بھٹکل تعلقہ کو ایس ایس ایل سی نتائج میں ضلعی سطح پر چوتھا مقام :پرائیویٹ کے مقابل سرکاری اسکولوں کی بہتر کارکردگی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 9th May 2018, 6:28 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 9/مئی (ایس او نیوز)پیر کو اعلان ہوئے ایس ایس ایل سی نتائج میں بھٹکل تعلقہ کے تمام ہائی اسکولس سےامتحانات میں شریک 32لڑکے  اور 1082لڑکیاں سمیت کل 2014میں سے 790لڑکے اور 977لڑکیاں سمیت کل 1767طلبا کامیا ب ہوئے ہیں ۔ اس طرح  تعلقہ کے کامیابی کی مجموعی شرح 87.74فی صد  ہونے کی جانکاری تعلیمات عامہ بی ای او دفتر کی طرف سے جاری کردہ پریس ریلیز  میں دی گئی ہے۔

تعلقہ کی 14سرکاری ہائی اسکولس میں سے بندر، جالی  اور مرارجی اقامتی ہائی اسکولس یعنی 3سرکاری ہائی اسکولوں  نے 100فی صدنتائج درج کرتے ہوئے امدادی اور غیر امدادی ہائی اسکولس کو پیچھے دھکیل دیا ہے۔اسی طرح معیاری تعلیم اور بہتر ین نتائج کا دم بھرنے والے پرائیویٹ اداروں کے بالمقابل سرکاری ہائی اسکولس کے کامیابی کی شرح 91.90فی صد ہے۔اطمینان کی بات یہ ہے کہ نوائط کالونی اور جامعہ جالی کی سرکاری اردو ہائی اسکولس نے بالترتیب 91.67اور 71.43فی صد نتائج حاصل کئے ہیں۔

تعلقہ کے 9امدادی ہائی اسکولس کے کامیابی کی مجموعی شرح 78.59فی صد ہے ۔درگا پرمیشوری الویکوڑی ہائی اسکول نے 93.33فی صد کامیابی کے ساتھ یہاں اول نمبر پر ہے تو ایس پی ایس ایچ ہائی اسکول ماروکیری 93.10شرح کامیابی کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے۔ یہاں ملی اداروں کی کارکردگی مطمئن بخش نہیں ہے۔

تعلقہ کی کل 14غیر امدادی ہائی اسکولوں نے اپنے تمام سہولیات کی آراستگی کے ساتھ  سرکاری اسکولوں کا مقابلہ کرتے  ہوئےکامیابی کی مجموعی شرح 92.52 فی صد حاصل کی ہے۔ نونہال سنٹرل ہائی اسکول اور ودیا بھارتی ہائی اسکول نے 100فی صد نتائج درج کئے ہیں۔ اس زمرے میں انجمن گرلس ہائی اسکول نوائط کالونی 94.29فی صد اور انجمن بائز ہائی اسکول بھٹکل 85.71فی صد کامیابی کے ساتھ قابل قدر کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ بقیہ ملی اداروں کی حالت یہاں بھی کمزور نظر آرہی ہے۔ 

تعلقہ کے تمام ہائی اسکولوں کی کارکردگی پیش کرنے والا ایک خاکہ ذیل میں دیا گیا ہے۔ 

SI. NO

School Name

Students Appeared

Student

passed

Percentage

1

Govt High School, Belke

91

85

93.41

2

Govt High School, Tengingundi

51

45

88.24

3

Govt High School, Sonarkeri

58

46

79.31

4

Govt High School, Bailur

47

46

97.87

5

Govt High School, Mundalli

32

27

84.38

6

Govt High School, Kuntwani

35

32

91.43

7

Govt High School, Bunder

16

16

100

8

Govt High School, Jali

23

23

100

9

Govt High School, Gorte

19

18

94.74

10

Govt High School, Ternamakki

58

57

98.28

11

Govt Urdu High School, Nawayath Colony

12

11

91.67

12

Govt Urdu High School, Jamiajali

21

15

71.43

13

Moraji Desai High School

25

25

100

14

Kittur Rani Chenamma School

43

42

97.67

15

The New English school

130

103

79.23

16

Janata Vidya School, Shirali

37

31

83.78

17

Janata Vidya School, Murdeshwar

87

75

86.21

18

Islamia Anglo Urdu High School, Bhatkal

105

73

69.52

19

Anjuman Girls High School, Bhatkal

148

115

77.70

20

National High school, Murdeshwar

31

17

54.84

21

SPSH School, Marukeri

29

27

93.10

22

Durgaparameshwari High School, Alvekodi

45

42

93.33

23

Vishwabharthi High school, Bengre

56

42

75

24

Shams High School, Bhatkal

53

39

73.58

25

Naunihaal Central School

50

50

100

26

Iqra High School, Murdeshwar

40

29

72.50

27

New National High School, Murdeshwar

32

24

75

28

Shivali High School, Shirali

115

110

95.65

29

Anand Ashram convent School, Bhatkal

157

155

98.73

30

Anjuman Boys High School

63

54

85.71

31

RNS Videyanekaten. Murdeshwar

40

38

95

32

Anjuman Girls High School, Bhatkal

105

99

94.29

33

Vidyabhati English High School

42

42

100

34

Siddartha high School, Shirali

40

39

97.50

35

St. Thomas High School

36

35

97.22

36

National Public School, Bhatkal

3

2

66.67

37

Beena Vaidya High School, Murdeshwar

39

38

97.44

ایک نظر اس پر بھی

 قطر  حلقہ ادب اسلامی کے زیراہتمام ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی کی صدارت میں  نعتیہ اجلاس ومشاعرہ کا انعقاد

بڑی مسرت کی بات ہے کہ حلقہء ادب اسلامی۔قطر نے 8 نومبر 2018م کی شب اپنا سالانہ نعتیہ اجلاس ومشاعرہ  ادار ہ ادب اسلامی ہند کے کل ہند صدر  ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی کی صدارت میں منعقد کیا، موصوف محترم، حلقے کی خصوصی دعوت پر دوحہ قطر تشریف لائے ہوے تھے، اجلاس میں ڈاکٹر رضوان رفیقی فلاحی ...

دوحہ قطر میں ’جدید ادبی تحریکات و نظریات پر ایک نظر‘توسیعی خطبہ کا انعقاد : ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی    کا پرمغز خطاب

جدید ادبی تحریکات و نظریات پر ایک نظر، اس عنوان کے تحت مؤرخہ 10 نومبر 2018م سنیچر کی شام حلقہء ادب اسلامی قطر نے ڈاکٹر شاہ رشاد عثمانی صاحب کی ہندوستان سے آمد کی مناسبت سے استفادہ کرتے ہوئے ایک توسیعی خطبہ کا اہتمام کیا، ڈاکٹر صاحب حلقہ کے سالانہ نعتیہ اجلاس و مشاعرہ کی صدارت کے ...

شادی میں شرکت مہنگی پڑی : 9خاندانوں کا سماجی بائیکاٹ ؛آج بھی انسانیت سوز روایت زندہ ؟

گاؤں کے ذمہ دار کی اجازت کے بغیر شادی میں شریک ہونے پر 9خاندانوں کابائیکاٹ کرتے ہوئے انہیں گاؤں سے ہی باہر کئے جانے کا غیرانسانی واقعہ پیش آیاہے۔ سماجی مقاطعہ ، عدم تعاون جیسے ناسور آج بھی زندہ رہنے کی تازہ مثال ہے۔

گوا میں فارمولین کے بہانے بیرونی ریاستوں کی مچھلی پر پابندی : کیا  علاقائی تنگ نظری اور مقامی مفاد اہم وجہ ؟

ریاست گوا کی سرکار پڑوسی و بیرونی ریاستوں سے آنے والی مچھلیوں پر عائد کی گئی پابندی  کے نتیجےمیں گوا کے مچھلی شائقین  اور ہوٹل صنعت کاری بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ فی الحال گوا میں  مطلوبہ مچھلی  سپلائی نہیں ہونےکی وجہ سے مچھلی  کی قیمتیں آسمان کو چھور ہی ہیں ۔اس کے علاوہ گوا کو ...

کاروار: اننت کمار دوستانہ تعلقات کے مالک تھے: مرکزی وزیر کے انتقال پر ضلع نگراں کار وزیر دیش پانڈے کا تعزیتی پیغام

اترکنڑا ضلع نگراں کار وزیر آر وی دیش پانڈے نے مرکزی وزیر برائے کھاد اور پارلیمانی معاملات اننت کمار کے انتقال پر تعزیتی پیغام جاری کرتے ہوئے اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔

بھٹکل انجمن اسلامیہ اینگلو اردو ہائی اسکول میں مولانا آزاد کے یوم پیدائش پر ’’یوم ِ تعلیم ‘‘ کا انعقاد  

امام الہند ،بھارت کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کے یوم پیدائش پر طلبا کو ان کی شخصیت سے متعارف کرانے اور وطن عزیز کی آزادی کے لئے ان کی طرف سے پیش کی گئی قربانیوں کو پیش کرنے کی غرض سے اسلامیہ اینگلو اردو ہائی اسکول بھٹکل میں مولانا آزاد لینگویج اینڈ لائبریری کلب کے ...