ دیوگوڑا سات سیٹوں پر لڑ رہے ہیں ...