شرتھ مرڈر کیس :پانچ میں سے 4مشتبہ ملزمین پولیس حراست میں۔کلیدی ملزم مفرور۔تفتیش جاری۔ کرایے کا قاتل شامل رہنے کی بات سے پولیس کا انکار

Source: S.O. News Service | Published on 13th August 2017, 6:10 PM | ساحلی خبریں |

بنٹوال 13؍اگست (ایس او نیوز)بنٹوال کے بی سی روڈ پر ایک مہینے پہلے ہونے والے آر ایس ایس کارکن شرتھ مڈیوال کے قتل کا معاملہ لگتا ہے کہ اب اپنے انجام کی طرف بڑھ رہا ہے۔کیونکہ پولیس نے چار مشتبہ ملزمین کو حراست میں لینے اور ایک کلیدی ملزم فرار ہونے کی بات بتائی ہے۔
موصولہ رپورٹ کے مطابق حراست میں لیے گئے ملزمین کی شناخت ابھی پولیس نے ظاہر نہیں کی ہے۔ صرف اتنا بتایا ہے کہ چاروں ملزمین سے تفتیش جاری ہے ۔ اس سے پہلے میڈیا میں یہ خبر عام ہوگئی تھی کہ پولیس اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ ممبئی سے بلائے گئے سپاری کِلّر (کرایے کا قاتل)نے یہ واردات انجام دی تھی اور پولیس اسے گرفتار کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔لیکن پولیس سپرنٹنڈنٹ سدھیر کمار ریڈی نے واضح کیاہے کہ منگلورو سٹی کرائم برانچ کی ایک ٹیم تحقیقات کے لئے ممبئی گئی ہوئی تھی اور وہ اب واپس آگئی ہے۔ شرتھ کے قتل میں کوئی کرایے کا قاتل ملوث ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔
تحقیقاتی ٹیم کے قریبی ذرائع نے بھی ایس پی سدھیرکمار کی وضاحت کی تائید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قتل میں مقامی افراد ہی ملوث ہیں۔ البتہ پانچواں ملزم جو ابھی تک فرار ہے وہ کلیدی ملزم ہوسکتا ہے، اور پولیس اس کی تلاش میں لگی ہوئی ہے۔لہٰذاتوقع کی جارہی ہے کہ اس پانچویں ملزم کے ہاتھ آتے ہی ان سب کی باقاعدہ گرفتاری عمل میں آئے گی۔
شرتھ مڈیوال کے قتل کے سلسلے میں ایک اور پہلو یہ ابھر کرسامنے آیا ہے کہ اس میں ریت مافیا کا بھی ہاتھ ہوسکتا ہے ، کیونکہ بعض مواقع پر شرتھ نے بنٹوال کے غیر قانونی ریت سپلائی مافیا کے خلاف آواز اٹھائی تھی اور ان سے مخاصمت مول لے بیٹھا تھا۔اس لئے پولیس کی تحقیقات میں یہ پہلو بھی شامل رہا ہے۔ بہرحال پولیس کی طرف سے ملزمین کی باقاعدہ گرفتاری کے بعد ہی قتل کے اس سنسنی خیز معاملے کی اصل حقیقت سامنے آنے کی امید ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے ایک پٹرول پمپ میں پٹرول کی جگہ پانی بھرنے کی واردات کے بعد ایک گرفتار

کار کی ٹنکی میں پٹرول کے بجائے پانی  بھرنے  کے الزام میں پولس نے  پیر کو ایک شخص کو گرفتار کرلیا ہے جس کی شناخت  فہمان (35) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ پولس نے ملزم کو گرفتار کرنے کے بعد عدالت میں پیش کیا ہے جہاں سے اُسے  جوڈیشیل کسٹڈی میں  کاروار جیل بھیج دیا گیا ہے۔

یلاپور میں بائیک پھسل گئی، دو شدید زخمی

یلاپور 17 جون (ایس او نیوز) ضلع اتر کنڑا کے یلاپور نیشنل ہائی وے 63 پر ایک بائیک تیز رفتاری کے ساتھ پھسلنے کے نتیجے میں بائیک پر سوار دو لوگ بری طرح زخمی ہو گئے۔ جن کی شناخت ہبلی گنیش پیٹ کے رہنے والے محمد شاہد موراک (21) اور محمد نعیم (23) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بھٹکل: مرڈیشور سمندر میں ڈوبنے والے ایک سیاح کو لائف گارڈ نے دی نئی زندگی

تعلقہ کے سیاحتی مقام مرڈیشور میں آج بنگلور کے ایک سیاح کو لائف گارڈ نے   ڈوبنے سے بچالیا اور ایک نئی زندگی عطا کی جس کی شناخت  یوراج (36) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ وہ بنگلور کے سری رام پورا کا رہنے والا ہے۔

دبئی ۔مینگلور ایئر انڈیا فلائٹ کوچی ایئر پورٹ کی طرف موڑ دیا گیا۔ عید کے لئے مینگلور پہنچنے والے مسافروں نے کیا رن وے پر احتجاج

دبئی سے آنے والی ایئر انڈیاایکسپریس فلائٹ AIE 814کومنگلورو ایئر پورٹ کے بجائے کوچی ایئر پورٹ پر لینڈ کرانے سے ناراض مسافروں نے کوچی ایئر پورٹ کے رن وے پر احتجاجی مظاہرہ کیا اور ایئر انڈیا کے کوتاہی اور غفلت پر سخت برہمی کا اظہار کیا۔

بیندوراوتینانی میں پہاڑی کا کھسکنا شاہراہ کی تعمیراتی کمپنی کے لئے دردِسر۔ حل تلاش کرنے کمپنی پہنچی راگھویندرا مٹھ میں!

نیشنل ہائی وے توسیعی منصوبے کے تحت بیندور کے وتّی نینی علاقے میں پہاڑکو کاٹ کر راستہ بنانے کا کام رکاوٹوں کا شکار ہوتاجارہا ہے کیونکہ یہاں بار بار پہاڑی چٹانیں کھسکنے کے واقعات پیش آرہے ہیں۔ حالانکہ ٹھیکیدار کمپنی اس سے پہلے پنچاب، کشمیر اور ممبئی وغیرہ میں بہت ہی کٹھن حالات ...

اُڈپی میں بجرنگ دل کارکنوں کے حملہ میں ہلاک ہونے والے حسین ابّا کی موت کا سبب سر پر لگنے والی چوٹ۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ میں انکشاف

ہیری اڈکا پولیس اسٹیشن کی حدود میں پیراڈور کے مقام پر مویشیوں کے تاجر حسین ابّا اور اس کے ساتھیوں کی گاڑی روک کر پولیس اور بجرنگ دل کارکنان کی ملی بھگت سے 30مئی کو صبح کی اولین ساعتوں میں جو حملہ ہوا تھا اوراس کے بعد ایک پہاڑی علاقے سے حسین ابا کی لاش برآمد ہوئی تھی اس معاملے کی ...