ہوناور کے گیرسوپا ڈیم سے پھر چھوڑا گیا پانی؛ پانچ گھروں کو کیا گیا خالی؛ کھیتوں اور باغات میں پھر بھرگیا پانی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th September 2019, 11:58 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 8/ستمبر (ایس او نیوز)  پڑوسی تعلقہ ہوناور کے گیر سوپا ڈیم سے پھر پانی چھوڑے جانے کے بعد شراوتی بیلٹ پر واقع  دیہاتوں میں ندی کا پانی اُبل کر کھیتوں اور باغات سے ہوتا ہوا گھروں کے کمپاونڈوں کے اندر داخل ہوگیا ہے جس کی وجہ سے  متعلقہ علاقوں میں رہنے والے عوام کو پھر ایک بار پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہاہے۔ اس بات کی اطلاع شراوتی کونسل کے  سکریٹری جناب مظفر یوسف نے بذریعہ فون  دی۔ انہوں نے سرکاری ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ اتوار کو گیرسوپا ڈیم سے 70 ہزار کیوسک پانی  چھوڑا گیا ہے جس کی وجہ سے  پھر ایک بار شراوتی  بیلٹ کے   گیرسوپا، سڑلگی، سمسی، کُروا وغیرہ علاقوں میں  پانی  گھروں کے کمپاونڈ کے اندر بھر گیا ہے اور احتیاطی طور پر بوڑھے، بزرگ   لوگوں کو  محفوظ مقامات پرمنتقل کیا گیا ہے تاکہ پانی گھروں کے اندر داخل ہونے کی صورت میں دیگر لوگ فوری طور پر  محفوظ مقام پر منتقل ہوسکیں۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ  ندی کے بالکل کنارے واقع پانچ مکانوں میں پانی گھس جانے کی وجہ سے مکین فوری طور پر گھر چھوڑ کر چلے گئے ہیں۔

بتایا گیاہے کہ پڑوسی ضلع شموگہ کے  تیرتھاہلی، اگمبے اور  ہوس نگر میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں  اُن پہاڑی علاقوں کا پانی   سیدھے  لنگن مکی پھر وہاں سے  گیرسوپا ڈیم  میں جمع ہوجاتا ہے، چونکہ یہ دونوں ڈیم حالیہ دنوں میں ہوئی بارش سے بھرے ہوئے ہیں،  بارش ہونے کے نتیجے میں ڈیم سے پانی کا اخراج ضروری ہوجاتا ہے۔

شراوتی بیلٹ پر  آئے سیلاب جیسی صورتحال کو دیکھتے ہوئے  شراوتی بیلٹ کے ہی ولکی قصبہ میں واقع   اتحاد پبلک اسکول  میں  کل پیر کو  گیرسوپا اور سمسی کے  بچوں کو چھٹی کا اعلان کیا گیاہے اسکول کے ایک  ذمہ دار نے بتایا کہ   اُن علاقوں میں گھروں  کے کمپاونڈوں کے اندر پانی بھرا ہے ایسے میں وہاں  کے بچوں کو ولکی اسکول میں لانا    پھر اسکول چھوٹنے کے بعد  اُن کے گھروں تک واپس  پہنچانا دشوار ہے۔

اس تعلق سے ایک اعلیٰ سرکاری آفسر سے  ساحل آن لائن نے رابطہ کیا تو انہوں نے  بتایا کہ  گیرسوپا ڈیم سے پانی کا اخراج گذشتہ چار  دنوں سے برابر جاری ہے اور ڈیم کو اب تک بند نہیں کیا گیا ہے، البتہ ندی میں  اُتار چڑھاو آنے کی صورت میں پانی کبھی  نیچے اُترتا ہوگا  اور کبھی پانی واپس  ندی سے اُبل کر  اطراف کے علاقوں میں داخل ہوجاتا ہوگا۔ان کے مطابق گیر سوپا ڈیم کا گیٹ فی الحال بند نہیں کیا گیاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: شمالی کینراکے ماہی گیروں کے ساتھ ریاستی حکومت سوتیلا سلو ک کررہی ہے۔ ماہی گیر لیڈ ر وسنت کھاروی کا الزام

بھٹکل کے ماہی گیر لیڈر وسنت کھاروی نے الزام لگایا ہے کہ ریاستی حکومت اور وزارت ماہی گیری کی طرف سے اڈپی اور جنوبی کینرا کے مقابلے میں شمالی کینرا کے ماہی گیروں کے ساتھ سوتیلا سلوک کیا جارہا ہے۔

کورونا وباء اور لاک ڈاون کے چلتے دبئی میں پھنسے بھٹکل کے عوام کے لئے زبردست خوش خبری؛ 11 جون کو مینگلور کے لئے نکل رہی ہے چارٹرڈ فلائٹ

کورونا وباء کے بعدلاک ڈاون کے چلتے دبئی اور عرب امارات میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے عوام کے لئے ایک زبردست خوش خبری یہ ہے کہ  بھٹکل کے معروف بزنس مین اور نُہیٰ جنرل ٹریڈنگ کمپنی    کے مالک جناب عتیق الرحمن مُنیری نے  عوام کی تکلیفات کو دور کرنے اور اُنہیں اُن کے وطن  واپس ...

کرناٹک میں سنڈے لاک ڈاون منسوخ؛ کل 31 مئی کو نہیں ہوگا لاک ڈاون؛ عام دنوں کی طرح رہے گی چھوٹ؛ بھٹکل میں بھی صبح سے دوپہر تک کھلیں گی دکانیں

کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا نے بیان دیا ہے کہ  ریاست کرناٹک میں  کل 31/مئی اتوار کو گذشتہ اتوار کی طرح لاک ڈاون نہیں رہے گا۔ سنیچر کو بنگلور میں اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے  یڈی یورپا نے بتایا کہ  اتوار کے لاک ڈاون کو ریاست سے ہٹادیا گیا ہے اور کل اتوار کو دیگر ایام کی طرح ...

منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کا معاملہ ؛ ملزم آدتیہ راؤ سے پوچھ تاچھ کیلئے مرکزی وزارت داخلہ سے اجازت کا انتظار

گودی میڈیا نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھ کر تہلکہ مچانے والے سنگھ پریوار سے جڑے نوجوان آدتیہ راؤ کے معاملہ پر پوری طرح اب تک خاموشی اختیار رکھی ہے اور اب تک اس سلسلہ میں کوئی خبر ہی نہیں دی گئی تھی، اس معاملہ پر پردہ ڈالنے کی بھی کوشش جاری ہے ،