کاروار: عادی چور پولیس کی گرفت میں؛ 250گرام سونے کے زیورات برآمد

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th October 2017, 2:15 PM | ساحلی خبریں |

کاروار12؍اکتوبر (ایس او نیوز) کاروارشہر کے مختلف علاقوں میں چوری کی وارداتیں انجام دینے والاایک ماہر اورعادی چور بالآخر پولیس کے ہتھے چڑھ گیا ہے۔ 

موصولہ رپورٹ کے مطابق کدرا سرکل انسپکٹرنتیا نند پنڈت کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے شخص کانام سنجے مکند پاٹل(۳۳سال) ہے اور اس کے قبضے سے پولیس نے 6 لاکھ روپے مالیت کے 250گرام وزنی سونے کے زیورات اور ایک موبائل فون ضبط کیا گیا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ گرفتار شدہ ملزم ہیگڈ ے ایجنسی میں موبائل کی چوری کے علاوہ ملاپور اور دیگر علاقوں میں گھروں میں گھس کر چوری کرنے کی پانچ وارداتوں میں پولیس کو مطلوب تھا۔سرکل پولیس انسپکٹر کے علاوہ پی ایس آئی پُٹا سوامی، اے ایس آئی ساونت اور دیگر عملے نے ا س عادی چور کو گرفتار کرنے کی کارروائی میں حصہ لیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی اور سنگھ پریوار کے احتجاج اور تشدد کے چلتے بالاخر کرناٹک سرکار کا ہوناور کے پریش میستا کی موت کا معاملہ سی بی آئی کے حوالے کرنے کا اعلان

ریاست میں کافی بحث کا موضوع بنے ہوناور کے پریش میستا کی موت کی گتھی سلجھانے کے لئے بالاخر اب ریاستی حکومت نے   اس  معاملے کو سی بی آئی کے ذریعہ تحقیق کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اخبارنویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرداخلہ رام لنگا ریڈی  نے کہا کہ سچائی کو منظر عام پر لانے کے لئے ...

ضلع اُتر کنڑا میں وہاٹس ایپ پر اشتعال انگیزپیغامات پوسٹ کرنے پر 28 معاملات درج

ہوناور میں ایک نوجوان کی ہلاکت کے بعدبی جے پی اور سنگھ پریوار کی حمایت میں  اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف سوشیل میڈیا پر اشتعال انگیز پیغامات روانہ کئے جارہے تھے، ساتھ ساتھ سوشیل میڈیا کے ذریعے مختلف علاقوں میں بند منائے جانے اور احتجاج کے پیغامات پھیلائے جارہے تھے، جس پر ...

ہوناور پریش میستا کی موت کا معاملہ؛ وہاٹس ایپ پراشتعال انگیز افواہیں پھیلانے کے الزام میں ہائی اسکول ٹیچر گرفتار

ہوناور فساد کے پس منظر میں سوشیل میڈیا اور خاص کر وہاٹس ایپ پر افواہیں پھیلا کر ماحول خراب کرنے کے الزام میں کاروار کے ایک ہائی اسکول ٹیچر کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

پریش میستا کے پوسٹ مارٹم کی فائنل رپورٹ ابھی نہیں ملی ۔ دیشپانڈے

ہوناور میں فرقہ وارانہ فسادات کا سلسلہ شروع ہونے کے بعد پریش میستا نامی نوجوان کی جو لاش دستیاب ہوئی تھی اور اس سے پورے ضلع میں نفرت کی آگ بھڑکائی گئی تھی، اس تعلق سے ضلع انچارج وزیر دیشپانڈے نے کہا ہے کہ پریش کے پوسٹ مارٹم کی قطعی رپورٹ ابھی نہیں آئی ہے۔