کاروار بلدی انتخاب میں بی جے پی کی طرف سے شگفتہ صدیقی مسلم خاتون امیدوار !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 29th August 2018, 1:55 PM | ساحلی خبریں |

کاروار29؍اگست (ایس او نیوز) کاروار کے بلدی انتخاب کے امیدواروں میں شگفتہ صدیقی نامی مسلم خاتون بھی شامل ہے جو بی جے پی کی طرف سے وارڈ نمبر 15 سے انتخاب لڑ رہی ہیں۔

کاروار کی تاریخ میں پہلی مرتبہ مسلم خاتون کو امیدوار بنانے والی بی جے پی کے لیڈر اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے نے شگفتہ کو ووٹ دے کر کامیاب کرنے کی اپیل کی ہے۔حالانکہ اس سے قبل اننت کمار مسلمانوں اور اسلام کے خلاف اپنے مسموم خیالات کا اظہار کرتے اور اشتعال انگیز بیانات دیتے رہے ہیں۔ ان کا یہ بیان بھی ریکارڈ پر ہے کہ دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے اسلام کو دنیا سے مٹانا ہوگا۔اننت کمارکھلم کھلا یہ بھی کہتے ہیں رہے ہیں کہ انہیں مسلمانوں کے ووٹوں کی ضرورت نہیں ہے۔ اس طرح جہاں ضلع بھر میں دوڈھائی لاکھ مسلمانوں کے ووٹوں سے وہ محروم ہوتے رہے ہیں ، وہیں ان کے انہیں انتہاپسندانہ ہندوتوا وادی خیالات اور امیج کی وجہ سے ان کا ہندوووٹ بینک بہت ہی زیادہ مستحکم ہوتارہا ہے۔گزشتہ اسمبلی الیکشن میں ضلع شمالی کینرا سے بی جے پی کے چار اراکین اسمبلی کی جیت میں ان کی اسی امیج اور پالیسی کارول رہا ہے۔اب اچانک کاروار میں مسلم امیدوار کو ٹکٹ دینا اور پھر اس کے لئے ووٹ کی اپیل کرنایہ اننت کمار کا نیا رخ ہے ، جو بہت ممکن ہے کہ آئندہ لوک سبھا الیکشن میں پارٹی کے مفاد کو سامنے رکھ کر اختیار کیا گیا ہوگا۔

بی جے پی امیدوار شگفتہ صدیقی کا کہنا ہے کہ:’’ جب میں اپنے شوہر کے ساتھ گلف میں مقیم تھی تب سے ہی بی جے پی اور وزیراعظم نریندرا مودی کی ستائش کررہی تھی۔یہ بات پوری طرح جھوٹ ہے کہ بی جے پی مسلمانوں کی دشمن ہے۔میں نے وارڈ نمبر 15میں ٹکٹ کے لئے بی جے پی سے رابطہ قائم کیا تو وہاں پر مقابلے کے لئے چار پانچ امیدوار موجود رہنے کے باوجود انہوں نے مجھے ٹکٹ دیا ہے۔میرے وارڈ میں مسلم ووٹرس کی اکثریت ہے۔ اس کے ساتھ چار مسلم امیدوار میدان میں ہیں۔ پھر بھی یہاں کے مسلم عوام اور مسلم خواتین نے کھل کر میری حمایت کی ہے۔ ‘‘

شگفتہ کا کہنا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے مسلم خاتون کو ٹکٹ دئے جانے پر دیگر پارٹیوں اور آزاد امیدواروں کی طرف سے شکوک ظاہر کیے جارہے ہیں۔ کہا جارہا ہے کہ بی جے پی مسلم خواتین اور مردوں میں تفرقہ ڈال رہی ہے۔ تین طلاق پر پابندی اور دیگر اقدامات سے مسلم خواتین کو راحت پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ یہ سب جھوٹی باتیں ہیں۔ اور جھوٹ بہت دنوں تک چل نہیں سکتا۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: گم شدہ سمیرکاقتل ۔بیوی اوراس کاعاشق بیرون ملک فرار ہوجانے کا شبہ

منگلورو کا محمد سمیر(35سال) 13ستمبر کو اپنی بیوی اور بچے کے ساتھ بنگلورو جانے کے بعد 15ستمبر سے لاپتہ ہوگیا تھا اور بعد میں اس کی لاش تملناڈو کے مدورائے میں دستیاب ہونے کی بات سامنے آئی تھی۔پولیس اور گھر والوں کو شبہ تھاکہ سمیر کو قتل کیا گیا ہے اور اس میں اس کے بیوی کے کردار پر ...

پتور:ہاسٹل میں رہنے والی طالبہ نے کی پھانسی لگاکر خودکشی

نری موگرو کالج طلبہ کے ہاسٹل میں قیام کرنے والی پسماندہ طبقے کی ایک طالبہ نے پھانسی کا پھندالگا کر خود کشی کرلی ہے۔ہلاک ہونے والی طالبہ کی شناخت کوڈاگو ضلع کے سوموار پیٹ کی رہنے والی جیویتا (17سال) کے طور پر کی گئی ہے۔

جنوبی کینرا میں پھر شروع ہوا قاتلانہ حملوں کا سلسلہ۔ امتیاز کے بعد بجرنگ دل لیڈرہریش شیٹی پر تلواروں سے حملہ

جنوبی کینرا کے ساحلی علاقے میں قاتلانہ حملوں کا سلسلہ دوبارہ شروع ہونے کے آثار نظر آنے لگے ہیں۔ پھولوں کے تاجر اور ہندوتووادی کارکن پرشانت پجاری قتل میں ملزم بتائے گئے اور ضمانت پر رہا ہونے والے امتیاز پر موڈبیدری میں ایک ناکام قاتلانہ حملہ ہوا جس میں امتیاز بال بال بچ گیا اور ...

بھٹکل انجمن پی یوکالج طلبا ٹیم کی کھیل  کے میدان میں شہنشائیت جاری : تیراکی میں 14 اور کراٹے میں 3گولڈ سمیت کئی تمغے انجمن کے نام

انجمن پی یوکالج بھٹکل کی کھلاڑیوں کی شاندار پرفارمنس جاری ہے۔ کبڈی اور فٹ بال میں ضلع سطح پر چمپئین بننے کے بعد باسکٹ بال میں رنر اپ کا خطاب جیتا تو اب ضلع لیول کے تیراکی (سوئمنگ )میں 14گولڈ ،09سلور اور 01برانج میڈل جیتا ہے تو کراٹے میں 3گولڈ اور 2سلور میڈل جیت کر کھیل کے میدان میں ...

بھٹکل انجمن پی یوکالج  فٹ بال ٹورنامنٹ میں چمپئین تو باسکٹ بال ٹورنامنٹ میں رنر اپ

تعلیمات عامہ اترکنڑا ضلع اور وائی ٹی ایس ایس کالج یلاپور کے اشتراک سے مالادیوی کھیل میدان کاروار میں منعقدہ ضلع لیول فٹ بال ٹورنامنٹ میں چمپئین شپ کاخطاب جیتاہے تو اسی طرح منڈگوڈ کے لویالا کالج میں منعقدہ ضلع سطح کے باسکٹ بال ٹورنامنٹ میں انر اپ کا خطاب جیت کر کالج اور شہر کا ...