کاروار بلدی انتخاب میں بی جے پی کی طرف سے شگفتہ صدیقی مسلم خاتون امیدوار !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 29th August 2018, 1:55 PM | ساحلی خبریں |

کاروار29؍اگست (ایس او نیوز) کاروار کے بلدی انتخاب کے امیدواروں میں شگفتہ صدیقی نامی مسلم خاتون بھی شامل ہے جو بی جے پی کی طرف سے وارڈ نمبر 15 سے انتخاب لڑ رہی ہیں۔

کاروار کی تاریخ میں پہلی مرتبہ مسلم خاتون کو امیدوار بنانے والی بی جے پی کے لیڈر اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے نے شگفتہ کو ووٹ دے کر کامیاب کرنے کی اپیل کی ہے۔حالانکہ اس سے قبل اننت کمار مسلمانوں اور اسلام کے خلاف اپنے مسموم خیالات کا اظہار کرتے اور اشتعال انگیز بیانات دیتے رہے ہیں۔ ان کا یہ بیان بھی ریکارڈ پر ہے کہ دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے اسلام کو دنیا سے مٹانا ہوگا۔اننت کمارکھلم کھلا یہ بھی کہتے ہیں رہے ہیں کہ انہیں مسلمانوں کے ووٹوں کی ضرورت نہیں ہے۔ اس طرح جہاں ضلع بھر میں دوڈھائی لاکھ مسلمانوں کے ووٹوں سے وہ محروم ہوتے رہے ہیں ، وہیں ان کے انہیں انتہاپسندانہ ہندوتوا وادی خیالات اور امیج کی وجہ سے ان کا ہندوووٹ بینک بہت ہی زیادہ مستحکم ہوتارہا ہے۔گزشتہ اسمبلی الیکشن میں ضلع شمالی کینرا سے بی جے پی کے چار اراکین اسمبلی کی جیت میں ان کی اسی امیج اور پالیسی کارول رہا ہے۔اب اچانک کاروار میں مسلم امیدوار کو ٹکٹ دینا اور پھر اس کے لئے ووٹ کی اپیل کرنایہ اننت کمار کا نیا رخ ہے ، جو بہت ممکن ہے کہ آئندہ لوک سبھا الیکشن میں پارٹی کے مفاد کو سامنے رکھ کر اختیار کیا گیا ہوگا۔

بی جے پی امیدوار شگفتہ صدیقی کا کہنا ہے کہ:’’ جب میں اپنے شوہر کے ساتھ گلف میں مقیم تھی تب سے ہی بی جے پی اور وزیراعظم نریندرا مودی کی ستائش کررہی تھی۔یہ بات پوری طرح جھوٹ ہے کہ بی جے پی مسلمانوں کی دشمن ہے۔میں نے وارڈ نمبر 15میں ٹکٹ کے لئے بی جے پی سے رابطہ قائم کیا تو وہاں پر مقابلے کے لئے چار پانچ امیدوار موجود رہنے کے باوجود انہوں نے مجھے ٹکٹ دیا ہے۔میرے وارڈ میں مسلم ووٹرس کی اکثریت ہے۔ اس کے ساتھ چار مسلم امیدوار میدان میں ہیں۔ پھر بھی یہاں کے مسلم عوام اور مسلم خواتین نے کھل کر میری حمایت کی ہے۔ ‘‘

شگفتہ کا کہنا ہے کہ بی جے پی کی طرف سے مسلم خاتون کو ٹکٹ دئے جانے پر دیگر پارٹیوں اور آزاد امیدواروں کی طرف سے شکوک ظاہر کیے جارہے ہیں۔ کہا جارہا ہے کہ بی جے پی مسلم خواتین اور مردوں میں تفرقہ ڈال رہی ہے۔ تین طلاق پر پابندی اور دیگر اقدامات سے مسلم خواتین کو راحت پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔ یہ سب جھوٹی باتیں ہیں۔ اور جھوٹ بہت دنوں تک چل نہیں سکتا۔

ایک نظر اس پر بھی

اسپتال قائم کرنا میری ذمہ داری نہیں ہے: کاروار میں ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا تکبرانہ بیان

ضلع شمالی کینرا میں ایک ٹراما سینٹر اور سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل تعمیر کرنے کے لئے سوشیل میڈیا جو مہم چلائی جارہی ہے اور متعلقہ محکمہ جات کے افسران کو میمورنڈم دئے جارہے ہیں اس سلسلے میں ضلع کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے اب تک کسی قسم کاردعمل ظاہر نہیں کیاتھا۔ الٹے سوشیل ...

اڈپی کے موٹر بائک شوروم میں بھیانک آتشزدگی۔ فائربریگیڈ کی بروقت کارروائی سے ٹل گیا سنگین حادثہ

یہاں اندرالی ریلوے پل سے قریب واقع ہیرو ہونڈا موٹربائک کے جئے دیوا شو روم میں اتوار کی شب میں بھیانک آتشزدگی کا واقعہ پیش آیا۔ چونکہ اس شوروم سے متصل پٹرول بنک موجود ہے اس لئے حادثہ سنگین رخ اختیار کرنے کے امکانات پیدا ہوگئے تھے، لیکن فائر بریگیڈ عملے کی بروقت کارروائی کی وجہ ...

منگلورو میں ڈینگی بخار کے 40مشتبہ مریض اسپتال میں داخل۔ریاستی سطح پر% 70ملیریا کے معاملات منگلورو میں درج ہوئے

گزشتہ تین ہفتوں کے دوران منگلورو کے گجّر کیرے نامی علاقے میں ڈینگی بخار کے 40مشتبہ مریض اسپتال میں داخل کیے گئے ہیں تفتیش کے بعد ان میں سے ایک معاملے میں ڈینگی بخار کی تصدیق ہوگئی ہے۔

منگلورو ایئر پورٹ پر 20.67لاکھ روپے مالیت کا سونا ضبط

منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر سونا اسمگلنگ کرنے کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے کسٹم کے افسران نے ایک مسافر کے قبضے سے 24کیریٹ کا608  گرام سونا ضبط کرلیا جو مسافر نے پیسٹ کی شکل میں اپنے مقعد میں چھپاکر رکھا تھا۔

کاروار میں شراب کے نشے میں دُھت کار چلانے کے دوران چار سواریوں کو ٹکر دینے کے بعد عوام نے نیوی اہلکار کی لی خوب خبر

نیوی اہلکار کو کاروار میں  اُس وقت عوام  کے ہاتھوں بری طرح    پٹنا پڑا جب  شراب کے نشے میں ڈرائیونگ کرنے کے دوران اس کی کار  یکے بعد دیگرے چار کاروں سے ٹکرا گئی۔ واردات  کاروار کے بِنگا میں کدمبا نیوی کے گیٹ کے قریب سنیچر شب کو  پیش آیا۔