اترکنڑا ضلع میں سیلاب میں پھنسے 7لوگوں کو بچالیاگیا

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 9th August 2019, 8:26 PM | ساحلی خبریں |

اترکنڑا:9؍اگست   (ایس اؤ نیوز)اترکنڑا ضلع میں سیلاب کے حالات جاری ہیں۔ یلاپور  تعلقہ کے کارکونڈی دیہات کے قریب تٹی ہلی ڈیم کے سیلاب میں پھنسے 7لوگوں کو کوسٹل سکیورٹی فورس کے عملے نے انہیں بچایا۔

تٹی ہلی ڈیم سے کالی ندی کو پانی چھوڑنے کی وجہ سے کارکونڈی اور تاٹوال دیہات کے قریب 80خاندان عارضی بازآباد کاری مرکز منتقل ہوئے تھے لیکن یہ 7لوگ وہاں نہیں جانے سے سیلاب میں پھنس گئے بعد میں انہیں ساحل محافظ دستہ کے عملے نے بخیر وعافیت بچا کر مرکز پہنچایا۔

ضلع کے کچھ مقامات پر پُل، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کر بہہ گئے ہیں۔ ہلیال تعلقہ کھاناپور ۔تال گپا کی ریاستی شاہراہ کے دوسگی دیہات میں نالے کا پانی تیز رفتار سے بہنے کی وجہ سے پُل بھی بہہ گیاہے۔ ہلیال ۔یلاپور۔ڈانڈیلی کی سڑک سے متصل واقع کیسرولی دیہات کا پورا راستہ بربادہوگیاہے۔ یڈوگ دیہات کا پُل پانی کے حوالے ہونے سے دیہات کا دیگر مقامات سے رابطہ منقطع ہوگیاہے۔

کدرا ڈیم سے جمعرات کو بھی مسلسل 1.80لاکھ کیوسک پانی کالی ندی میں چھوڑ اگیا۔ جس کے نتیجےمیں کدرا اور ملاپور کی دیہات تقریباً ڈوب گئے ہیں۔ کاروار ۔ اوراد کی ریاستی شاہراہ پر کئی جگہوں پر تین چار فٹ تک پانی کھڑا ہے، ٹرافک نظام بری طرح متاثر ہے۔ انکولہ تعلقہ کے سنکسال کی قومی شاہراہ 63پر گنگاولی ندی کے پانی کا بہاؤ جاری رہنے سے ٹرافک نظام چوتھے دن بھی شروع نہیں ہوسکاہے۔

جمعرات کو 90825کیوسک پانی سوپا ڈیم میں جمع ہواہے، ڈیم بھرنے کے لئے صرف 8میٹر باقی ہے۔اس لئے ڈیم سے جمعرات کی شام 5500کیوسک پانی ندی کو چھوڑا گیا، اس میں مزید ضافہ ہونے کا امکان ہے۔ پیشگی اقدامات کے طورپر 28دیہات کے لوگوں کو منتقل کیاجارہاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔