بھٹکل کے جالی سمندر کنارے تمل ناڈو اور کیرلا کے ماہی گیروں کی سرگرمیوں پر پابندی کا مطالبہ :مقامی عوام نے سونپا میمورنڈم

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 11th January 2018, 7:54 PM | ساحلی خبریں |

 بھٹکل:11/ جنوری (ایس اؤنیوز)تعلقہ کے جالی سمندر کنارے تمل ناڈو اور کیرلا ریاست کے لوگ غیر قانونی طور پر ماہی گیری کئے جانے پر سخت اعتراض جتاکر عوام پر اس کے غلط اثرات کا الزام عائد کرتے ہوئے علاقہ کے لوگوں نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کے توسط سے ضلع ڈپٹی کمشنر کو میمورنڈم پیش کیا ہے۔

میمورنڈم میں کہاگیا ہے کہ ریاست میں غیر رجسٹرڈ اور دوسری  ریاست کے ماہی گیر یہاںسرگر م ہیں۔ یہاں مچھلی پکڑنے کے لئے استعمال ہونے والی کشتیوں کو غیر قانونی طورپر مٹی کا تیل سپلائی کیا جارہاہے۔ جن مچھلیوں کی نسل پر حکومت نے پابندی عائد کی ہے ان کا ہی شکار کیا جارہاہے۔

میمورنڈم میں اس بات کا بھی الزام لگایا گیا ہے کہ ان ماہی گیروں کو مقامی سیاست دان مدد کررہے ہیں۔ کیرلا اور تمل ناڈو کے ماہی گیر بغیر کسی خوف کے دن رات سڑکوں پر گھومتے رہتے ہیں اور ان کے ذریعے طلبااور ماہی گیر خواتین کو ہراساں کیا جارہا ہے۔

ان لوگوں کے مطابق سمندر میں مقامی ماہی گیروں کے جالوں پر اپنی کشتیاں دوڑا کر باہر کے ماہی گیر ان کی جالوں  کو نقصان پہنچانےکے واقعات بھی ہورہے ہیں، جس سے امن میں خلل پڑ رہاہے۔ مقامی گل نٹ ماہی گیر سنگھا میں یہ لوگ رجسٹرڈ نہ  ہونے کی وجہ سے ماہی گیر محاذ کی ان پر کوئی پکڑ نہیں ہے۔ ان لوگوں نے مطالبہ کیا ہے کہ  ان تمام وجوہات کو دیکھتے ہوئے جالی سمندر کنارے ہونےو الی غیر قانونی سرگرمیوں کے متعلق کارروائی کریں۔ ان لوگوں نے کاروائی نہ کرنے پر  سخت احتجاج کی بھی دھمکی دی ہے۔ ہریش ناگپا نائک، موہن منجپا نائک، شری دھر ناگپا نائک، شیوانند راما نائک، ایشور لچمیا موگیر، مہیش کوپا موگیر، گنپتی راما نائک، گنپتی لچمیا موگیر، راما منجپا موگیر وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ میں علمائے شوافع کی جانب سے فقہی سمینار کا انعقاد ؛ علماء فقہائے شوافع نے حقیقتاً حدیث اور فقہ میں بہت نمایاں کام کیاہے: خالد سیف اللہ رحمانی 

بروز سنیچر 19؍ جنوری مجمع الامام الشافعی العالمی کی جانب سے دو روزہ پہلے فقہی سمینار کا آغاز کیا گیا اس سمینار کا افتتاحی جلسہ صبح 10؍ بجے جامعہ دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ ممبئی میں منعقد کیا گیا

بھٹکل: ریاست کے مشہور سد گنگامٹھ کے شری کمار سوامی جی کی وفات پر رابطہ ملت اترکنڑا کا اظہار تعزیت

ریاست کے قدآور ، معروف سد گنگا مٹھ کے شری کمار سوامی جی کے دارِ فانی سے کوچ کر جانے پر رابطہ ملت اترکنڑا ضلع کے عہدیداران نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سوامی جی ملک کی ایک قوت کی مانند تھے۔

گنگولی کے آراٹے ندی میں غرق ہوکر لاپتہ ہونے والے ماہی گیر کی نعش آج برآمد

یہاں آراٹے ندی میں غرق ہوکر کل رات ایک ماہی گیر لاپتہ ہوگیا تھا، جس کی نعش آج متعلقہ ندی سے برآمد کرلی گئی ہے۔ ماہی گیر کی شناخت آراٹے کڑین باگل کے رہنے والے  کرشنا موگویرا (50) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

کنداپور میں ہوئی چوری کی واردات کے بعد پولس نے گھر میں نوکری کرنے والے میاں بیوی کوکیا گرفتار

کنداور دیہات کے سٹپاڑی کے ایک گھرمیں ہوئی  چوری کے معاملے میں کنداپور دیہی پولس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے اسی گھر میں کام کرنےو الے میاں بیوی کو صرف دو دنوں میں ہی گرفتار کر کے معاملے کو حل کرنے میں کامیابی حاصل کرلی  ہے۔