رافیل طیارہ سودا معاملہ :جے پی سی کی تشکیل میں پس وپیش کیوں؟کانگریس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th January 2019, 12:30 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،8؍جنوری(ایس او نیوز؍یو این آئی)کانگریس نے رافیل طیارہ سودا معاملہ میں سرکار پر قومی سلامتی سے سمجھوتہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آج کہا کہ اس کی خریداری میں گڑبڑی ہوئی ہے اور سرکار کچھ چھپانا چاہتی ہے ۔اسلئے مشترکہ پارلیمانی کمیٹی(جے پی سی)کی تشکیل نہیں کی جارہی ہے ۔کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر دفاع اے کے انٹونی نے پیر کو پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کی پارٹی لگاتار اس معاملہ پر جے پی سی کی تشکیل کی مانگ کررہی ہے ۔اس میں اگر کچھ گڑبڑی نہیں ہوئی ہے تو سرکار کو جے پی سی پر اعتراض نہیں ہونا چاہئے ،کیونکہ کمیٹی کی تفتیش میں دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوجائے گا۔بھارتیہ جنتا پارٹی کی اکثریت کی حکومت ہے اور جے پی سی میں اسی کے ممبر ہوں گے ۔اس کے باوجود جے پی سی تشکیل نہیں کی جارہی ہے ۔اس سے شبہ پیدا ہوتا ہے کہ ضرور کچھ ہے جسے چھپایا جارہاہے ۔انہوں نے ہندوستان ایروناٹکس لمٹیڈ (ایچ اے ایل)معاملہ میں وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر پارلیمنٹ میں غلط بیانی کرنے کا الزام لگایا اور کہا کہ انہوں نے ایک لاکھ کروڑ روپے کا کام ایچ اے ایل کو دینے کی بات کی ہے جبکہ تقریباً 26ہزار کروڑ روپے کا ہی معاملہ کاغذوں میں ہے ۔انہوں نے کہا کہ سلامتی سے جڑے 80فیصد طیارے ایچ اے ایل میں تیار کئے جارہے ہیں،لیکن رافیل کے ایشو پر اس کی ساکھ کو نقصان پہنچایا گیا ہے ۔

سابق وزیر دفاع نے کہا کہ رافیل طیارہ خریداری میں گڑبڑی ہوئی ہے ۔یہ شکایت ان سے بھارتیہ جنتا پارٹی کے سینئر لیڈر سبرامنیم سوامی نے بھی کی تھی۔رافیل طیارہ سودے میں جہاں جہاں گڑبڑی ہوئی ہے اس کولے کر سرکار کے سامنے کانگریس پارٹی نے سوال کھڑے کئے ہیں، لیکن اس کا جواب نہیں دیا جارہاہے ۔سرکار ایک جھوٹ کو چھپانے کیلئے سوجھوٹ بولنے کی کوشش کررہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس طرح کی بدعنوانی میں بچا نہیں جاسکتا اور وہ جتنا بھاگیں گے ،اتنا ہی پھنسیں گے ۔اسلئے جے پی سی کی تشکیل ضروری ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

انڈین مجاہدین تنظیم کے رکن ہونے کے الزام میں گرفتار ملزم کی10/ سال بعد ضمانت منظور،جمعیۃ علماء مہاراشٹرا کو پھر ملی کامیابی

انڈین مجاہدین نامی ممنوعہ تنظیم کے رکن ہونے کے الزام میں گذشتہ10/برسوں سے جیل کی صعوبتیں برداشت کرنے والے ملزم  ڈاکٹر انور علی باغبان کو آج اس وقت راحت حاصل ہوئی جب بامبے ہائی کورٹ نے اسے دو الاکھ روپئے کے ذاتی مچلکہ پر مشروط ضمانت پر رہا کیئے جانے کا حکم جاری کیا۔

کاروارمیں ریڈ الرٹ کے باوجود کوسٹل سیکیوریٹی پولیس کی انٹر سیپٹر کشتیاں نہیں اتریں سمندر میں!

ابھی دو دن پہلے ملک کی خفیہ ایجنسی نے سمندری راستے سے دہشت گردانہ حملہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا تھا جس کے بعد پوری ریاست کرناٹکا میں اور بالخصوص ساحلی کرناٹکا میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

منگلورو:ڈاکٹرمریم انجم بن گئیں خواتین سے متعلقہ کینسرکے علاج میں ایم سی ایچ ڈگری پانے والی جنوبی کینرا کی پہلی ماہر ڈاکٹر 

ڈاکٹر مریم انجم نے خواتین سے متعلقہ کینسر کے شعبے میں خصوصی مہارت والی ایم سی ایچ کی ڈگری حاصل کی ہے۔ جس کے ساتھ انہیں جنوبی کینرا میں اس طرح کی مہارت پانے والی پہلی ڈاکٹر ہونے کا اعزاز ملا ہے۔